உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    حاملہ انوشکا شرما نے بتایا حمل کا تجربہ، سمندر کے کنارے بیبی بمپ فلانٹ کرتے ہوئے سامنے آئی تصویر

    انوشکا شرما نے شیئر کی حمل کی تصویر۔۔

    اداکارہ انوشکا شرما (Anushka Sharma pregnant) ان دنوں حاملہ ہیں۔ انوشکا اپنے حمل کے وقت کو انجوائے کر رہی ہیں۔ اب انوشکا شرما نے سمندر کے کنارے بیبی بمپ کے ساتھ ایک تصویر سوشل میڈیا پر شیئر کی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    انڈین کرکٹ ٹیم کے کپتان وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کی بیوی اداکارہ انوشکا شرما (Anushka Sharma pregnant)  ان دنوں حاملہ ہیں۔ انوشکا اپنے حمل کے وقت کو انجوائے کر رہی ہیں۔ اب انوشکا شرما نے سمندر کے کنارے بیبی بمپ کے ساتھ ایک تصویر سوشل میڈیا پر شیئر کی ہے۔ شیئر کے کچھ منٹ بعد ہی انوشکا کی یہ تصویر وائرل ہوگئی۔ اداکارہ نے اپنی اس تصویر کے ساتھ حمل (pregnancy) کا تجربہ بھی شیئر کیا ہے۔
    انسٹاگرام پر تصویر شیئر کرتے ہوئے انوشکا شرما نے کیپشن بھی لکھا، اس سے زیادہ سچ اور سکون بھرا احساس کچھ بھی نہیں ہے کہ آپ کے اندر ایک نئی زندگی پل رہی ہے؟ آپ کا اس پر کوئی کنٹرول نہیں ہوتا تو حقیقت میں یہ کیا ہے؟
    یہ بھی پڑیں: بیوی انوشکا شرما کی حمل والی تصویرپر وراٹ کوہلی نے سب کے سامنے کہہ ڈالی یہ بڑی بات

     



     




    View this post on Instagram




     

    Nothing is more real & humbling than experiencing creation of life in you . When this is not in your control then really what is ?


    A post shared by AnushkaSharma1588 (@anushkasharma) on





    وہیں انوشکا کی اس پوسٹ پر وراٹ کوہلی نے کمینٹ کرتے ہوئے کہا کہ میری پوری دنیا ایک فریم میں آگئی ہے۔ حال ہی میں وراٹ کوہلی نے آئی پی ایل سے پہلے اپنے فینس کو بہت بڑی خوشخبری دی تھی۔ وراٹ کوہلی نے بتایا تھا کہ وہ والد بننے والے ہیں۔ اس جوڑے نے بتایا کہ ان کے بچے کی پیدائش جنوری 2021  میں ہوگی۔

    فی الحال وراٹ  کوہلی آئی پی ایل کے 13 وین سنزن کیلئے یو اے ای میں ہیں۔ کوروناوائرس کی وجہ سے وہ پانچ مہینے کے بعد میدان پر واپسی بھیج کریں گے۔ کوہلی کی کپتانی میں رائل چیلنجرس بنگلور اپنے پہلے خطاب کی  تلاش میں 19 ستمبر سے شروع ہونے والے آئی پی ایل میں اترے گی۔ آئی پی ایل کا فائنل موابلہ 10 نومبر کو کھیلا جائے گا۔
    Published by:sana Naeem
    First published: