ہوم » نیوز » اسپورٹس

رشی کپور اور عرفان خان کے انتقال پر بولا یہ پاکستانی کھلاڑی- موت کا مزہ... ہرکسی نے چخا

پاکستان کے کئی عظیم کھلاڑیوں نے رشی کپور (Rishi Kapoor) اور عرفان خان (Irrfan Khan) کے انتقال پر افسوس کا اظہار کیا۔

  • Share this:
رشی کپور اور عرفان خان کے انتقال پر بولا یہ پاکستانی کھلاڑی- موت کا مزہ... ہرکسی نے چخا
رشی کپور اور عرفان خان کے انتقال پر بولا یہ پاکستانی کھلاڑی- موت کا مزہ... ہرکسی نے چخا

نئی دہلی: گزشتہ ماہ بالی ووڈ نے اپنے دو بڑے ستاروں کو کھو دیا۔ عرفان خان (Irrfan Khan) اور رشی کپور (Rishi Kapoor) اس دنیا کو چھوڑ کر چلے گئے۔ دونوں کینسر سے متاثر تھے اور انہوں نے ممبئی میں آخری سانس لی۔ اتنے بہترین اداکاروں کے انتقال سے بالی ووڈ ہی نہیں بلکہ پوری دنیا کے اسٹارس چاہے وہ ہالی ووڈ کے اسٹار ہوں یا پھر کھیل کی دنیا کے اسٹار سبھی مایوس نظر آئے۔ پڑوسی ملک پاکستان کے بھی کئی کرکٹروں نے بالی ووڈ کے ان دو ہستیوں کے اچانک جانے پر افسوس ظاہرکیا، جن میں وقار یونس، شعیب اختر جیسے کھلاڑی بھی ہیں۔ ہفتہ کو پاکستان کے سابق آف اسپنر ثقلین مشتاق نے بھی عرفان خان اور رشی کپور کی موت پر افسوس کا اظہار کیا اور انہوں نے اس پرکہا کہ موت کڑوی سچائی ہے، موت کا مزہ ہر کسی نے چخا۔


عرفان خان کے انتقال پر یہ بولے ثقلین مشتاق


ثقلین مشتاق نے عرفان خان (Irrfan Khan) کی موت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے، ’18 سال سے انگلینڈ میں ہوں۔ بہت سے دوست ہیں، جو انڈیا کے ہیں، سبھی نے بتایا کہ عرفان خان بہت اچھا انسان ہے۔ عرفان خان اچھے دوست، بےحد ہی خاموش انسان ہیں۔ ساتھ ہی وہ اچھے بیٹے بھی ہیں۔ دوستوں نے بتایا کہ عرفان خان اپنی ماں سے بہت پیار کرتے تھے، میں عرفان خان سے ملنا چاہتا تھا، لیکن ایسا ہو نہیں پایا’۔ ثقلین مشتاق نے مزید کہا، ’عرفان خان کا اپنی ماں کے لئے پیار دیکھ کر میں کافی جذباتی ہوگیا ہے’۔


ثقلین مشتاق نے عرفان خان کی موت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے، ’18 سال سے انگلینڈ میں ہوں۔ بہت سے دوست ہیں، جو انڈیا کے ہیں، سبھی نے بتایا کہ عرفان خان بہت اچھا انسان ہے۔
ثقلین مشتاق نے عرفان خان کی موت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے، ’18 سال سے انگلینڈ میں ہوں۔ بہت سے دوست ہیں، جو انڈیا کے ہیں، سبھی نے بتایا کہ عرفان خان بہت اچھا انسان ہے۔


رشی کپور سے ہوتی تھی میسیج پر بات

ثقلین مشتاق نے بتایا کہ وہ رشی کپور سے کبھی ملے نہیں تھے، لیکن وہ اکثر ٹوئٹر میسیج پر بات کرتے تھے۔ ثقلین مشتاق نے بتایا ’رشی کپور جی سے میری ٹوئٹرسے دوستی ہوئی۔ ہم ایک دوسرے سے باتیں کرتے تھے۔ ایک بار عالمی کپ میں انڈیا جیت گیا۔ مجھے رشی کپور جی نے سیدھے میسیج کیا، وہاں سے باتوں کا سلسلہ شروع ہوا۔ رشی کپور جی کا دل بہت اچھا تھا، لیکن ملاقات نہیں ہوپائی’۔ ثقلین مشتاق نے بتایا کہ انہوں نے ایک ویڈیو میں کہا تھا کہ جب رشی کپور جی پاکستان آئیں گے تو وہ ان کے ڈرائیور بنیں گے اور انہیں اپنے ہاتھوں سے کھانا کھلائیں گے۔

ہندوستان- پاکستان کا میچ چاہتے تھے رشی کپور

ثقلین مشتاق نے مزید بتایا، ’رشی کپور جی نے مجھے میسیج کیا تھا کہ کچھ ایسا کرو کہ اندیا - پاکستان کا میچ ہو، دوستی ہو۔ جب بھی میں ویڈیو ختم کرتا ہوں تو رشی کپور جی کا یہ میسیج ضرور دیتا ہوں۔ امن کی جیت ہو لڑائی کی ہار ہو۔ دوستی کی جیت ہو، دشمنی کی ہار ہو۔ یہ سارے الفاظ میں انہیں کی وجہ سے ہی بولتا ہوں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: May 04, 2020 11:37 PM IST