ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

جے این یوتشدد: پاکستان آرمی نے کی دیپکا پاڈوکون کی سراہنا! پہلے کیا ٹویٹ اور پھر۔۔۔

جے این یومیں دودن پہلےکیمپس میں طلباء پرہوئےحملےکےبعد کچھ بالی ووڈ ستارے ان کی حمایت میں اترے ہیں۔ ان دنوں اپنی فلم 'چھپاک' کےپرموشن کےلئےدہلی میں ہی موجود دیپکا پاڈوکون نے بھی جےاین یوکےطلبہ وطالبات کی حمایت کی ہے۔ ایسےمیں دیپکا پاڈوکون منگل شام کوجےاین یوکیمپس پہنچیں اور طلباء سےملاقات کی۔ اس دوران کنہیا کماربھی کیمپس میں طلباء وطالبات کے ساتھ موجود نظرآئے۔

  • Share this:
جے این یوتشدد: پاکستان آرمی نے کی دیپکا پاڈوکون کی سراہنا! پہلے کیا ٹویٹ اور پھر۔۔۔
جے این یومیں دودن پہلےکیمپس میں طلباء پرہوئےحملےکےبعد کچھ بالی ووڈ ستارے ان کی حمایت میں اترے ہیں۔ ان دنوں اپنی فلم 'چھپاک' کےپرموشن کےلئےدہلی میں ہی موجود دیپکا پاڈوکون نے بھی جےاین یوکےطلبہ وطالبات کی حمایت کی ہے۔ ایسےمیں دیپکا پاڈوکون منگل شام کوجےاین یوکیمپس پہنچیں اور طلباء سےملاقات کی۔ اس دوران کنہیا کماربھی کیمپس میں طلباء وطالبات کے ساتھ موجود نظرآئے۔

نئی دہلی: بالی ووڈ اداکارہ دیپک اپاڈوکون ویسے تو ہمیشہ سرخیوں میں رہتی ہیں لیکن منگل کی رات جے این یو مظاہرے میں شامل ہوکر وی میڈیا میں چھائی ہوئی ہیں۔ جے این یو میں گزشتہ اتوار کو ہوئے تشدد کے بعد دیپکا منگل کی رات کیمپس پہنچیں اور طلبا کی حمایت میں خاموش مظاہرے کا حصہ بنیں۔ اداکارہ کے اس رخ کی پڑوسی ملک پاکستان میں بھی چرچا ہے۔ دیپکا پاڈوکون کی جے این یو میں جانے کی تصویریں سامنے آنے کے بعد پاکستان آرمی کے ترجمان آصف غفور نے اداکارہ کی حمایر میں ٹویٹ کیا۔

آصف غفور نے اپنے نجی ٹویٹر ہینڈل سے جے این یو میں طلبا کے ساتھ مظاہرے میں کھڑی دیپکا پاڈوکون کی دو تصویریں شیئر کیں۔ غفور نے دیپکا کو مشکل حالات میں بہادر انسان بتایا۔ حالانکہ کچھ دیر بعد ہی انہوں نے یہ ٹویٹ ہٹا دیا۔

पाकिस्तान

دیپکا پاڈوکون کی حمایت میں پاکستانی صحافی نائلہ عنایت نے بھی ٹویٹ کیا ہے۔ انہوں نے لکھا دیپکا پاڈوکون کیا مجھے یہ ٹویٹ ڈلیٹ کردینا چاہئے یا سرینڈر کرنا چاہئے۔



اداکارہ دیپکا پادوکون کےجےاین یوکیمپس میں پہنچنےکوویڈیو بھی نیوزایجنسی اے این آئی نےجاری کیا ہے۔ اس میں نظرآرہا ہےکہ وہ طلباء کےدرمیان موجود ہیں۔ اس دوران طلباء جوش میں ہیں اور'جے بھگت سنگھ- جےبھیم' کےنعرے لگا رہےہیں۔


دیپکا پاڈوکون جےاین یوکیمپس میں تقریباً 10 منٹ رکیں۔ اس دوران جےاین یوطلبہ یونین کے سابق صدرکنہیاکماربھی وہاں موجود نظرآئے۔ وہ بھی طلباء کےساتھ نعرے بازی کررہے تھے۔ دیپکا پادوکون نے اس دوران حملے میں زخمی ہوئیں جےاین یوطلبہ یونین کی صدر آئیشی گھوش سے ملاقات کی۔ حالانکہ جےاین یومیں انہوں نےطلباء کوکسی بھی طرح سے خطاب نہیں کیا۔
deepika padukone
واضح رہےکہ اس سےقبل بالی ووڈ اسٹاراجےدیوگن نےمنگل کوکہا تھا کہ تشدد کسی پریشانی کا حل نہیں ہےاورجےاین یوپرہوا حملہ بہت افسوسناک ہے۔ اداکارنےکہا کہ اتوارکو یونیورسٹی احاطےمیں جوکچھ بھی ہوا، اس کےلئےکون ذمہ دارہے۔ اس کےبارے میں انہیں واضح طورپرکوئی اطلاع نہیں ہےکیونکہ خبروں کےمطابق متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔

واضح رہے کہ جے این یومیں دودن پہلےکیمپس میں طلباء پرہوئےحملےکےبعد کچھ بالی ووڈ ستارے ان کی حمایت میں اترے ہیں۔ ان دنوں اپنی فلم 'چھپاک' کےپرموشن کےلئےدہلی میں ہی موجود دیپکا پاڈوکون نے بھی جےاین یوکےطلبہ وطالبات کی حمایت کی ہے۔ ایسےمیں دیپکا پاڈوکون منگل شام کوجےاین یوکیمپس پہنچیں اور طلباء سےملاقات کی۔ اس دوران کنہیا کماربھی کیمپس میں طلباء وطالبات کے ساتھ موجود نظرآئے۔

First published: Jan 08, 2020 01:47 PM IST