உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیارا اڈوانی سے شادی کرنے جا رہے ہیں سدھارتھ ملہوترا؟ اداکار نے بتایا پورا پلان

    کیارا اڈوانی سے شادی کرنے جا رہے ہیں سدھارتھ ملہوترا؟

    کیارا اڈوانی سے شادی کرنے جا رہے ہیں سدھارتھ ملہوترا؟

    بالی ووڈ اداکار سدھارتھ ملہوترا کی پرسنل لائف ان کے پروفیشنل لائف کی طرح ہی دلچسپ ہے۔ اداکار کی حالیہ ریلیز فلم ’شیر شاہ‘ (Shershaah) نے سدھارتھ ملہوترا (Sidharth Malhotra) کو ایک بہت ہی بڑی کامیابی دلائی ہے۔ اس وقت سدھارتھ ملہوترا کے پاس کئی ایسے پروجیکٹ ہیں، جو ان کے مداحوں کو سرپرائز کرنے والا ہے۔

    • Share this:
      ممبئی: بالی ووڈ اداکار سدھارتھ ملہوترا کی پرسنل لائف ان کے پروفیشنل لائف کی طرح ہی دلچسپ ہے۔ اداکار کی حالیہ ریلیز فلم ’شیر شاہ‘ (Shershaah)  نے سدھارتھ ملہوترا (Sidharth Malhotra) کو ایک بہت ہی بڑی کامیابی دلائی ہے۔ اس وقت سدھارتھ ملہوترا کے پاس کئی ایسے پروجیکٹ ہیں، جو ان کے مداحوں کو سرپرائز کرنے والا ہے۔ ان سب کے درمیان سدھارتھ ملہوترا شادی کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔

      سدھارتھ ملہوترا (Sidharth Malhotra) اور کیارا اڈوانی (Kiara Advani) کے ڈیٹ کرنے کی افواہیں تھیں۔ ہندوستان ٹائمس کی خبر کے مطابق، جب سدھارتھ ملہوترا سے ان کے شادی کے بارے میں پوچھا گیا تو انہوں نے ہنستے ہوئے کہا، ’ابھی تک اس کا کوئی منصوبہ نہیں ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ یہ کچھ ایسا ہے، جو ضرور ہوگا۔ وہ فلم ابھی تک پروڈیوس نہیں ہوئی ہے۔ میرے پاس اس کے لئے کہانی نہیں ہے اور اسکرپٹ یا کاسٹ بھی تیار نہیں ہے۔ جب بھی ایسا ہونے کو ہوگا تو میں سبھی کو بتا دوں گا۔

       



       




      View this post on Instagram





       

      A post shared by Sidharth Malhotra (@sidmalhotra)






      36 سال کے سدھارتھ ملہوترا (Sidharth Malhotra) اگلی بار ’مشن مجنو‘ (Mission Majnu) میں  دکھائی دیں گے۔ اس فلم میں ان کا رول کافی الگ ہے۔ ’شیرشاہ‘ (Shershaah) کے بعد ان کا کہنا ہے کہ لوگوں نے انہیں اور سنجیدگی سے لینا شروع کردیا ہے۔ انہوں نے کہا، ’مجھے لگتا ہے کہ کامیابی ایک فنکار کے طور پر آپ کا جذبہ بدلتی ہے۔ میں ایک فنکار کے طور پر کام پر واپس آگیا ہوں، اور مجھے یقین ہے کہ جب بھی میں مشورہ دوں گا تو اب اسے اور زیادہ اہمیت دی جائے گی‘۔

      انہوں نے اس بات کو تفصیل سے کہا کہ شاید تین سال پہلے، جب میں نے کوئی مشورہ دیا ہوگا تو انہوں نے سوچا ہوگا کہ ’کریں کی نہ کریں‘، لیکن اب وہ دیکھتے ہیں کہ میں نے ایک ایسی فلم میں کام کیا ہے، جو ناظرین سے جڑی ہوئی ہے۔ میں اسے ایک مثبت تبدیلی کے طور پر دیکھتا ہوں۔ اسی سے میرا سروکار ہے، مجھے تبدیلی لانی ہے اور جنون کا جذبہ سے اسے جوڑنا۔ میں یہ نہیں کہہ رہا ہوں کہ میں بہتر جانتا ہوں یا اسے کنٹرول کرنا چاہتا ہوں، میں صرف یہ کہہ رہا ہوں کہ چیزوں کو آزمانے میں کوئی برائی نہیں ہے۔ ہمارے پاس اپنی فلموں میں ہمیشہ ری ٹیک کا متبادل ہوتا ہے‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: