உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Business Idea:آپ کے جھڑے ہوئے بال 20-25 ہزار روپے فی کلو ہوتے ہیں فروخت، دنیا بھر میں اربوں روپیے کا ہے یہ بزنس

    2020 میں ہندوستان سے بیرون ملک بھیجے جانے والے بالوں میں سالانہ 39 فیصد اضافہ ہوا۔

    2020 میں ہندوستان سے بیرون ملک بھیجے جانے والے بالوں میں سالانہ 39 فیصد اضافہ ہوا۔

    ملک کے سب سے امیر مندروں میں سے ایک، تروملا تروپتی مندر (Hair Business in Tirupati)نے اگست 2018 میں مندر میں نیلامی کے لیے 5600 کلو گرام بال رکھے تھے۔ بالوں کو لمبائی کی بنیاد پر تین مختلف کیٹیگریز میں تقسیم کیا گیا تھا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: اسٹارٹ اپ کے ٹی وی ریئلٹی شو شارک ٹینک (Shark Thank) میں کچھ بزنس مین منفرد کاروباری آئیڈیاز لے کر پہنچے تو مینٹرس چونک گئے۔ دراصل ریئلٹی شو میں پہنچنے والے اسٹارٹ اپس نے بتایا کہ وہ مندروں میں عطیہ کیے گئے بالوں کا کاروبار کرتے ہیں۔ جس کی وجہ سے وہ ہر سال کروڑوں روپے کما رہے ہیں۔ اب آپ سوچ رہے ہوں گے کہ کٹے اور گرے بالوں سے کروڑوں کا بزنس کیسے ہو سکتا ہے، تو آئیے آپ کو بتاتے ہیں کہ دنیا بھر میں بالوں سے سالانہ اربوں روپے کا بزنس ہوتا ہے۔

      بالوں کے اس کاروبار میں ہندوستان کا بھی بڑا حصہ ہے۔ ہمارے ملک سے ہر سال تقریباً 400 ملین ڈالر مالیت کے بال سپلائی کیے جاتے ہیں۔ سال 2020 میں ہندوستان سے بیرون ملک بھیجے جانے والے بالوں میں سالانہ 39 فیصد کا اضافہ ہوا۔ سر سے گرنے والے بالوں کی قیمت کروڑوں میں ہے۔ دیہاتوں اور شہروں میں ہاکر گھر گھر جا کر بال جمع کرتے ہیں۔

      کتنے روپیے کلو فروخت ہوتے ہیں بال؟
      ہاکرز بالوں کے معیار کے مطابق قیمت وصول کرتے ہیں۔ کچھ لوگوں کے بال 8 سے 10 ہزار روپے فی کلو خریدے جاتے ہیں جبکہ کئی جگہوں پر 20 سے 25 ہزار روپے فی کلو بھی خریدے جاتے ہیں۔ ہاکر بال خرید کر مقامی تاجروں کو فروخت کرتے ہیں۔ پھر وہ کولکتہ، چنئی اور آندھرا پردیش کے تاجروں کو فروخت کرتے ہیں۔ یہ مقامات غیر ملکی تاجروں کا گڑھ سمجھے جاتے ہیں۔ بالوں کی ایک بڑی تعداد کولکتہ بھی جاتی ہے اور وہاں سے 90 فیصد بال چین بھیجے جاتے ہیں۔ گجرات کے بالوں کی زیادہ مانگ ہے، وہاں کے بال مضبوط اور چمکدار ہوتے ہیں۔

      کیا کیا جاتا ہے بالوں کا؟
      کنگھی سے جھڑے بالوں کو ٹرانسپلانٹ کرنے، وِگ بنانے میں استعمال کیا جاتا ہے۔ جھڑے ہوئے بالوں کو صاف کر کے کیمیکل میں رکھا جاتا ہے۔ پھر سیدھا کر کے استعمال کیا جاتا ہے۔ ٹریٹمنٹ کر کے انہیں چین بھیجا جاتا ہے۔ بالوں کی کوالیٹی کے لئے الگ الگ شرطیں ہیں، جیسے کہ بال کٹے ہوئے نہیں ہونے چاہیے۔ بال کنگھی سے جھڑے ہوئے ہوں اور ان کی لمبائی 8 انچ سے کم نہ ہو۔

      ورجن ہیئرس کی خوب مانگ
      ’بالوں کا معیار‘ اس کاروبار کا سب سے اہم پہلو ہے۔ مارکیٹ میں ’ورجن ہیئر‘ کی مانگ سب سے زیادہ ہے۔ ’کنوارے بال‘ ایسے بالوں کو کہتے ہیں، جن کا کوئی رنگ نہیں ہوتا۔ جن کا کوئی علاج نہیں ہوا۔ ہندوستان سے آنے والے زیادہ تر بال اسی زمرے سے تعلق رکھتے ہیں۔ ایسے بالوں کی سب سے زیادہ مانگ امریکہ، چین، برطانیہ اور یورپ میں ہے۔

      ہندوستان کے مندر پوری کرتے ہیں ڈیمانڈ
      ’کنوارے بالوں‘ کی بڑی تعداد کی مانگ ہندوستان کے مندروں سے جانے والے بالوں سے پوری ہوتی ہے۔ 2014 میں تروپتی مندر سے ہی 220 کروڑ کے بال فروخت ہوئے تھے۔ 2015 میں، تروملا تروپتی دیوستھان نے عقیدت مندوں کے بالوں کی ای نیلامی کے ذریعے 74 کروڑ روپے اکٹھے کیے تھے۔

      ہیئر ایکسپورٹ کا کہنا ہے کہ اچھے معیار کے بال حاصل کرنا مشکل ہو گیا ہے۔ جنوبی ہندوستان کی خواتین اپنے بالوں سے زیادہ چھیڑ چھاڑ نہیں کرتیں۔ اسی لیے برآمد کنندگان مندروں میں پناہ لیتے ہیں۔ تامل ناڈو اور آندھرا پردیش کے مندروں میں بالوں کی سب سے زیادہ برآمد ہوتی ہے۔

      ملک کے سب سے امیر مندروں میں سے ایک، تروملا تروپتی مندر (Hair Business in Tirupati)نے اگست 2018 میں مندر میں نیلامی کے لیے 5600 کلو گرام بال رکھے تھے۔ بالوں کو لمبائی کی بنیاد پر تین مختلف کیٹیگریز میں تقسیم کیا گیا تھا۔ اس کے علاوہ سفید بالوں کی ایک الگ کیٹیگری تھی۔

      بالوں کے زمرے جات
      فرسٹ کلاس میں 31 انچ اور اس سے زیادہ کی لمبائی کے بال - مندر نے 22494 روپے فی کلو کی قیمت پر 8300 کلو گرام فرسٹ کلاس بال ای نیلامی کے لیے رکھے، جس میں سے 1600 کلو بال نیلام ہوئے اور مندر کو 356 کروڑ روپے ملے۔
      سیکنڈ کلاس کے 16-30 انچ لمبے بال - سیکنڈ کلاس کے 37800 کلو گرام بال 13223 روپے فی کلو کے حساب سے نیلامی کے لیے پیش کیے گئے۔ ان میں سے 2000 کلو بال فروخت ہوئے اور مندر کو 3.44 کروڑ روپے ملے۔
      کلاس تھرڈ کے بال 10-15 انچ لمبے - کلاس III کے 800 کلوگرام بال 3014 روپے فی کلو کے حساب سے نیلامی کے لیے رکھے گئے تھے۔ ان کے ذریعے مندر نے 24.11 روپے کمائے۔
      سفید بال - 6700 کلو گرام سفید بال 5462 روپے فی کلو کے حساب سے نیلامی کے لیے پیش کیے گئے۔ ان میں سے 12 کلو بال فروخت ہوئے جس کے ذریعے مندر کو 65.55 لاکھ روپے کی کمائی ہوئی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: