உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کبھی رشمی نے مارا تھا شہناز کو Designerکپڑوں کے لئے طعنہ، ایکٹریس کی کامیابی نے دیا منہ توڑ جواب

    رشمی دیسائی اور شہناز گل۔ (فائل فوٹو)

    رشمی دیسائی اور شہناز گل۔ (فائل فوٹو)

    شہناز کو رشمی ڈیسائی نے اپنے کپڑوں کے لیے نیشنل ٹی وی پر طعنہ دیا تھا، اب وہی شہناز اپنی کامیابی سے سب کو منہ توڑ جواب دے رہی ہیں۔ وہ ڈیزائنرز جن کے کپڑے بڑی بڑی اداکارہ پہننے کو ترستی ہیں۔ وہ کپڑے شہناز کی جھولی میں آتے جا رہے ہیں۔

    • Share this:
      ممبئی: بگ باس 13 کے اسٹیج پر آنے والی چلبل سی مسکان والی شہناز گل آج ٹی وی اور بالی ووڈ کی دنیا کا ایک جانا پہچانا نام بن چکی ہیں۔ شہناز کا نام آئے دن سوشل میڈیا پر ٹرینڈ ہوتا نظر آتا ہے۔ ان کی کامیابی اور شہرت کی داستانیں دن بدن بڑھتی جارہی ہیں۔ شہناز کو کبھی اپنے کپڑوں کو لے کر طعنے ملا کرتے تھے اب وہی شہناز بڑے ڈیزائنر فوٹوگرافرز کے ساتھ شوٹنگ کرتی نظر آتی ہیں۔ آپ کو یاد ہوگا کہ بگ باس 13 کے اسٹیج پر رشمی دیسائی اور شہناز گل کے درمیان جنگ ہوئی تھی۔

      یہ بھی پڑھیں:
      دانتوں میں اُنگلی دباتے ہوئے پوز دیتی نظر آرہی یہ بچی ہے ٹی وی کی TOPایکٹریس

      اس زبانی جنگ میں رشمی نے شہناز پر کئی الزامات لگائے تھے۔ اور کہاتھا کہ وہ اپنے ڈیزائنر کپڑے استعمال کرتی رہتی ہیں اور خود ان ڈیزائنر کپڑوں کو افورڈ نہیں کرسکتیں ہیں۔ یہ سن کر شہناز کو بہت دکھ ہوا تھا۔ شہناز نے رو رو کر اپنی آنکھیں سوجا لی تھیں۔ اس وقت سدھارتھ شکلا نے شہناز گل کی حمایت کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ ایک دن ان سے آگے نکل جائیں گی اور انہیں اس کی خبر تک نہیں ہوگی۔

      سدھارتھ شکلا کی یہ بات اب سچ ہوتی نظر آرہی ہے۔ شہناز کور گل کے پیچھے بڑے ڈیزائنرز کی لائن لگی ہوئی ہے۔ جب شہناز گل کو بگ باس کے اسٹیج پر بلایا گیا تو اداکارہ نے منیش ملہوترا کی ڈیزائنر ساڑھی پہن کر انٹری کی تھی۔ ان دنوں شہناز لگاتار بالی ووڈ کے ٹاپ فوٹوگرافر ڈبو رتنانی کے ساتھ اپنی شوٹنگ کروا رہی ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      نیلیما عظیم نے دی اننیا پانڈے اور ایشان کھٹر کے رشتے کو ہوا، کہا-’ایشان کی لائف کا اہم حصہ

      آپ خود دیکھ سکتے ہیں، جس شہناز کو رشمی ڈیسائی نے اپنے کپڑوں کے لیے نیشنل ٹی وی پر طعنہ دیا تھا، اب وہی شہناز اپنی کامیابی سے سب کو منہ توڑ جواب دے رہی ہیں۔ وہ ڈیزائنرز جن کے کپڑے بڑی بڑی اداکارہ پہننے کو ترستی ہیں۔ وہ کپڑے شہناز کی جھولی میں آتے جا رہے ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ ڈبو رتنانی جیسے ٹاپ فوٹوگرافر ہمیشہ شہناز کے چہرے کو اپنے کیمرے میں قید کرنے کے لیے بے چین رہتے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: