உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Madhuri Dixit On Anil Kapoor:انیل کپور سے شادی کروگی؟ اس سوال پر مادھوری ڈکشت دیا تھا یہ جواب

    مادھوری ڈکشٹ اور انیل کپور کی جوڑی کافی کامیاب مانی جاتی تھی۔

    مادھوری ڈکشٹ اور انیل کپور کی جوڑی کافی کامیاب مانی جاتی تھی۔

    Madhuri Dixit On Anil Kapoor: مادھوری ڈکشت نے 17 اکتوبر 1999 کو پیشے سے ڈاکٹر شری رام نینے سے شادی کی۔ اگر ہم ورک فرنٹ کی بات کریں تو حال ہی میں مادھوری ڈکشٹ نے دی فیم گیم سے ڈیجیٹل ڈیبیو کیا ہے۔

    • Share this:
      Madhuri Dixit On Anil Kapoor: آج بات ہو رہی ہے اداکارہ مادھوری ڈکشٹ کی، جنہیں پیار سے بالی ووڈ کی دھک دھک گرل کہا جاتا ہے۔ مادھوری کا نام اپنے وقت کی ٹاپ اداکاراؤں میں سے ایک ہے۔ آپ کو بتادیں کہ مادھوری ڈکشٹ نے اپنے وقت کے تمام بڑے ستاروں جیسے شاہ رخ خان، انیل کپور، سلمان خان وغیرہ کے ساتھ کام کیا ہے۔ تاہم مادھوری کی جوڑی کبھی اداکار انیل کپور کے ساتھ سب سے زیادہ پسند کی جاتی تھی۔ آپ کو بتا دیں کہ مادھوری نے انیل کپور کے ساتھ رام لکھن، ٹوٹل دھمال، کرما جیسی فلموں سمیت کئی فلموں میں کام کیا۔

      آج ہم آپ کو مادھوری کے ایک تھرو بیک انٹرویو کے بارے میں بتائیں گے جو اداکارہ نے سال 1989 میں دیا تھا۔ اس انٹرویو میں مادھوری نے اداکار انیل کپور سے متعلق سوالات کا بھی بہت ہی مضحکہ خیز جواب دیا۔ انٹرویو کے دوران مادھوری سے پوچھا گیا کہ کیا وہ انیل کپور سے شادی کرنا چاہیں گی؟ اس سوال کے جواب میں مادھوری نے کہا کہ 'نہیں، میں ان جیسے کسی سے شادی نہیں کروں گی، وہ بہت زیادہ حساس (ہائپر سینسٹیو) ہیں، میں چاہوں گی کہ میرا شوہر کول نیچر کا ہو۔'

      یہ بھی پڑھیں:
      Sridevi Reema Lagoo Movies:جب اس بات سے اِن سیکیور سری دیوی نے کٹوادیا تھا ریما لاگوکارول!

      یہ بھی پڑھیں:
      Salman Aishwarya Break Up:کیا ایشوریہ کی ان شرطوں کی وجہ سے ٹوٹا سلمان خان کے ساتھ رشتہ؟

      مادھوری کا مزید کہنا ہے کہ 'میں نے انیل کے ساتھ کئی فلموں میں کام کیا ہے۔ میں اس کے ساتھ کام کرنے میں آرام دہ محسوس کرتی ہوں، یہاں تک کہ میں ان کے ساتھ اپنے مبینہ تعلقات کا مذاق بھی اڑاسکتی ہوں۔ آپ کو بتادیں کہ مادھوری ڈکشت نے 17 اکتوبر 1999 کو پیشے سے ڈاکٹر شری رام نینے سے شادی کی۔ اگر ہم ورک فرنٹ کی بات کریں تو حال ہی میں مادھوری ڈکشٹ نے دی فیم گیم سے ڈیجیٹل ڈیبیو کیا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: