ہوم » نیوز » Explained

Explained: سی سی ایم بی کی جانب سے نہایت کم وقت میں کووڈ-19 کے نتائج کو معلوم کرنے کی نئی پہل، صرف تین گھنٹوں میں آسکتا ہے کوونا ٹیسٹ کا نتیجہ

سینٹر فار سیلولر اینڈ مالیکیولر بایولوجی (سی سی ایم بی) کے ذریعہ تیار کردہ اور انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ (Indian Council of Medical Research) کے ذریعہ منظور شدہ ڈرائی سواب پر مبنی براہ راست آر ٹی پی سی آر (dry swab RT-PCR) طریقہ کار کو اب پورے ملک میں ٹیسٹنگ لیبارٹیز میں اپنایا جا سکتا ہے۔

  • Share this:
Explained: سی سی ایم بی کی جانب سے نہایت کم وقت میں کووڈ-19 کے نتائج کو معلوم کرنے کی نئی پہل، صرف تین گھنٹوں میں آسکتا ہے کوونا ٹیسٹ کا نتیجہ
سی سی ایم بی کی جانب سے نہایت کم وقت میں کووڈ-19 کے نتائج کو معلوم کرنے کی نئی پہل، صرف تین گھنٹوں میں آسکتا ہے کوونا ٹیسٹ کا نتیجہ

حیدرآباد میں واقع معروف سائنسی ادارہ و لیباریٹری سینٹر فار سیلولر اینڈ مالیکیولر بایولوجی (CSIR-Centre for Cellular and Molecular Biology) کے ذریعے تیار کردہ ڈرائی سواب ڈائریکٹ آر ٹی - پی سی آر (dry swab RT-PCR test) کے آسان اور تیز رفتار طریقہ کو اب آئی سی ایم آر کے ذریعے ان کی آزادانہ جواز کی بنیاد پر منظوری دے دی گئی ہے۔


سینٹر فار سیلولر اینڈ مالیکیولر بایولوجی (سی سی ایم بی) کے ذریعہ تیار کردہ اور انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ (Indian Council of Medical Research) کے ذریعہ منظور شدہ ڈرائی سواب پر مبنی براہ راست آر ٹی پی سی آر طریقہ کار کو اب پورے ملک میں ٹیسٹنگ لیبز میں اپنایا جا سکتا ہے۔


آر ٹی پی سی آر کے روایتی اور موجودہ طریقہ کار سے کہیں زیادہ یہ طریقہ کار انجام دینے میں آسان اور کارآمد ہے۔ جسے ٹیسٹنگ لیبز میں موجودہ انفراسٹرکچر کا استعمال کرتے ہوئے ٹیسٹ کو دو سے تین گنا بڑھا سکتا ہے۔ یعنی اس نئے طریقہ کار کے تحت ٹیسٹنگ کے لیے بہت ہی کم وقت درکار ہے۔


اخبار دی ہندو میں شائع ہوئی ایک رپورٹ کے مطابق جمعہ کے روز سی ایس آئی آر کے سنٹر فار سیلولر اینڈ مالیکیولر بائیولوجی (سی سی ایم بی) نے کووڈ۔ 19 کے ڈرائی سواب آر ٹی۔پی سی آر ٹیسٹنگ یا "DArRT-PCR"کے لیے طبی عملہ کو تربیت فراہم کرنے کی پیش کش کی ہے۔

سی سی ایم بی کے  سابق ڈائریکٹر اور ملک کے معروف سائنسدان ڈاکٹر راکیش مشرا نے بتایا کہ ڈرائی سواب ٹیسٹ انتہائی مفید ہے۔ خاص طور پر موجودہ کورونا کی دوسری لہر کے دوران ٹیسٹوں کی تعداد میں اضافہ کی ضرورت ہے۔ اسی لیے اس طریقہ کار کو اپنایا جا رہا ہے۔ اس طریقہ کار پر گذشتہ برس ہی سے تحقیقات چل رہی تھی۔ اس کے بعد سے اب پچھلے کچھ مہینوں میں مختلف لیبز کے ساتھ ساتھ ہسپتالوں میں بڑے پیمانے پر ٹیسٹنگ کی گئی ہے اور اب ڈرائی سواب آر ٹی۔پی سی آر ٹیسٹ کو باقاعدہ منظوری بھی مل چکی ہے۔

اس طریقہ کار کے لیے انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ (آئی سی ایم آر) کی ایک ایڈوائزری کے ذریعہ مزید توثیق بھی حاصل ہوئی ہے، جس کے بعد مارکیٹ میں اس طریقے کو جلد سے جلد استعمال کرنے کی راہ ہموار ہو گئی۔ انھوں نے کہا ہے کہ اس کے لئے کوئی خاص یا مشکل تکنیک نہیں ہے، لیکن ہم ہیلتھ کیئر ورکرز کو اس طریقہ کار سے واقف کرانے میں مدد کے لئے تیار ہیں۔ جو بہت ہی آسان، محفوظ اور تیز تر نتائج کا حامل ہے۔

ڈاکٹر راکیش مشرا نے بیاتا ہے کہ ’’RT-PCR ٹیسٹوں کے روایتی طریقہ کار سے زیادہ ڈرائی سواب ٹیسٹ اسکور کرتا ہے۔ یہ مہنگے لیکویڈ وائرل ٹرانسپورٹ میڈیم (liquid Viral Transport Medium) کی ضرورت کے بغیر ہی جانچ کے لیے سہولت فراہم کرتا ہے‘‘۔

سی سی ایم بی کے ریسرچ اسکالرس سائی اودئے کرن اور سی گوکولن کا کہنا ہے کہ ’’روایتی آر ٹی۔ پی سی آر ٹیسٹ کے نتائج اگلے 24 تا 48 گھنٹوں یا اس سے بھی زائد وقت میں سامنے آتے ہیں، جب کہ اس جدید (ڈرائی سوب) طریقہ کار کے تحت نتیجہ صرف تین گھنٹوں کے اندر ہی سامنے آ جاتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ مائع اور آر این اے آئسولیشن کے اقدامات میں سواب جمع کرنے سے دستبردار ہو جاتا ہے‘‘۔

سی ایس آئی آرنیشنل انوائرمنٹ انجینئرنگ ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (NEER) کے سائنسدان اور کووڈ۔19 ٹیسٹنگ سنٹر کے سربراہ کرشنا خیرنار نے بتایا کہ ’’یہ ٹیسٹ صارف دوست ہے کیونکہ یہ نمونوں کی جانچ کے لئے آسانی فراہم کرتا ہے۔ چونکہ اس طریقہ میں کوئی مائع کا استعمال نہیں کیا جاتا، اسی لیے اس میں کوئی اسپلیج (spillage) نہیں ہے۔ ہم پہلے ہی ڈرائی سواب کا استعمال کر کے 50,000 کامیاب ٹیسٹ کر چکے ہیں‘‘۔

ملک کے معروف ادارہ کونسل فار سائنٹیفک اینڈ انڈیسٹریل ریسرچ (CSIR) نے ایک بیان جاری کیا ہے کہ ہندوستان میں کورونا وائرس (کووڈ۔19) کے کیسوں میں لگاتار اضافہ کے تناظر میں تیز تر جانچ وقت کی اہم ضرورت ہے۔ اسی ضمن میں ہم نے ڈرائی سواب پر مبنی براہ راست آر ٹی پی سی آر کی جانچ شروع کی ہے۔ جو کہ ایک گیم چینجر ثابت ہوگی۔ موجودہ دستیاب انفرااسٹرکچر کی مدد سے اس طریقہ کار کے تحت دو سے تین گنا زیادہ ٹیسٹس کیے جا سکتے ہیں۔ ہم آئی سی ایم آر سے منظور شدہ لیبز کے طبی عملہ کو اس طریقہ کار کی تربیت فراہم کر رہے ہیں۔ لیبز ابھی اپنا سلاٹ اس ویب سائٹ http://e-portal.ccmb.res.in/dst_slotbooking/ پر بک کر سکتے ہیں۔

ڈاکٹر مشرا نے کہا کہ دلچسپی رکھنے والے طبی پیشہ ور افراد یا لیبارٹیز مزید تفصیلات کے لئے director@ccmb.res.in یا somdattakarak@ccmb.res.in پر ای میل کر سکتے ہیں۔ یا پھر 04027160789 اور 09773468303 نمبرات پر کال بھی کر سکتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اپولو اسپتالوں اور میرل لائف پرائیوٹ لمیٹڈ کے اشتراک سے تیار کی گئی ایک مکمل کٹ کو ڈرگ کنٹرولر جنرل آف انڈیا (ڈی جی سی آئی) نے منظوری دے دی ہے اور آئندہ دنوں میں اسے مارکیٹ میں جاری کیا جا سکتا ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 07, 2021 08:01 PM IST