ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

پولیس کی وارننگ، ضبط ہوں گی بالی ووڈ شخصیات کا پیچھا کرنے والی میڈیا کی گاڑیاں

ممبئی پولیس (Mumbai Police) نے کہا کہ لاپرواہ طریقے سے بالی ووڈ کی فنکاروں (Bollywood Actors) کی گاڑیوں کا پیچھا کرتے ہوئے میڈیا کی گاڑی ملیں تو گاڑی کو ضبط کرلیا جائے گا اور ڈرائیور کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

  • Share this:
پولیس کی وارننگ، ضبط ہوں گی بالی ووڈ شخصیات کا پیچھا کرنے والی میڈیا کی گاڑیاں
پولیس کی وارننگ، ضبط ہوں گی بالی ووڈ اداکار کی کاروں کا پیچھا کرتیں میڈیا کی گاڑیاں

ممبئی: ممبئی پولیس (Mumbai Police) نے ہفتہ کو میڈیا اہلکاروں کو آگاہ کیا کہ وہ اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت سے جڑے ڈرگس معاملے میں طلب کئے گئے بالی ووڈ فنکاروں کی گاڑیوں کا پیچھا کرے وہ خود اور دوسروں کی جان خطرے میں نہ ڈالیں۔ معاملے کو لے کر میڈیا کی سرگرمیاں ہفتہ کو تب تک اپنے شباب پر پہنچ گئیں، جب تین بڑی اداکارہ دیپیکا پادوکون (Deepika Padukone)، سارہ علی خان (Sara Ali Khan) اور شردھا کپور (Shraddha Kapoor) ڈرگس کنٹرول بیورو (NCB) کے سامنے اپنا بیان درج کرانے پہنچیں۔


بالی ووڈ کی یہ اداکارہ جب اپنے گھروں سے نکلیں تو میڈیا اہلکاروں نے ان کی گاڑیوں کا پیچھا کرنے کی کوشش کی۔ پادوکون اور شردھا کپور تو صبح میڈیا کی گاڑیوں سے بچ نکلنے میں کامیاب رہیں، لیکن سارہ علی خان کا پیچھا کیا گیا۔ اس کے بعد ممبئی پولیس کو وارننگ جاری کرنی پڑی۔ پولیس ڈپٹی کمشنر (زون -1) سنگرام سنگھ نشاندار نے میڈیا اہلکاروں سے گزارش کی کہ وہ بالی ووڈ اداکار کی گاڑیوں کا پیچھا نہیں کریں۔ کیونکہ اس سے ان کی زندگی کے ساتھ ساتھ سڑک پر عام لوگوں کی زندگی کو بھی خطرہ ہوسکتا ہے۔


انہوں نے کہا کہ اگر پولیس کو لاپرواہ طریقے سے فنکاروں کی گاڑیوں کا پیچھا کرتے ہوئے میڈیا کی گاڑی ملی تو گاڑی کو ضبط کرلیا جائے گا اور ڈرائیور کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ اس سے پہلے ممبئی کی ایک عدالت نے اتوار کو روی پرساد کو 3 اکتوبر تک نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) کی حراست میں بھیج دیا گیا۔ اسے اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت سے جڑے ایک ڈرگ معاملے میں گرفتار کیا گیا تھا۔


روی پرساد نے فلمساز اور ہدایت کار کرن جوہر کے ایک فرم میں ایگزیکٹو پروڈیوسر کے طور پر کچھ وقت کے لئے کام کیا تھا۔ کرن جوہر نے جمعہ کو ایک بیان میں کہا تھا کہ روی پرساد نومبر 2019 میں ایک پروجیکٹ کے لئے معاہدہ پر ایگزیکٹو پروڈیوسر کے طور پر مذہبی انٹرٹینمنٹ (جوہر کے دھرما پروڈکشن کی معاون کمپنی) سے متعلق تھا، لیکن اس پروجیکٹ پر کام نہیں ہوا۔ روی پرساد سے پوچھ گچھ کے بعد ہفتہ کو این سی بی نے گرفتار کرلیا۔ روی پرساد کو ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ یہاں ایک مجسٹریٹ کے سامنےپیش کیا گیا، جنہوں نے روی پرساد کو آگے کی پوچھ گچھ کے لئے تین اکتوبر تک این سی بی کی حراست میں دے دیا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 27, 2020 08:57 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading