ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

سشانت سنگھ راجپوت خودکشی معاملہ: لیگل ٹیم کو لےکر باندرہ پولیس اسٹیشن پہنچے سنجے لیلا بھنسالی

اداکار سشانت سنگھ راجپوت (Sushant Singh Rajput) کے خودکشی معاملے میں مشہور ہندی فلم کے ڈائریکٹر سنجے لیلا بھنسالی (Sanjay Leela Bhansali) کچھ دیر پہلے ہی باندرہ پولیس اسٹیشن پہنچے۔ سنجے لیلا بھنسالی یہاں اکیلے نہیں بلکہ اپنی پوری لیگل ٹیم کو لے کر پہنچے ہیں۔

  • Share this:
سشانت سنگھ راجپوت خودکشی معاملہ: لیگل ٹیم کو لےکر باندرہ پولیس اسٹیشن پہنچے سنجے لیلا بھنسالی
سشانت سنگھ راجپوت خودکشی معاملہ: لیگل ٹیم کو لےکر باندرہ پولیس اسٹیشن پہنچے سنجے لیلا بھنسالی

ممبئی: اداکار سشانت سنگھ راجپوت (Sushant Singh Rajput) کے خودکشی معاملے میں مشہور ہندی فلم کے ڈائریکٹر سنجے لیلا بھنسالی (Sanjay Leela Bhansali) کچھ دیر پہلے ہی باندرہ پولیس اسٹیشن پہنچے۔ سنجے لیلا بھنسالی یہاں اکیلے نہیں بلکہ اپنی پوری لیگل ٹیم کو لے کر پہنچے ہیں۔ حال ہی میں پولیس کے بڑے ذرائع کے حوالے سے یہ خبر سامنے آئی تھی کہ سشانت سنگھ راجپوت کی خود کشی کے معاملے میں سنجے لیلا بھنسالی سے پوچھ گچھ کی جاسکتی ہے۔ سشانت سنگھ راجپوت، سنجے لیلا بھنسالی کی کسی فلم میں کبھی نظر نہیں آئے ہیں، لیکن پھر بھی بھنسالی کو اس معاملے میں طلب کیا گیا ہے۔ دراصل سنجے لیلا بھنسالی کی ایک نہیں بلکہ دو دو فلموں میں سشانت سنگھ راجپوت کو لیڈ رول کے لئے فائنل کرنے کے بعد فلم سے نکالا گیا تھا۔


Photo- Viral Bhayani
Photo- Viral Bhayani


باندرہ پولیس اسٹیشن پہنچنے سے پہلے سنجے لیلا بھنسالی اپنے جوہو واقع اپنے دفتر پہنچے اور وہاں اپنی لیگل ٹیم کے ساتھ اس معاملے پر بات کی۔ سنجے لیلا بھنسالی نےگاڑی میں ہی بیٹھ کر اپنی ٹیم سے تبادلہ خیال کیا۔ اپنے دفتر سے پولیس اسٹیشن پہنچنے تک سنجے لیلا بھنسالی سے بار بار یہ پوچھنے کی کوشش کی گئی کہ آخر انہیں اس معاملے میں کیا جانکاری ہے، لیکن انہوں نے کچھ بھی کہنے سے منع کردیا۔


واضح رہے کہ ڈائریکٹر سنجے لیلا بھنسالی کی فلم ’رام لیلا’ میں لیڈ رول میں رنویر سنگھ اور دیپکا پادوکون نظر آئے تھے۔ تاہم اطلاعات کے مطابق بھنسالی کی فلم ’رام لیلا’ کی پوری اسکرپٹنگ سشانت سنگھ کو ہی دھیان میں رکھ کر کی گئی تھی۔ اس فلم میں سشانت سنگھ راجپوت کو لے لیا گیا تھا، لیکن اس دوران سشانت یش راج فلمس کمپنی کی 3 فلم ڈیل میں بندھے تھے۔ یعنی یش راج فلمس کی تین فلموں کو کرنے سے پہلے وہ کسی اور کمپنی کے ساتھ فلم سائن نہیں کرسکتے تھے۔

رنویر سنگھ، سنجے لیلا بھنسالی اور سشانت سنگھ راجپوت۔ تصویر- (Photo- @RanveerSinghOfficial/Facebook)
رنویر سنگھ، سنجے لیلا بھنسالی اور سشانت سنگھ راجپوت۔ تصویر- (Photo- @RanveerSinghOfficial/Facebook)


ایسے میں سامنے آئی اطلاع کے مطابق سنجے لیلا بھنسالی سے ’رام لیلا’ کا آفر ملنے کے بعد سشانت سنگھ راجپوت نے یش راج ایجنسی کی کاسٹنگ ہیڈ شانو شرما کو اس کے بارے میں پوری اطلاع دی تھی۔ کیونکہ سشانت 3 فلموں کے معاہدے میں بندھے تھے، اس لئے بھنسالی پروڈکشن نے یش راج فلمس کو 4 کروڑ 45 لاکھ کی رائلٹی بھی بھری تھی، لیکن اس کے بعد کچھ ایسا ہوا کہ اس فلم سے سشانت سنگھ راجپوت کو باہرکردیا گیا اور ان کی جگہ رنویر سنگھ کو لے لیا گیا تھا۔ اس فلم کے اپنے ہاتھوں سے نکلنے کے بعد سشانت سنگھ راجپوت نے شانو کو فون کرکے جھگڑا بھی کیا تھا۔ اتنا ہی نہیں، بھنسالی کی ایک اور فلم ’بازی راو مستانی’ سے بھی سشانت سنگھ کو ریپلیس کیا گیا تھا۔ اس فلم میں بھی سشانت سنگھ کی جگہ رنویر سنگھ نظر آئے تھے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 06, 2020 08:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading