ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

سلمان کے بیان پر طوفان کے بعد والد سلیم نے مانگی معافی

نئی دہلی : اپنی فلم سلطان کو لے کر سلمان خان ان دنوں موضوع بحث ہیں۔ لیکن فلم کے علاوہ بھی سلمان اپنے ایک بیان کو لے کر تنقید کی زد پر آ گئے ہیں۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Jun 21, 2016 04:37 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سلمان کے بیان پر طوفان کے بعد والد سلیم نے مانگی معافی
نئی دہلی : اپنی فلم سلطان کو لے کر سلمان خان ان دنوں موضوع بحث ہیں۔ لیکن فلم کے علاوہ بھی سلمان اپنے ایک بیان کو لے کر تنقید کی زد پر آ گئے ہیں۔

نئی دہلی : اپنی فلم سلطان کو لے کر سلمان خان ان دنوں موضوع بحث ہیں۔ لیکن فلم کے علاوہ بھی سلمان اپنے ایک بیان کو لے کر تنقید کی زد پر آ گئے ہیں۔ادھر بیٹے کے بیان پر اٹھے طوفان کو ان کے والد سلیم خان نے ٹھنڈا کرنے کی کوشش کی ہے۔ سلمان کے بیان پر سلیم خان نے ٹویٹ کر کے معافی مانگی ۔ سلیم نے ٹویٹ کر کے کہا ہے کہ سلمان نے جو بھی بولا وہ بلا شبہ غلط ہے، لیکن اس کا ارادہ غلط نہیں تھا۔

دراصل اسپاٹ بوائے سے بات چیت کے دوران سلمان سے ان کی فلم کے دوران شوٹنگ کے تجربے کے بارے میں پوچھا گیا ، تو انہوں نے کہا کہ میری کئی گھنٹوں کی ٹریننگ ہوتی تھی۔ شوٹنگ کے دوران مجھے چھ گھنٹوں تک کافی اٹھا پٹک کا کام کرنا پڑتا تھا۔ یہ میرے لئے کافی مشکل تھا کیونکہ 120 کلو کے پہلوان کو مجھے 10 بار 10 طریقوں سے پٹکنا پڑتا تھا۔ جب میں شوٹنگ ختم ہونے کے بعد رنگ سے باہر آتا تھا ، تو میں حقیقت میں ایک ریپڈ وومین کی طرح محسوس کرتا تھا۔ نہ میں ٹھیک سے چل پاتا تھا، نہ کھا پاتا تھا۔ تاہم سلمان نے فوری طور پر اپنے اس جملہ کو واپس لے لیا اور کہا کہ اسے نظر انداز کیجئے ، مجھے ایسا نہیں کہنا چاہئے تھا ۔

سلمان کے اس بیان پر ٹوئٹر پر لوگوں نے جم کر تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ سلمان خان شوٹنگ کے دوران کی گئی ایکسرسائز کا موازنہ کسی ریپ متاثرہ خاتون سے کیسے کر سکتے ہیں۔ انہیں کیا معلوم ہے ریپ متاثرہ خاتون پر کیا گزرتی ہے۔

ادھر خواتین کمیشن نے سلمان خان کو خط لکھ کروضاحت طلب کی ہے۔ کمیشن کی صدر للتا کمار منگلم نے کہا کہ سلمان خان کو خط لکھ کر پوجھا گیا ہے کہ انہوں نے ایسا بیان کیوں دیا۔ کمیشن اگر سلمان کے بیان سے مطمئن نہیں ہوا تو ان کو سمن جاری کرکے طلب بھی کیا جاسکتا ہے ۔

First published: Jun 21, 2016 03:06 PM IST