உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Madhubala Death Anniversary: دلیپ کمار سے بے انتہا محبت کرتی تھیں مدھوبالا، جانیے پھر کیوں ہوئی دونوں کی راہیں الگ

    دلیپ کمار اور مدھوبالا۔

    دلیپ کمار اور مدھوبالا۔

    مدھوبالا اپنے والد کی بات کو سچ مان رہی تھی اور وہ کہتی تھی کہ جب ہماری شادی ہو جائے گی تو سب ٹھیک ہو جائے گا۔ تاہم، دلیپ کو لگا کہ اگر مدھوبالا کے والد اپنے کریئر کے حوالے سے کوئی منصوبہ بندی یا حکمت عملی بنائیں گے تو ان کا کریئر ختم ہو جائے گا۔ دلیپ کمار نے ان سے بہت بات کی اور سمجھایا لیکن وہ نہیں سمجھے اور مدھوبالا بھی اپنے والد کا ہی ساتھ دیتی رہیں۔

    • Share this:
      ممبئی: اپنے وقت کی معروف اداکارہ مدھوبالا(Madhubala) کی آج برسی ہے۔ مدھوبالا جتنی اپنی فلموں اور اداکاری پر حاوی رہتی تھیں، وہ اپنی ذاتی زندگی کے لیے بھی سرخیوں میں رہی ہیں۔ مدھوبالا کا انتقال 36 سال کی عمر میں ہوا۔ ان کے جانے سے ہندی سنیما کو بڑا دھچکا لگا کیونکہ وہ ایک عظیم فنکار سے محروم ہو گئے۔ حالانکہ آج بھی مدھوبالا کی خوبصورتی اور اداکاری سب کے دلوں میں ہے۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ مدھوبالا بھلے ہی ایک خوبصورت اور کامیاب اداکارہ رہی ہوں لیکن انہوں نے چھوٹی عمر میں بیماری اور دل ٹوٹنے کے درد کا بھی سامنا کیا ہے۔ مدھوبالا کو پیدائش سے ہی دل کی تکلیف تھی۔ اس بیماری کی وجہ سے ان کا جسم زیادہ خون بناتا تھا جو ان کے منہ یا ناک سے باہر آجاتا تھا۔

      اب ان کی محبت کی زندگی کی بات کی جائے تو اس وقت ان کے اور دلیپ کمار(Dilip Kumar) کے رومانس کے بہت چرچے تھے۔ تاہم دلیپ نے اپنی کتاب میں بتایا تھا کہ کس وجہ سے دونوں میں اختلاف تھا۔ اداکار کی کتاب کے اقتباس میں لکھا تھا کہ مدھوبالا کے والد دونوں کی شادی کے خلاف نہیں تھے۔ حالانکہ ان کی اپنی پروڈکشن کمپنی تھی اور وہ دونوں کو ایک ساتھ دیکھ کر بہت خوش تھے۔ تاہم، دلیپ نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ دلیپ اور مدھوبالا ہمیشہ ہاتھ تھامے رہیں اور اپنے کیرئیر کے اختتام تک ان کی پروڈکشن میں کام کریں۔

      دلیپ کمار نے لکھاتھا، جب مجھے اس پلان کے بارے میں معلوم ہوا تو میں نے ان دونوں کو سمجھایا کہ میرے پاس پروجیکٹ کو منتخب کرنے کا اپنا طریقہ ہے اور میں اسی کے مطابق کام کرتا ہوں۔ مدھوبالا کے والد نے انہیں بتایا کہ میں نے ان سے غلط طریقے سے بات کی۔ میں نے مدھوبالا کو سمجھایا کہ میں کچھ غلط نہیں کر رہالیکن ہمیں اپنی ذاتی اور پیشہ ورانہ زندگی کو بطور فنکار الگ الگ رکھنا ہوگا۔

      لیکن مدھوبالا اپنے والد کی بات کو سچ مان رہی تھی اور وہ کہتی تھی کہ جب ہماری شادی ہو جائے گی تو سب ٹھیک ہو جائے گا۔ تاہم، دلیپ کو لگا کہ اگر مدھوبالا کے والد اپنے کریئر کے حوالے سے کوئی منصوبہ بندی یا حکمت عملی بنائیں گے تو ان کا کریئر ختم ہو جائے گا۔ دلیپ کمار نے ان سے بہت بات کی اور سمجھایا لیکن وہ نہیں سمجھے اور مدھوبالا بھی اپنے والد کا ہی ساتھ دیتی رہیں۔

      دل ٹوٹنے کے بعد بیماری سے ہوئیں پریشان
      اب اسی وجہ سے دلیپ اور مدھوبالا کبھی ایک ساتھ نہیں رہ سکے اور اسی وجہ سے اداکارہ کا رشتہ ٹوٹ گیا۔ وہ دل ٹوٹنے کا غم سہ رہی تھی کہ پھر انہیں یہ مرض لگ گیا۔ مدھوبالا کو 1954 میں اپنے دل کی حالت کا علم اس وقت ہوا جب وہ فلم ’بہت دن ہوئے‘ کی شوٹنگ کر رہی تھیں۔ مشکلات کے باوجود مدھوبالا کام کرتی رہی لیکن آخرکار بیماری نے انہیں شکست دے دی اور وہ 23 فروری 1969 کو چل بسیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: