உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بھارتی سنگھ نے دیا اپنے پہلے بچے کو جنم، ہرش لمباچیا نے پوسٹ کرکے کہا- ’لڑکا ہوا ہے‘

    بھارتی سنگھ نے دیا اپنے پہلے بچے کو جنم، ہرش لمباچیا نے پوسٹ کرکے کہا- ’لڑکا ہوا ہے‘

    بھارتی سنگھ نے دیا اپنے پہلے بچے کو جنم، ہرش لمباچیا نے پوسٹ کرکے کہا- ’لڑکا ہوا ہے‘

    Bharti Singh becomes mother: بھارتی سنگھ (Bharti Singh) کے شوہر ہرش لمباچیا (Haarsh Limbachiyaa) نے اس بات کی جانکاری اپنے انسٹا گرام پر ایک پوسٹ کے ذریعہ دی ہے۔ ہرش کے پوسٹ کرتے ہی مداح انہیں اور بھارتی کو مبارکباد دینے لگے ہیں۔ ہرش کا پوسٹ اب سوشل میڈیا پر وائرل ہونے لگا ہے۔

    • Share this:
      کامیڈین بھارتی سنگھ (Bharti Singh) ماں بن گئی ہیں۔ انہوں نے ایک لڑکے کو جنم دیا ہے۔ اس بات کی جانکاری بھارتی سنگھ کے شوہر ہرش لمباچیا نے (Haarsh Limbachiyaa) اپنے انسٹا گرام پر ایک پوسٹ کے ذریعہ دی ہے۔ ہرش لمباچیا کے پوسٹ کرتے ہی مداح انہیں اور بھارتی سنگھ کو مبارکباد دینے لگے ہیں۔ ہرش کا پوسٹ اب سوشل میڈیا پر وائرل ہونے لگا ہے۔

      ساتھ ہی، ٹی وی کے تمام ستارے بھی ہرش لمباچیا کے پوسٹ پر مسلسل تبصرہ کرتے ہوئے دونوں کو مبارکباد دے رہے ہیں۔ وہیں، اب کچھ لوگوں کو انتظار اس بات کا ہے کہ کب بھارتی سنگھ اور ہرش اپنے بچے کا نام رکھیں گے، کیونکہ مداح یہ جاننے کے لئے اب بے قرار ہیں کہ دونوں کے لڑکے کا نام کیا ہوگا۔

      فرضی خبروں سے پریشان ہوگئی تھیں بھارتی سنگھ

      واضح رہے کہ پریگننسی کے دوران بھی بھارتی سنگھ مسلسل کام کرتی ہوئی نظر آرہی تھیں۔ حال ہی میں انہوں نے لائیو آکر ان کی ڈیلیوری پر چل رہی فرضی خبروں پر ردعمل ظاہر کیا تھا۔ انہوں نے ان کے بیبی گرل ہونے کی خبروں کو غلط بتایا تھا۔ انہوں نے لائیو آکر کہا تھا، ’میں ابھی ماں نہیں بنی ہوں، مجھے مبارکباد دینے کے لئے میری قریبی میسیج کر رہے ہیں۔ کہا جا رہا ہے کہ میں نے بیبی گرل کو جنم دیا ہے، لیکن یہ سچ نہیں ہے‘۔

      انہوں نے مزید کہا تھا، ’میں خطرہ کے اسٹیٹس پر ہوں۔ 15-20 منٹ کا بریک ملا ہے، تو میں نے لائیو آکر یہ واضح کرنے کی کوشش کی کہ میں ابھی بھی کام کر رہی ہوں۔ میں خوفزدہ ہوں۔ میری ڈیو ڈیٹ قریب ہے۔ میں اور ہرش بیبی کے بارے میں بات کرتے رہتے ہیں کہ وہ کیسا ہوگا ہوگی، لیکن ایک بات تو طے ہے کہ بیبی بہت فنی ہوگا، کیونکہ ہم دونوں فنی ہیں‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: