உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ’سڈناز’ احساس بن کر مداحوں کے دلوں میں زندہ! ملا 'Most loved Jodi' کا ایوارڈ

    ’سڈناز’ احساس بن کر مداحوں کے دلوں میں زندہ! ملا 'Most loved Jodi' کا ایوارڈ

    ’سڈناز’ احساس بن کر مداحوں کے دلوں میں زندہ! ملا 'Most loved Jodi' کا ایوارڈ

    سدھارتھ شکلا (Sidharth Shukla) اور شہناز گل (Shehnaaz Gill) کی جوڑی کو ابھی بھی لوگوں کا بھرپور پیار مل رہا ہے۔ سڈناز (Sidnaaz) کو ’موسٹ لو جوڑی ایوارڈ‘ (Most loved Jodi Award) سے نوازا گیا ہے۔ شہناز گل کا پیار بھلے ہی ادھورا رہ گیا ہو، لیکن سدھارتھ شکلا کے ساتھ ان کی جوڑی ’امر‘ ہوگئی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      ممبئی: سدھارتھ شکلا (Sidharth Shukla) بھلے آج لوگوں کے درمیان موجود نیں ہیں، لیکن وہ اپنے مداح، دوستوں اور قریبیوں کی یادوں اور احساسات میں زندہ ہیں۔ وہ پیار، دوستی اور محبت کا احساس بن کر اپنے چاہنے والوں کے دلوں میں بس گئے ہیں۔ لوگوں نے سدھارتھ شکلا اور شہناز گل (Shehnaaz Gill) کی جوڑی کو بے انتہا پیار دیا ہے اور دیتے رہیں گے۔ سڈناز کو لوگوں نے اتنا پیار دیا کہ وہ سب سے پاپولر جوڑی میں سے ایک بن گئی ہے۔

      سدھارتھ شکلا کے دنیا سے چلے جانے کے بعد سے شہناز گل پوری طرح سے ٹوٹ گئی ہیں۔ اب سدھارتھ شکلا کی یادیں اور ان کے پیار کا احساس ہی ان کے ساتھ ہے۔ یہ جوڑی امر ہوگئی ہے۔ اس جوڑی کو حال میں ’موسٹ لوڈ جوڑی ایوارڈ‘ (Most loved Jodi Award) سے نوازا گیا ہے۔ شہناز گل کا پیار بھلے ہی ادھورا رہ گیا ہو، لیکن سدھارتھ شکلا کے ساتھ ان کی جوڑی امر ہے۔

      سڈناز پہلی بار ’بگ باس 13‘ میں ساتھ میں نظر آئے تھے۔ (تصویر کریڈٹ: Twitter@Ohudeadppl)


      سوشل میڈیا پر جیسے ہی اس ایوارڈ کا اعلان ہوا، سدھارتھ شکلا اور شہناز گل کے مداح خوشی سے جھوم اٹھے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق، سدھارتھ شکلا اور شہناز گل کی جوڑی یہ ایوارڈ ‘دی کلیف میوزک ایوارڈ‘ (The Clef Music Awards) کی طرف سے ملا ہے۔ نیٹجنس نے ٹوئٹ کرکے اپنی خوشی ظاہر کی ہے اور ایک بار پھر اپنے چہیتے اسٹار اور جوڑی کو یاد گیا ہے۔

      یہ جوڑی ’بگ باس 13‘ میں پہلی بار ساتھ نظر آئی تھیں۔ اس نے اپنی خوبصورت کیمسٹری سے ہر کسی کا دل جیت لیا تھا۔ دوسری طرف، شہناز گل اس بات پر یقین نہیں کر پا رہی ہیں کہ سدھارتھ شکلا اب اس دنیا میں نہیں ہیں۔ شہناز گل کے چاہنے والے اور ساتھی ان کی کافی فکر کر رہے ہیں۔ وہ کسی نہ کسی طریقے سے شہناز گل کا حوصلہ بڑھانے کی کوشش کر رہے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: