உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Nisha Rawalنے شادی کے بعد افیئر پر توڑی خاموشی، کرن مہرا پر لگایا یہ الزام

    کرن مہرا کے سنگین الزامات پر نشا راول نے دیا یہ جواب۔ تصویر : انسٹاگرام ۔ @realkaranmehra

    کرن مہرا کے سنگین الزامات پر نشا راول نے دیا یہ جواب۔ تصویر : انسٹاگرام ۔ @realkaranmehra

    Nisha Rawal On Extra Marital Affair: نشا راول نے کرن مہرا پر جوابی حملہ کرتے ہوئے ان پر ہمدردی کارڈ کھیلنے کا الزام لگایا ہے اور ان سے گزارش کی ہے کہ، انہیں اپنی زندگی جینے دیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Mumbai | Hyderabad
    • Share this:
      Nisha Rawal On Extra Marital Affair: نشا راول اور کرن مہرا ٹی وی انڈسٹریز کے ان کپلس میں سے ایک تھے، جو اپنی کیمسٹری کے لئے سرخیاں بٹورتے تھے، لیکن آج وہ ایک دوسرے پر الزام لگاتے ہوئے زیر بحث رہتے ہیں۔ نشا نے پہلے کرن مہرا پر مارپیٹ اور ایکسٹرا میریٹل افیئر کا الزام لگایا تھا، پھر ’یہ رشتہ کیا کہلاتا ہے‘ فیم ایکٹر نے بھی بیوی پر اسی طرح کا الزام لگایا تھا۔ اب نشا راول نے اس پر اپنی خاموشی توڑی ہے۔

      ماورائے ازدواجی تعلقات پر نشا راول کا ردعمل
      نشا راول نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کرن مہرا کی جانب سے لگائے گئے الزامات کو مسترد کر دیا ہے۔ اس کے علاوہ اداکار پر ہمدردی کارڈ کھیلنے کا بھی انہوں نے الزام لگایا ہے۔ اداکارہ نے کہا، "براہ کرم اسے بند کریں۔ یہ ڈرامہ بن رہا ہے اور میڈیا ٹرائل بن رہا ہے۔ اسے شائستہ انداز میں کریں۔ میں خود کو غیر محفوظ محسوس کرتی ہوں۔ یہ سب کرنا بند کریں۔ میں اپنے اور اپنے بچے کے لیے ڈری ہوئی ہوں۔ کیا ہوگا اگر کل میرا بچہ یہ ویڈیو دیکھے، یا میں اس کے ساتھ باہر جاؤں اور لوگ اس کے سامنے کچھ کہیں؟"

      یہ بھی پڑھیں:

      اننیا پانڈے نے پھر شیئر کی اٹلی چھٹیوں کی اپنی گلیمرس تصاویر، دیکھتے ہی رہ گئے فینس

      یہ بھی پڑھیں:
      جیسمین بھسین ساڑی پہن کرخوبصورت وادیوں کا لطف اٹھاتی ہوئی نظرآئیں، نظر آیا دیسی انداز

      کرن پر ہمدردی کارڈ کھیلنے کا الزام
      نشا راول نے کرن مہرا پر جوابی حملہ کرتے ہوئے ان پر ہمدردی کارڈ کھیلنے کا الزام لگایا ہے اور ان سے گزارش کی ہے کہ، انہیں اپنی زندگی جینے دیں۔ ایکٹریس نے کہا، آخر میں، میں ہمدردی کارڈ نہیں کھیل رہی ہوں۔ اصل میں کرن ہمدردی کارڈ کھیل رہا ہے۔ میں ایک صحت مند ماحول میں اپنے بچے کی پرورش کرنا چاہتی ہوں۔ اگر کرن مہرا تعاون نہیں دے سکتے ہیں تو براہ کرم پیچھے ہٹ جائیں۔ مجھے اپنی زندگی جینے دو۔‘
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: