ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

سارہ علی خان سمیت ان 7 لوگوں کے ساتھ بینکاک گئے تھے سشانت سنگھ راجپوت، ریا چکرورتی نے ٹرپ کا کیا تھا ذکر

سشانت سنگھ راجپوت (Sushant Singh Rajput) کی موت کے تقریباً 74 دنوں کے بعد ان کی گرل فرینڈ ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty) نے پہلی بار خاموشی توڑی اور میڈیا کے سامنے اپنا موقف رکھا۔

  • Share this:
سارہ علی خان سمیت ان 7 لوگوں کے ساتھ بینکاک گئے تھے سشانت سنگھ راجپوت، ریا چکرورتی نے ٹرپ کا کیا تھا ذکر
اسمتا کے مطابق سارہ علی خان سے بریک اپ کے بعد سشانت کی زندگی میں ریاچکرورتی کی انٹری ہو گئی تھی۔ ریا نے جلد ہی ان کی زندگی میں جگہ بنالی تھی جو انہیں ٹھیک نہیں لگا۔

ممبئی: سشانت سنگھ راجپوت (Sushant Singh Rajput) کی موت کے تقریباً 74 دنوں کے بعد ان کی گرل فرینڈ ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty) نے پہلی بار خاموشی توڑی اور میڈیا کے سامنے اپنا موقف رکھا۔ انہوں نے سشانت سنگھ راجپوت کی فیملی کے ذریعہ لگائے گئے الزامات کے ساتھ سشانت سنگھ راجپوت کی لائف اسٹائل کے بارے میں بھی باتیں کی۔ 17 کروڑ اور یوروپ ٹرپ کے ساتھ انہوں نے بینکاک ٹرپ (Bangkok trip) کا بھی ذکر کیا۔ ریا چکرورتی نے بتایا کہ وہ اس ٹرپ میں 7 لوگوں کے ساتھ گئے تھے، جس میں انہوں نے 70 لاکھ روپئے خرچ کئے تھے۔ ریا چکرورتی کے اس انکشاف کے بعد یہ سوال بنا ہوا تھا کہ آخر بینکاک ٹرپ پر کون کون گیا تھا؟ حال ہی میں سشانت سنگھ کے سابق اسسٹنٹ نے اس ٹرپ کے بارے میں انکشاف کیا ہے۔


ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty) کے ذریعہ بینکاک ٹرپ (Bangkok Trip) کے ذکر کے بعد سے یہ سوال اٹھ رہے تھے کہ آخر وہ کون کون لوگ ہیں، جن پر سشانت سنگھ راجپوت نے 70 لاکھ روپئے خرچ کردیئے۔ سشانت سنگھ راجپوت کے سابق اسسٹنٹ صابر احمد نے حال ہی میں انڈیا ٹوڈے سے خاص بات چیت کی، جس میں انہوں نے ان لوگوں کے نام انکشاف کیا، جو سشانت سنگھ راجپوت کے ساتھ بینکاک ٹرپ پر گئے تھے۔


 ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty) کے ذریعہ بینکاک ٹرپ (Bangkok Trip) کے ذکر کے بعد سے یہ سوال اٹھ رہے تھے کہ آخر وہ کون کون لوگ ہیں، جن پر سشانت سنگھ راجپوت نے 70 لاکھ روپئے خرچ کردیئے۔

ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty) کے ذریعہ بینکاک ٹرپ (Bangkok Trip) کے ذکر کے بعد سے یہ سوال اٹھ رہے تھے کہ آخر وہ کون کون لوگ ہیں، جن پر سشانت سنگھ راجپوت نے 70 لاکھ روپئے خرچ کردیئے۔


صابر احمد نے اس خاص بات چیت میں بتایا کہ اس ٹرپ پر 7 لوگ تھے۔ سشانت سنگھ راجپوت، سارہ علی خان، سدھارتھ شکلا، کشل جاویری، عباس، سشانت کے باڈی گارڈ مشتاق اور خود صابر احمد۔ انہوں نے کہا کہ یہ سشانت سنگھ راجپوت کی ان کے پی آر او ٹیم اور اداکارہ سارہ علی خان کے ساتھ ایک ٹرپ تھی، جس میں دو لوگ اور شامل ہوئے، میں اور ان کے باڈی گارڈ مشتاق احمد۔

اس ٹرپ کا ذکر کرتے ہوئے صابر احمد نے کہا کہ یہ کافی لکژیریس ٹرپ تھی۔ سال 2018 دسمبر میں سبھی لوگ بینکاک کی ٹرپ پر ایک پرائیویٹ جیٹ سے گئے تھے۔ ٹرپ کے بارے میں صابراحمد نے کہا کہ وہ تین دن کے لئے سشانت سنگھ راجپوت اور سارہ علی خان کے ساتھ ہوٹل میں تھے۔ پہلے دن سب لوگ سمندر می رہ گئے تھے۔ اس کے بعد باقی سبھی لوگ بینکاک گھومے، لیکن سارہ علی خان اور سشانت سنگھ ہوٹل میں ہی تھے۔ صابر احمد کے مطابق، وہ سبھی لوگ بینکاک کے آئیلینڈ ہوٹل میں رکے تھے، لیکن سنامی کے سبب اس ٹرپ کو سمندر میں ہی روکنا پڑا۔ سبھی لوگوں نے واپس آنے کا فیصلہ کیا، لیکن مجھے اور مشتاق کو ایک ماہ تک بینکاک میں ہی رکنا پڑا تھا، کیونکہ واپس آنے کے لئے فلائٹ کے ٹکٹ نہیں مل پائے تھے۔ صابر احمد نے یہ بھی بتایا کہ ایک ماہ تک ہمارا پورا خرچ سشانت سنگھ نے ہی اٹھایا۔ ضرورت پڑنے پر سیموئل نے ممبئی سے پیسے بھی ٹرانسفر کئے اور ایک ماہ کے بعد جب وہ لوگ واپس آئے تو انہیں سیموئل ہی ایئر پورٹ پر لینے آئے تھے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 30, 2020 07:57 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading