உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیا اسٹار کڈس ہونے کی وجہ سے سہانا خان اور خوشی کپور کو ملی’The Archies‘؟ یہ رہا جواب

    فلم The Archies میں اسٹار کڈس کو لے کر پھر چھڑی اقربا پروری پر بحث۔

    فلم The Archies میں اسٹار کڈس کو لے کر پھر چھڑی اقربا پروری پر بحث۔

    The Archies Casting Director On Suhana Khan, Khushi Kapoor: اسٹار کڈز کی وجہ سے فلم کے پوسٹر کو لے کر ہونے والی تنقید پر نندنی نے کہا کہ کسی بھی انڈسٹری کو دیکھ لیں۔ اگلی نسل سنبھالتی ہے۔

    • Share this:
      The Archies Casting Director On Suhana Khan, Khushi Kapoor: بالی ووڈ میں اقربا پروری بحث کا ایک بڑا مسئلہ ہے، جو وقتاً فوقتاً سامنے آتا ہے۔ جب فلم 'دی آرچیز' کا پہلا پوسٹر سامنے آیا تو ایک بار پھر سہانا خان اور خوشی کپور کو لے کر بحث چھڑ گئی۔ سوشل میڈیا پر پوسٹر کو لے کر تمام میمز بننے لگے۔ اسٹار کڈز ہونے کی وجہ سے فلم مل گئی جیسی کئی باتیں ہونے لگیں۔

      حالانکہ سہانا اور خوشی کے فینس بھی دونوں کے بالی ووڈ ڈیبیو کو لے کر کافی پرجوش تھے۔ شاہ رخ خان نے بیٹی سہانا اور جھانوی کپور نے بہن خوشی کپور کے لیے جذباتی پوسٹس بھی لکھیں۔ لیکن تقریباً پورے انٹرنیٹ پر لوگ سہانا اور خوشی کو 'دی آرچیز' میں مرکزی اداکارہ کے طور پر کاسٹ کرنے کے لیے میکرز پر تنقید کرتے نظر آئے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Shocking:فلم انڈسٹری چھوڑکرلیڈربنی سلمان کی ہیروئین ریمی سین،تصویریں دیکھ فینس ہوئے حیران



       




      View this post on Instagram





       

      A post shared by Suhana Khan (@suhanakhan2)





      یہ بھی پڑھیں:

      جبSara Ali Khan نے کہی تھی اپنے ماما سے شادی کرنے کی بات،ایساتھاوالدسیف علی خان کاری ایکشن

      یہ بھی پڑھیں:
      Mallika Sherawat On Comeback:سات سال بعدواپسی کرنے والی ملیکا نے ناقدین کودیاکرارا جواب

      فلم کی کاسٹنگ ڈائریکٹر نے دیا یہ جواب
      اب اس پورے معاملے پر 'دی آرچیز' کی کاسٹنگ ڈائریکٹر نندنی شریکانت کا ردعمل سامنے آیا ہے۔ بالی ووڈ لائف کی رپورٹ کے مطابق نندنی نے بتایا ہے کہ شاہ رخ کی بیٹی سہانا اور بونی کپور کی بیٹی خوشی اس فلم کا حصہ کیوں ہیں؟ اسٹار کڈز کی وجہ سے فلم کے پوسٹر کو لے کر ہونے والی تنقید پر نندنی نے کہا کہ کسی بھی انڈسٹری کو دیکھ لیں۔ اگلی نسل سنبھالتی ہے۔ اگر کوئی اس کردار میں فٹ بیٹھتا ہے تو وہ موقع کا حقدار ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: