உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    قانونی چکر میں پھنسی نصرت بھروچاکی فلم’Janhit Mein Jaari‘،رائٹر نے یہ الزام لگاکر درج کرایا کیس

    Condom کو لے کربنی  نصرت بھروچا کی فلم قانونی فکر میں پھنس گئی!

    Condom کو لے کربنی نصرت بھروچا کی فلم قانونی فکر میں پھنس گئی!

    Janhit Mein Jaari legal Notice: جیتندر نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے اس معاملے کو لے کر ورسووا پولیس اسٹیشن اور اسکرین رائٹرز ایسوسی ایشن میں شکایت درج کرائی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا ہے کہ کاپی رائٹ کی خلاف ورزی کے معاملے میں شاندیلیا کے خلاف لڑائی میں ان کے شریک مصنف گوتم ان کے ساتھ نہیں ہیں۔

    • Share this:
      Janhit Mein Jaari legal Notice:فلم 'جن ہت میں جاری' (Janhit Mein Jaari)کے رائٹر نے الزام لگا کر کیس درج کروایا ہے جس کے بعد نصرت بھروچا( Nushrratt Bharuccha) اور انود سنگھ (Anud Singh) کی حالیہ ریلیز ہوئی فلم قانونی چکر میں پھنس گئی ہے۔ جتیندر گیان چندنن نے فلم کے پروڈیوسر اور رائٹر راج شاندلیا پر ان کی کہانی چوری کرنے کا الزام لگایا ہے، حالانکہ راج نے ان الزامات کو مسترد کر دیا ہے۔ جتیندر گیان چندانی نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے گوتم پرساد شا کے ساتھ مل کر 'کنڈوم پیار کی پہلی شرط ' کے نام سے کہانی لکھی اور اسے 2019 میں اسکرین رائٹرز ایسوسی ایشن کے ساتھ رجسٹر بھی کرایا تھا۔

      جیتندر نے کہا، 'گوتم نے 2017 میں اس اسکرپٹ کو اپنے نام پر رجسٹر کروایا تھا۔ مجھے ایک ہدایت کار نے اس کہانی کو آگے بڑھاکر اسے مزید بہتر کرنے کو کہا ۔ 2019 میں اس ہدایت کار کو میری کہانی پسند آئی اور گوتم اور مجھے ایک ساتھ کام کرنے کے لیے بلایا۔ ہم نے مشترکہ طور پر کہانی اکتوبر میں رجسٹر کی۔ اس کے بعد جون 2020 میں گوتم نے وہ کہانی راج کو دی اور پھر شاندیلیا نے نومبر 2020 میں فلم 'جن ہت میں جاری' کا اعلان کردیا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Khuda Haafiz 2:ریلیزسے پہلے ودیوت کی خداحافظ2پرتنازع،میکرس نے شیعہ برادری سے مانگی معافی

      یہ بھی پڑھیں:
      Sonam Kapoor Stylish Diva:وحیدہ رحمن،سیمتا پاٹل اورشبانہ اعظمی جیسی نظرآتی ہیں یہ اداکارہ

      جیتندر نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے اس معاملے کو لے کر ورسووا پولیس اسٹیشن اور اسکرین رائٹرز ایسوسی ایشن میں شکایت درج کرائی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا ہے کہ کاپی رائٹ کی خلاف ورزی کے معاملے میں شاندیلیا کے خلاف لڑائی میں ان کے شریک مصنف گوتم ان کے ساتھ نہیں ہیں۔ جب اس بارے میں فلم کے مصنف شاندلیا سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا، 'ہم نے انہیں قانونی نوٹس کے ذریعے پہلے ہی جواب دے دیا ہے اور اس کہانی کو 2017 میں رجسٹر کروایا تھا تو کوئی بھی آکر کچھ بھی دعوی کر سکتا ہے'۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: