ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

بزرگ شخص کی کھلے آسمان کے نیچے نہاتے ہوئی تصویر دلجیت دوسانجھ نے کی شیئر، مچ گیا ہنگامہ، لوگوں نے کہی یہ بڑی بات

دراصل دلجیت دوسانجھ نے ایک تصویر شیئر کی۔ اس تصویر میں ایک بزرگ سکھ شخص سردی میں کھلے آسمان کے نیچے نہا رہے ہیں۔ انہوں نے تصویر کے ساتھ ٹویٹ کیا، تمہاری تم ہی جانو، یہ بھگوان جیسے لوگ تمہیں دہشت گرد لگتے ہیں۔ انسانیت نام کی بھی کوئی چیز ہوتی ہے یار۔

  • Share this:
بزرگ شخص کی کھلے آسمان کے نیچے نہاتے ہوئی تصویر دلجیت دوسانجھ نے کی شیئر، مچ گیا ہنگامہ، لوگوں نے کہی یہ بڑی بات
بزرگ شخص کی کھلے آسمان کے نیچے نہاتے ہوئی تصویر سامنے آئی تو مچ گیا ہنگامہ

پنجابی سنگر دلجیت دوسانجھ (Diljit Dosanjh) ان دنوں سوشل میڈیا (Social Media)  پر کافی ایکٹو رہتے ہیں۔ ان دنوں کسان آندولن کی حمایت کر رہے ہیں اور سوشل میڈیا پر مسلسل ان کے حق میں ٹویٹ کر رہے ہیں۔ پنجابی اسٹار دلجیت نے اب ایک اور ٹویٹ کرکے مظاہر پر سوال اٹھانے والے لوگوں پر حملہ بولا ہے۔ انہوں نے ٹویٹ کیا جو دیکھتے ہی وائرل ہو گیا۔ پنجابی سنگر کے اس ٹویٹ پر کچھ لوگوں نے ان پر حملہ کیا اور کہنے لگے کہ ایسا کرکے زہر مت پھیلاؤ۔


دراصل دلجیت دوسانجھ نے ایک تصویر شیئر کی۔ اس تصویر میں ایک بزرگ سکھ شخص  سردی میں کھلے آسمان کے نیچے نہا رہے ہیں۔ انہوں نے تصویر کے ساتھ ٹویٹ کیا، تمہاری تم ہی جانو، یہ بھگوان جیسے لوگ تمہیں دہشت گرد لگتے ہیں۔ انسانیت نام کی بھی کوئی چیز ہوتی ہے یار۔



دلجیت کے اس ٹویٹ پر لوگوں کے رد عمل آ رہے ہیں۔ کچھ حامیوں کو  یہ بات پسند آئی تو کچھ لوگوں نے اس کی مخالفت کی۔ سنگر کی اس پوسٹ کا جواب دیتے ہوئے ایک شخص نے لکھا، زہر مت پھیلاؤ۔ آپ کچھ اہلیت والے فنکار ہیں۔ ایک شخص کے لئے اگر غصہ ہے تو اس پورے سماج اور ملک پر نافذ مت کرو۔ عزت کمانے میں وقت لگتا ہے۔ اسے مت گنواؤ۔

ایک دیگر نے لکھا، دلجیت پاجی ہم پنجاب سے ہیار کرتے ہیں۔ پنجاب کے لوگوں سے پیار کرتے ہیں لیکن خلستانیوں سے نہیں۔



وہیں ایک دیگر نے لکھا، دلجیت بھائی، آپ یہ لڑائی پرسنل نہ بناؤ۔ . حقائق اور اعداد و شمار کے ساتھ اسے عارضی طور پر دیکھیں، باقی آپ سمجھدار ہیں۔


آپ کو بتادیں کہ حال ہی میں دلجیت کا ایک ٹویٹ وائرل ہوا تھا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ کون ہے جو یہ فیصلہ کرے گا کہ کون محب وطن ہے اور کون نہیں۔ واضح رہے کہ یہ ٹویٹ کنگنا کے ٹویٹ کے جواب میں سنگر نے کیا تھا۔
Published by: sana Naeem
First published: Dec 17, 2020 07:10 PM IST