உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اپنی شادی والے دن اچانک ڈر کر زور سے چیخنے لگیں Mouni Roy، جانیں کیا ہوا ایسا: وائرل ویڈیو

    مونی رائے

    مونی رائے

    مونی رائے کا یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہا ہے۔ دراصل اس رسم کو شبھو درشتی تقریب کہا جاتا ہے۔ اس دوران لال رنگ کا لہنگا پہنے مونی کو پیڑھے پر بٹھا کر منڈپ لایا جا رہا ہے۔

    • Share this:
      مونی رائے (Mouni Roy Wedding)  اور سورج نمبیار    (Suraj Nambiar)   کی شادی کی تصاویر اور ویڈیوز کافی وائرل ہو رہی ہیں۔ مونی سورج کی شادی میں ان کے اہل خانہ کے علاوہ فلم انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے ان کے قریبی دوستوں نے بھی شرکت کی۔ اداکارہ کی شادی میں میٹ برادرز کے منمیت سنگھ نے بھی شرکت کی اور ان کی شادی میں بڑے بھائی سے جڑی  رسمیں نبھائیں۔ مونی رائے نے پہلے ملیالی رسومات کے مطابق شادی کی اور پھر بنگالی روایت کے مطابق سات پھیرےلئے لیکن ان رسومات کے درمیان کچھ ایسا ہوا کہ مونی کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے لگی۔

      مونی رائے کی ویڈیو وائرل
      مونی رائے کا یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہا ہے۔ دراصل اس رسم کو شبھو درشتی تقریب کہا جاتا ہے۔ اس دوران لال رنگ کا لہنگا پہنے مونی کو پیڑھے  پر بٹھا کر منڈپ  لایا جا رہا ہے۔ بھائیوں نے لکڑی کی پیڑھی کو چاروں طرف سے پکڑ رکھا ہے۔ منڈپ میں داخل ہوتے وقت دلہن کا چہرہ پان کی پتی سے ڈھک  دیا جاتا ہے۔ مونی اپنے دولہا سورج نمبیار کو پان کے پتوں میں کے بیچ سے نہارتی نظر آ رہی ہیں، اسی دوران کچھ ایسا ہوتا ہے کہ وہ اچانک گھبرا جاتی ہیں۔



       




      View this post on Instagram





       

      A post shared by F I L M Y C O O K (@filmycook)





      مونی رائے مدد کے لیے چیخنے لگیں
      دراصل جب مونی رائے کی بنگالی رسم و رواج کے مطابق شادی ہوئی تو انہیں ایک پیڑھی پر بٹھا کر 7 چکر لگوائے گئے۔ اس دوران مونی اپنے ہاتھوں میں پان کی پتیوں سے اپنا چہرہ ڈھانپتی نظر آرہی ہیں۔ لیکن اس رسم کے دوران مونی بہت گھبرائی اور لوگوں کو مدد کے لیے پکارنے لگیں، جب کہ اس دوران ان کے بھائیوں نے پیڑھی کو پکڑ کر چکر لگوا رہے تھے۔  تبھی مونی ڈر جاتی ہیں اور کہتی ہیں  7 نہیں، صرف ایک چکر لگواؤ۔ مونی رائے کو لگتا ہے کہ وہ پیڑھی سے نیچے گر جائے گی، جب کہ بھائی اس رسم کو ادا کرنے کے لیے پیڑھی  کو بہت مضبوطی سے تھامے ہوئے تھے۔ لیکن سب نے ساتوں چکر مکمل کر لیے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: