ہوم » نیوز » Explained

Explained:کارحادثہ کے متاثرکے لیے سنہری گھنٹہGolden Hourکیاہے اورکیسے مل سکتاہے معاوضہ؟

ایکٹ کی دفعہ 8کے تحت اگر کم عمر بچہ کو لرننگ لائسنس جاری کیاگیا ہے اور لرننگ لائسنس کے تحت دی گئی اجازت کے مطابق اس نے گاڑی چلائی تو مالک پر اس حادثہ کی ذمہ داری نہیں ہوگی۔

  • Share this:
Explained:کارحادثہ کے متاثرکے لیے سنہری گھنٹہGolden Hourکیاہے اورکیسے مل سکتاہے معاوضہ؟
سڑک حادثہ میں زخمی کی موت پر کیا ہوگا؟

سوال : زخمی کو اسپتال لے جانے کی ذمہ داری کس کی ہے؟

جواب : ڈرائیور یا گاڑی کا مالک جو حادثہ کا ذمہ دار ہے کو زخمی شخص کیلئے فوری طبی امداد حاصل کرنے کے لئے تمام معقول اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔


سوال : حادثہ کے فوری بعد کا ایک گھنٹہ (Golden Hour)کیا ہوتا ہے؟

جواب : Golden Hour کامطلب جسمانی زخم آنے کے بعد کا ایک گھنٹہ کاجس دوران بروقت طبی امداد کی فراہمی سے موت سے بچایاجاسکتا ہے۔


سوال : حادثہ کے فوری بعد کا ایک گھنٹہ (Golden Hour) کے دوران نقدی کے بغیر علاج کیا ہے؟
جواب :موٹر وہیکل (ترمیمی)ایکٹ 2019کی دفعہ  162(1)کے تحت حادثہ کے فوری بعد کے ا یک گھنٹہ کے دوران سڑک حادثہ میں زخمی شخص کو بغیر نقدی کے علاج کی سہولت فراہم کرتی ہے۔

سوال :حادثہ کے وقت آپ کا انشورنس نہ ہوتو آپ کیاکریں؟
جواب :ایکٹ کے مطابق کارکا مالک/ڈرائیور معاوضہ کے ساتھ کلیم کی ادائیگی کا مستوجب ہوگا۔انشورنس ہونے سے زخمی کوکوئی فرق نہیں پڑے گا۔کار کے مالک کو چاہئے کہ وہ انشورنس پالیسی میں لازمی کور کو شامل کریں۔
ایسی صورت میں حادثہ کا ذمہ دار کون ہوگا اگر گاڑی دوست یا مالک کے ڈرائیور کی ہو؟
جو شخص گاڑی چلارہا ہوگا اس کو تعزیرات ہند کی دفعات 279,337,338& 304A کے تحت سزاہوگی اور موٹر وہیکل ایکٹ 1988کے تحت جرمانہ کار کے مالک کو اداکرنا ہوگا۔

سوال : ایسی صورت میں کیا ہوگا جس میں آپ نے اپنی گاڑی کسی کو دی ہوگی جس کے پاس مستند لائسنس نہیں ہے؟
جواب :ایسی صورت میں گاڑی کے مالک کے ساتھ ساتھ ڈرائیور بھی نقصان کے علاوہ معاوضہ کی ادائیگی کے لئے قانون کے مطابق ذمہ دار ہوگا۔

حادثہ کے وقت آپ کا انشورنس نہ ہوتو آپ کیاکریں؟
حادثہ کے وقت آپ کا انشورنس نہ ہوتو آپ کیاکریں؟


سوال : کم عمر بچہ سے حادثہ ہونے کی صورت میں کیا ہوگا؟
جواب :گاڑی کا مالک یا کم عمر بچہ کا نگران،کم عمربچہ کی جانب سے حادثہ کئے جانے کی صورت میں خاطی قرارپائے گا تاہم ایسے معاملات جس میں مالک یا پھر نگران یہ ثابت کرے کہ حادثہ کو اس کے علم میں نہیں لایاگیایا اس نے ایسے جرم کو روکنے کیلئے اپنے طورپر کافی کوشش کی تومالک یا پھر نگران پر کوئی ذمہ داری نہیں ہوگی۔ایکٹ کی دفعہ 8کے تحت اگر کم عمر بچہ کو لرننگ لائسنس جاری کیاگیا ہے اور لرننگ لائسنس کے تحت دی گئی اجازت کے مطابق اس نے گاڑی چلائی تو مالک پر اس حادثہ کی ذمہ داری نہیں ہوگی۔اگر اس حادثہ کی ذمہ داری کم عمر پر عائد کی جاتی ہے تو اس کو ایکٹ کے مطابق سزا ہوگی اور تحویل میں لینے کی سزا جوونائیل ایکٹ 2020میں کی گئی ترمیم کے مطابق دی جائے گی۔

سوال : اگر میں زخمی ہونے کا کلیم دائر کرناچاہوں تو کیا مجھے عدالت جانا ہوگا؟
جواب :اگر دوسرے ڈرائیور کی انشورنس کمپنی آ پ کے معاملہ کو قابل مان کر آپ کے اٹارنی کے مطابق رقمی ادائیگی کیلئے رضامند ہوتی ہے اور آپ اس رقم پر رضامند ہیں تو آپ کا کیس عدالت میں نہیں جائے گاتاہم اگر کلیم کی معاملت نہیں کی گئی تو مناسب عدالت میں کلیم کا دعوی کیا جاسکتا ہے۔

سوال :حادثات کے مہلوکینکے رشتہ داروں کیلئے معاوضہ
جواب :اگردعوی کرنے والے کی موت ہوجاتی ہے تو اس کے اراکین خاندان معاوضہ کا دعوی موٹروہیکل (ترمیمی)ایکٹ 2019کی دفعہ140,163Aکے تحت کرسکتے ہیں۔دفعہ140کے مطابق مقررہ معاوضہ کا دعوی کیاجاسکتا ہے جبکہ دفعہ163Aکے تحت معاوضہ کا تعین اس ایکٹ کے فارمولہ کے تحت کیا جاسکتا ہے تاہم 5,00,000/ روپئے سے زائد کے معاوضہ کا دعوی دفعہ صرف163Aکے تحت کیا جاسکتا ہے۔

ڈرائیور یا گاڑی کا مالک جو حادثہ کا ذمہ دار ہے کو زخمی شخص کیلئے فوری طبی امداد حاصل کرنے کے لئے تمام معقول اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔
ڈرائیور یا گاڑی کا مالک جو حادثہ کا ذمہ دار ہے کو زخمی شخص کیلئے فوری طبی امداد حاصل کرنے کے لئے تمام معقول اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔


سوال :اگر میں سڑک حادثہ کے وقت سیٹ بیلٹ نہ لگایاہوتو؟کیا میں اس کے باوجود بھی نقصان  کی پابجائی حاصل کرسکتا ہوں؟
جواب :یہ اس ریاست پر منحصر ہے جہاں یہ حادثہ ہوا ہے۔بعض ریاستوں میں سیٹ بیلٹ نہ لگانے سے حق کی تردید ہوتی ہے یا پھر لاپرواہی پر معاوضہ میں کمی ہوسکتی ہے جبکہ بعض دیگر ریاستوں میں سیٹ بیلٹ نہ لگانے پر معاوضہ کی رقم میں کمی نہیں ہوتی۔

سوال : سڑک حادثہ میں زخمی کی موت پر کیا ہوگا؟
جواب :گاڑی کے ڈرائیور کو تعزیزات ہند کی دفعہ 304 A،1860کے تحت سزا ہوسکتی ہے۔قانونی چارہ جوئی میں یہ ثابت ہونا چاہئے کہ حادثہ/موت،لاپرواہی سے ڈرائیونگ کے نتیجہ میں ہوئی ہے۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Mar 24, 2021 09:02 PM IST