ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

مادھوری دکشت کے میک اپ مین کے خلاف عصمت دری کا معاملہ درج

ممبئی کے دندوشی پولیس اسٹیشن نے نامور فلم اداکارہ مادھوری دیکشت سمیت فلم انڈسٹری کے کئی اہم اداکاروں کے میک اپ مین کے خلاف عصمت دری کا معاملہ درج کیا ہے ۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 17, 2017 08:18 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مادھوری دکشت کے میک اپ مین کے خلاف عصمت دری کا معاملہ درج
ممبئی کے دندوشی پولیس اسٹیشن نے نامور فلم اداکارہ مادھوری دیکشت سمیت فلم انڈسٹری کے کئی اہم اداکاروں کے میک اپ مین کے خلاف عصمت دری کا معاملہ درج کیا ہے ۔

ممبئی: ممبئی کے دندوشی پولیس اسٹیشن نے نامور فلم اداکارہ مادھوری دیکشت سمیت فلم انڈسٹری کے کئی اہم اداکاروں کے میک اپ مین کے خلاف عصمت دری کا معاملہ درج کیا ہے ۔ ملزم اتل کدم پر الزام ہے کہ اس نے متاثرہ خاتون کو نشہ آور دوا پلا کر جنسی تعلقات قائم کئے اور پھر اس کی فحش تصاویر اور ویڈیو عوام میں عام کی۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق دنڈوشی پولیس اسٹیشن نے ملزم کے خلاف دفعہ تعزیرات ہند کی دفعہ 376اور انفارمیشن ٹیکنالوجی ایکٹ کے تحت معاملہ درج کیا ہے اور ملزم کی تلاش جاری ہے ۔

پولیس میں درج ایف آئی آر کے مطابق متاثرہ خاتون بھی فلم انڈسٹری میں بطور ہیئر ڈریسر اپنی خدمات انجام دیتی ہے واردات سے چند دن قبل ملزم کی اور متاثرہ خاتون کی ملاقات ہوئی تھی جو بعد میں دوستی میں تبدیل ہو گئی تھی ۔

شکایت کے مطابق ملزم نے ایک دن متاثرہ خاتون کو کسی اداکار کے بالوں کو سنوارنے کے لئے اپنے گھر طلب کیا اور ا س کے بعد اس نے کولڈرنک میں نشہ آور دوا ملا کر اس کی عصمت دری کی اور اس نے تصاویر نکالا اور ویڈیو بھی اتارا ۔ شکایت درج ہونے کے بعد ملزم نے خود ان تصاویر اور ویڈیو کو پولیس اسٹیشن میں بھی یہ کہہ کر پیش کیا کہ دونوں کے درمیان جنسی تعلقات آپسی رضامندی سے ہوئے تھے ۔

دنڈوشی پولیس اسٹیشن کے اسسٹنٹ پولیس انسپکٹر ایس اوبالے جو اس معاملے کی تفتیش کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ معاملے کی تحقیقات جاری ہے اور ملزم کو اب تک گرفتار نہیں کیا گیا ہے البتہ اس کی گرفتاری کے تعلق سے قانونی رائے طلب کی گئی ہے ۔

مجرمانہ معاملات کے ماہر وکیل تنویر نظام جو کہ متاثرہ خاتون کے وکیل بھی ہیں انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ سمیت ملک کی دیگر عدالتوں نے قتل ، عصمت دری جیسے سنگین معاملات میں ملزمین کے خلاف فوری گرفتار ی کے احکامات جاری کئے ہیں تا کہ ملزم اپنے خلاف کسی بھی ثبوت و ثواہد کو مٹا نہ سکے ۔ انہوں نے کہا کہ مختلف عدالتوں کے فیصلوں کے پیش نظر ملزم کی فوری طور پر گرفتاری عمل میں آنی چاہیئے ۔ حقوق انسانی تنظیم کے سربراہ موہن کرشنن نے کہا کہ اس معاملے میں پولیس کو ذرابھی تساہلی نہیں برتنا چاہیئے اور فوری طور پر ملزم کو گرفتار کرنا چاہیئے۔
First published: Oct 17, 2017 08:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading