ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

Sushant Singh Rajput case: ریا چکروتی نے سشانت سنگھ راجپوت کی بہن کے خلاف درج کرائی شکایت

ریا چکرورتی نے ممبئی پولیس سے سشانت سنگھ کی بہن پرینکا سنگھ کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی بھی اپیل کی ہے۔ پرینکا سنگھ کے علاوہ آرایم ایل اسپتال دہلی کے ڈاکٹر ترون کمار اور کچھ دیگر لوگوں کے خلاف بھی شکایت درج کرائی ہے۔

  • Share this:
Sushant Singh Rajput case: ریا چکروتی نے سشانت سنگھ راجپوت کی بہن کے خلاف درج کرائی شکایت
ریا چکروتی نے سشانت سنگھ راجپوت کی بہن کے خلاف درج کرائی شکایت

ممبئی: سشانت سنگھ راجپوت کی موت کے معاملے میں ملزم ان کی گرل فرینڈ ریا چکرورتی نے سشانت سنگھ راجپوت کی بہن پرینکا سنگھ اور کچھ دیگر لوگوں کے خلاف شکایت درج کرائی ہے۔ ریا چکرورتی نے ممبئی پولیس سے اس معاملے میں ایف آئی آر درج کرنے کی بھی اپیل کی ہے۔ ریا چکرورتی نے پرینکا سنگھ کے علاوہ آرایم ایل اسپتال دہلی کے ڈاکٹر ترون کمار اور کچھ دیگر لوگوں کے خلاف بھی شکایت درج کرائی ہے۔ یہ شکایت تعزیرات ہند کی نارکوٹک ڈرگس اور سائیکوٹراپک سبسٹینس ایکٹ اور ٹیلی میڈیسن پریکٹس گائڈ لائنس کے تحت درج کرائی گئی ہے۔


ریا چکرورتی نے اپنی شکایت میں کہا ہے کہ سشانت سنگھ راجپوت کی بہن پرینکا سنگھ نے سشانت سنگھ کے پاس ڈاکٹر ترون کمار کا لکھا ہوا ایک دوائی کا پرچا بھیجا تھا اور اس میں جو دوائیں بتائی گئی تھیں، معلوم ہوتا ہے کہ ان دواوں کو نارکوٹک ڈرگس اور سائیکوٹراپک سبسٹینس ایکٹ، 1985 کے تحت سشانت سنگھ کے قانون کے مطابق بغیر کسی مشاورت کے دی گئی تھیں۔ ریا چکرورتی کی شکایت میں آگے کہا گیا ہے کہ ’ڈاکٹر (ڈاکٹر ترون کمار) کے ذریعہ متعینہ دواوں کو ٹیلی میڈیسن پریکٹس گائڈ لائنس، 2020 کے تحت الیکٹرانک طور سے متعین کئے جانے سے روکا گیا تھا۔


مسلسل دوسرے دن این سی بی کے سامنے پیش ہوئیں ریا چکرورتی


واضح رہے کہ اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت سے جڑے منشیات کے معاملہ میں ان کی لو ان پارٹنر ریا چکرورتی پیر کو مسلسل دوسرے دن پوچھ گچھ کے لئے نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) کے سامنے پیش ہوئیں۔ اس معاملے میں ریا چکرورتی سے اتوار کو این سی بی نے پہلی بار تقریباً 6 گھنٹے کی پوچھ گچھ کی تھی۔ 28 سالہ اداکارہ پیر کی صبح صبح تقریباً ساڑھے نو بجے بلارڈ اسٹیٹ واقع این سی بی دفتر پہنچی۔ وہ پولیس ملازمن کے ساتھ وہاں پہنچی۔ ان کے پاس ایک بیگ بھی تھا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 07, 2020 04:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading