ہوم » نیوز » Explained

Explained:کورونامہلوکین کی لاشوں سےمتعلق کیاہےقواعد؟آخری رسومات یاتدفین کوکیسےکیاجائےپورا؟

وزارت صحت و خاندانی بہبود (Ministry of Health and Family Welfare) اور ایمس (AIIMS) نئی دہلی سمیت مختلف صحت کے اداروں نے شہریوں کے لئے رہنما اصول وضع کرتے ہوئے تمام خرافات کو ختم کردیا ہے اور اس ضمن میں واضح ہدایات جاری کی ہیں۔

  • Share this:
Explained:کورونامہلوکین کی لاشوں سےمتعلق کیاہےقواعد؟آخری رسومات یاتدفین کوکیسےکیاجائےپورا؟
علامتی تصویر

سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر بہت سی افواہیں اور غلط اطلاعات پھیلائی جارہی ہیں کہ کس طرح کورونا وائرس (Covid-19) کا نشانہ بننے والے کسی مشتبہ یا تصدیق شدہ فرد کی لاش کی آخری رسومات ادا کی جارہی ہیں۔وزارت صحت و خاندانی بہبود (Ministry of Health and Family Welfare) اور ایمس (AIIMS) نئی دہلی سمیت مختلف صحت کے اداروں نے شہریوں کے لئے رہنما اصول وضع کرتے ہوئے تمام خرافات کو ختم کردیا ہے اور اس ضمن میں واضح ہدایات جاری کی ہیں۔


حکومت نے اتوار کے روز بتایا کہ ملک میں کووڈ۔19 کے کیسوں میں مسلسل اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ گذشتہ 24 گھنٹوں میں 261,500 نئے انفیکشن اور 1,501 اموات ریکارڈ کی گئی ہے۔ یہ لگاتار چوتھا دن ہے جب ملک میں 2 لاکھ سے زیادہ کیسز ریکارڈ ہوئے ہیں۔کووڈ۔19 کے متاثرین کی لاشوں کو سنبھالتے وقت ان رہنما اصولوں اور پروٹوکول پر ایک نظر ڈالیں جن پر عمل کرنے کی ضرورت ہے۔


میت کی آخری رسومات:


میت کو حاصل کرنا کے بعد بنیادی حفظان صحت اور کووڈ پروٹوکول پر عمل کرنا چاہئے۔ لاشوں سے متعلق آخری رسوم کی ادائیگی میں شریک ہونے والے صحت کارکن کو ہاتھوں کی صفائی کرنی چاہئے۔ پی پی ای (پانی سے مزاحم تہبند ، چشمہ، این 95 ماسک، دستانے) کے مناسب استعمال کو یقینی بنانا چاہئے۔ نیز علاج کے لیے لگی ہوئی ٹیوب، سرنج اور کیتھرس کو بھی نکال دیا جانا چاہئے۔

اس کے بعد لاش کو لیک پروف پلاسٹک باڈی بیگ (leak-proof plastic body bag) میں رکھنا چاہئے۔ باڈی بیگ کے بیرونی حصے کو 1 فیصد ہائپوکلورائٹ (hypochlorite) سے پاک کیا جاسکتا ہے۔ باڈی بیگ کو مردہ خانہ کی چادر یا خاندان کی جانب سے فراہم کردہ کپڑٰوں میں لپٹا جائے۔

جسمانی رطوبتوں کے پھیلنے کی صورت میں چہرے کی حفاظت جیسے چہرے کی ڈھال یا چشمیں اور آنکھوں کی حفاظت کے لئے طبی ماسک کا استعمال کرنا چاہئے۔

 علامتی تصویر
علامتی تصویر


میت کے طبی معائنہ سے متعلق پروٹوکال:

پوسٹ مارٹم سے پرہیز کیا جانا چاہئے۔ مردہ خانے میں پوسٹ مارٹم کی صورت میں عملے کی کم سے کم تعداد کو استعمال میں لایا جائے اور یہ عمل ہوادار کمرے میں انجام دیا جانا چاہئے۔ اسکرب سوٹ، ٹاپس، ٹراؤزر، سرجیکل ماسک، پوسٹ مارٹم دستانے اور گھٹنے کے اونچے جوتے کو اس طریقہ کار کے دوران استعمال کرنا چاہئے۔

پوسٹ مارٹم سوٹ نکالنے سے پہلے پی پی ای کو ہٹا دیں اور مناسب ڈسپوزل ضروریات پر عمل کریں۔ پی پی ای کو ہٹانے کے بعد ہمیشہ ہاتھوں کے لیے سینی ٹائزر کا استعمال کریں۔

نقل و حمل
میت کو مناسب باڈی بیڈ پر رکھ کر ہی ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کیا جاسکتا ہے۔

میت کی آخری رسوم میں شریک افراد کو لازمی طور پر مناسب دستانے، ماسک اور حفظان صحت کے ساتھ پی پی ای کو یقینی بنانا ہو۔

تدفین کے بعد گاڑی کو ایک فیصد سوڈیم ہائپوکلورائٹ (sodium hypochlorite) سے پاک کیا جائے۔ایک بار جب کووڈ-19 مریض دم توڑ توڑ دیتا ہے تو طبی پیشہ ور افراد کو آخری رسومات کے لیے میت کو رشتہ داروں اور دوستوں کے حوالے کرنا چاہئے تاکہ یہ یقین دہانی کرائی جائے کہ کووڈ۔19 سے مرنے کے بعد میت کے جسم سے کسی بھی طرح وائرس کا پھیلاو نہیں ہوتا۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 19, 2021 10:11 AM IST