உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Kader Khan Death Anniversary:قادر خان کو 47 سال پہلے ڈائیلاگ لکھنے کے لئے ملے تھے 1.25 لاکھ روپے

    قادر خان کا انتقال 31 دسمبر 2018 کو ہوا۔

    قادر خان کا انتقال 31 دسمبر 2018 کو ہوا۔

    ہندی فلم انڈسٹری میں ویلن سے لے کر کامیڈین تک الگ الگ رول پلے کر کے شائقین کا بھرپور انٹرٹنمنٹ کرنے والے قادر خان کی پیدائش 22 اکتوبر 1937 میں افغانستان کے شہر کابل میں ہوئی تھی۔

    • Share this:
      قادر خان (Kader Khan) کی آج برسی (Kader Khan Death Anniversary) ہے۔ کسی ایک شخص کے اندر کتنا ٹیلینٹ ہوسکتا ہے، یہ سمجھنا ہو تو قادر خان کو جانیے۔ بہترین فنکار،، کامیڈین، کیریکٹر آرٹسٹ، ویلن، عمدہ اسکرپٹ رائٹر، فلم ڈائریکٹر اور اس سے بھی بڑھ کر ایک شاندار شخصیت، قادر خان کے ساتھ کام کرچکے لوگ اُن کی آج بھی تعریف کرتے ہیں۔ جس بھی رول کو انہوں نے پردے پرنبھایا اُس کی انمٹ نقوش چھوڑدئیے۔ ہندی سینما کے ایسے لیجنڈ ایکٹر نے 31 دسمبر 2018 کودنیا چھوڑ دی تھی۔ آج اُن کی قابلیت کا ایسا قصہ سنائیں گے کہ آپ دنگ رہ جائیںگے۔

      قادر خان نے لکھے تھے ہٹ فلموں کے ڈائیلاگس
      ہندی فلم انڈسٹری میں ویلن سے لے کر کامیڈین تک الگ الگ رول پلے کر کے شائقین کا بھرپور انٹرٹنمنٹ کرنے والے قادر خان کی پیدائش 22 اکتوبر 1937 میں افغانستان کے شہر کابل میں ہوئی تھی۔ قادر خان کی قلم کا ہی کمال تھا کہ انہوں نے کئی فلموں کو اپنے ڈائیلاگس کی وجہ سے ہٹ کروایا تھا۔ سوپر اسٹار راجیش کھنہ ہو یا امیتابھ بچن، ان کے کرئیر کو ہٹ بنانے میں اس عظیم ایکٹر رائٹر کا بڑا رول رہا ہے۔ اسی سے جڑا ایک دلچسپ قصہ بتاتے ہیں۔

      ’روٹی‘ کے لئے ملے تھے 1 لاکھ 25 ہزار روپے
      منموہن دیسائی کی سن 1974 میں آئی فلم ’روٹی‘ میں راجیش کھنہ اور ممتاز کی جوڑی تھی، یہ فلم سوپر ہٹ رہی تھی۔ اس فلم کے ڈائیلاگس قادر خان نے لکھے تھے اور آپ یہ جان کر حیران رہ جائیںگے کہ 47 سال پہلے اس فلم کے ڈائیلاگ لکھنے کے لئے منموہن دیسائی نے اُنہیں 1 لاکھ 25 ہزار روپے دئیے تھے۔ اس فلم کو لے کر قادر خان نے انٹرویو میں خود بتایا تھا کہ جب ’منموہن دیسائی سے ملے تو انہوں نے کہا’میرے کو معلوم ہے کہ تم لوگوں کو لکھنے نہیں آتا، شاعری لکھتے ہو۔ مجھے شاعری نہیں چاہیے، ایسے ڈائیلاگ چاہیے جس پر تالی ملے۔ اگر بکواس لکھ کر لایا تو پھاڑ کر نالی میں ڈال دوں گا۔‘

      منموہن دیسائی ڈائیلاگ سنتے ہی اُچھل پڑے
      قادر خان نے بتایا تھاکہ ’کہا اگر اچھا لکھا تو، اس پر منموہن دیسائی نے کہا کہ تب سر پر بٹھا کر ناچوں گا۔ اس کے بعد ’روٹی‘ کا کلائمکس لکھنے کا کام دیا۔ قادر خان رات بھر بیٹھ کر لکھتے رہے، اگلے دن ملنے گئے اور جب ڈائیلاگس سنائے تو منموہن دیسائی اتنے خوش ہوئے کہ اپنے ہاتھ میں پہنا ہوا سونے کا بریسلیٹ اُتار کر دے دیا۔ اتنا ہی نہیں، 25 ہزار کیش اور اپنا ٹی وی سیٹ بھی اُٹھاکر دے دیا۔ پھر پوچھا لکھنے کے کتنے پیسے لیتا ہے۔ قادر خان تھوڑی ہچکچاہٹ کے بعد بولے 25 ہزار۔ اس پر بولے میں تمہیں 1 لاکھ دونگا، ایسے ہی مست ڈائیلاگ لکھنا۔’

      بتادیں کہ قادر خان نے قریب 300 فلموں میں کام کیا تھا اور قریب 250 فلموں کے ڈائیلاگ لکھے تھے۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: