உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بمپر کمائی کا موقع!شیئر بازار میں سرمایہ کرتے ہیں تو 2022 میں یہ چھ E-Vehicles کمپنیاں دے سکتی ہیں زبردست منافع

    الیکٹرک گاڑیوں کی جانب تیزی سے بڑھ رہی ہیں آٹو موبائل کمپنیاں۔

    الیکٹرک گاڑیوں کی جانب تیزی سے بڑھ رہی ہیں آٹو موبائل کمپنیاں۔

    مرکزی وزیر ٹرانسپورٹ نتن گڈکری (MoRTH Nitin Gadkari)بھی کہہ چکے ہیں کہ 2030 تک ملک کے مجموعی گاڑیوں میں ای گاڑیوں کی حصہ داری 30 فیصد کرنے کا ہدف رکھا گیا ہے۔ اگر آپ بھی شیئر بازار میں دلچسپی رکھتے ہیں تو 6 الیکٹرک گاڑی کمپنیوں کے شیئروں (Electric Vehicles Sector Stocks) میں سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔ نئے سال میں یہ کمپنیاں آپ کو بمپر منافع دلواسکتی ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: آٹو سیکٹر کا مستقبل الیکٹرانک گاڑیاں (E-Vehicles) ہیں۔ سال 2021 ای گاڑیوں کے لئے بے حد اہم سال رہا ہے۔ دنیا بھر کی حکومتیں اپنے اپنے ملکوںمیں ای گاڑیوں کو فروغ دینے کے لئے اقدامات کررہی ہیں۔ ملک بھر میں چارجنگ اسٹیشن (EV Charging Stations) لگائے جارہے ہیں۔ مرکزی وزیر ٹرانسپورٹ نتن گڈکری (MoRTH Nitin Gadkari)بھی کہہ چکے ہیں کہ 2030 تک ملک کے مجموعی گاڑیوں میں ای گاڑیوں کی حصہ داری 30 فیصد کرنے کا ہدف رکھا گیا ہے۔ اگر آپ بھی شیئر بازار میں دلچسپی رکھتے ہیں تو 6 الیکٹرک گاڑی کمپنیوں کے شیئروں (Electric Vehicles Sector Stocks) میں سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔ نئے سال میں یہ کمپنیاں آپ کو بمپر منافع دلواسکتی ہیں۔

      ہیرو موٹرکاپ کررہی ہے سرمایہ کاری
      ہیرو موٹر کاپ (Hero MotorCorp) ملک کی سب سے بڑی ٹووہیلر بنانے والی کمپنی ہے۔ کمپنی اس شعبے میں جارحانہ طریقے سے سرمایہ کاری کررہی ہے۔ اس کا مارچ 2022 تک ای کار(e-cars) بازار میں بھی قدم رکھنے کا منصوبہ ہے۔ کمپنی کا ماننا ہے کہ ہندوستان میں ٹو وہیلر ای وی انقلاب کی قیادت کریں گے۔ وہ اپنا پہلی ای گاڑی آندھراپردیش کے چتور میں واقع پلانٹ میں بنانے کی تیاری میں ہے۔ کمپنی نہ صرف 2022 میں ای وی پروڈکشن پر دھیان مرکوز کیے ہوئے ہے بلکہ بنگلورو میں واقع ای وی پروڈکشن ایتھر (Ether) جیسے اسٹارٹ اپ میں بھی زبردست سرمایہ کاری کررہی ہے۔

      اس لئے لگا سکتے ہیں رقم
      ہیرو موٹر کاپ کی کمائی لگاتار بڑھ رہی ہے۔ سال 2021-22 کی پہلی سہ ماہی میں کمپنی کی کمائی 5487.07 کروڑ روپے رہی تھی، جو دوسری سہ ماہی میں بڑھ کر 8453.4 کروڑ روپے پہنچ گئی۔ منافع بھی پہلی سہ ماہی کے 365.44 کروڑ روپے سے بڑھ کر 794.4 کروڑ روپے پہنچ گیا۔ لگاتار بڑھ رہی کمائی اور منافع کو دیکھتے ہوئے اس میں سرمایہ کاری کرنا فائدہ مند ہوسکتا ہے۔

      TVS موٹرس دے رہی ہے وسعت
      ملک کی دوسری سب سے بڑی ٹو وہیلر کمپنی TVS Motor ای گاڑیوں کے سیگمنٹ کو مسلسل وسعت دے رہی ہے۔ کمپنی اپنے پہلے ٹو وہیلر VS iQube کو 2020 میں ہی کچھ شہروں میں لانچ کرچکی ہے۔ مارچ 2022 تک دیگر شہروں میں بھی وسعت دینے کا منصوبہ ہے۔ کمپنی نے 15 دسمبر 2021 کو بی ایم ڈبلیو موٹرراڈ کے ساتھ شراکت کی ہے۔ کمپنی اپنی ای وی تکنیک کے ساتھ رینج کا دائرہ کار بڑھانے پر بھی دھیان دے رہی ہے۔

      کیوں کرسکتے ہیں سرمایہ کاری
      ٹی وی ایس موٹرس کی 2021-22 کی پہلی سہ ماہی میں کمائی 3934.36 کروڑ روپے رہی تھی، جو دوسری سہ ماہی میں بڑھ کر 5619.41 کروڑ روپے پہنچ گئی۔ خالص منافع بھی پہلی سہ ماہی کے 53.13 کروڑ سے بڑھ کر 277.6 کروڑ روپے پہنچ گیا۔

      ٹاٹا موٹرس
      ٹاٹا موٹرس (Tata Motors) ای وی سیگمنٹ میں ملک کی سب سے معروعف کمپنی ہے۔ نومبر 2021 میں اُس کی ای کاروں کی فروخت میں 324 فیصدی کی بڑی تیزی دیکھی گئی۔ کمپنی کے پاس اپنے گاہکوں کے لئے ای گاڑیوں کی بڑی رینج ہے۔ مناسب پہنچ کی وجہ سے ٹاٹا موٹرس کو ای وی سیگمنٹ میں عالمی قیادت کا علمبردار بھی کہا جاتا ہے۔ وہ ای وی کے فروغ اور اپنی مارکیٹ پہنچ بڑھانے کے لئے مستقبل قریب میں تقریباً 15000 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کرنے والی ہے۔

      اس لئے کراسکتی ہے بمپر کمائی
      2021-22 کی پہلی سہ ماہی کے مقابلے دوسرے سہ ماہی میں بھلے ہی ٹاٹا موٹر کی کمائی اور منافع میں گراوٹ آئی ہے۔ لیکن، مستقل کے منصوبوں کو دیکھتے ہوئے کمپنی کے لئے ترقی کا راستہ کھلا ہے۔ ای گاڑیوں کی مانگ بڑھنے کے ساتھ ساتھ نئے سال میں کمپنی کے شیئر ہولڈرس کو بڑا منافع مل سکتا ہے۔

      اولیکٹرا گرین ٹیک
      میگھا انجینئرنگ اینڈ انفرااسٹرکچر لمیٹیڈ کی معاون کمپنی اولیکٹرا گرین ٹیک (Olectra Greentech)چین کی معروف ای گاڑی تیار کرنے والی کمپنی بی وائی ڈی کی مدد سے ای بسیں بنا چکی ہیں۔ حال ہی میں اُسے 3000-3500 کروڑ روپے کے 2000 ای بسوں کا آرڈر ملا ہے۔ ان بسوں کی ڈیلیوری 12-18 مہینوں میں کرنی ہے۔ ای بس سیگمنٹ کی معروف کمپنی اولیکٹرا گرین ٹیک کی موجودہ بازار میں حصہ داری 35-40 فیصدی ہے۔ حکومت کے گرینر موبیلیٹی انیشیٹیو کو فروغ دینے کے لئے کمپنی حیدراباد کے مضافاتی علاقوں میں 10,000 یونٹ صلاحیت کے ساتھ ملک کا سب سے بڑا ای بس پلانٹ بنارہی ہے۔

      اس لئے لگا سکتے ہیں پیسہ
      اولیکٹرا گرین ٹیک کو 2021-22 کی پہلی سہ ماہی میں 41.15 کروڑ کی کمائی ہوئی تھی، جو دوسری سہ ماہی میں بڑھ کر 69.06 کروڑ روپے پہنچ گئی۔ خالص منافع بھی 2.03 کروڑ سے بڑھ کر 3.71 کروڑ روپے پہنچ گیا۔

      مہیندرا اینڈ مہیندرا
      مہیندرا اینڈ مہیندرا (Mahindra and Mahindra) ملک کی اہم کمرشیل اور پیسنجر وہیکل تیار کرتی ہے۔ اس کا زور اپنے گاہکوں کے لئے مضبوط گاڑی بنانے پر رہتا ہے۔ کمپنی پہلے سے ہی ای وی سیکٹر میں کام کررہی ہے اور اب تک کئی ای گاڑیاں پیش کرچکی ہے۔ مہیندرا اینڈ مہیندرا کی اگلے تین سال میں ای وی سیگمنٹ میں زبردست سرمایہ کاری کا پلان ہے۔ اُسے امید ہے کہ 2027 تک مجموعی ای وی فروخت میں اُس کی حصہ داری 20 فیصدی ہوگی۔

      پیسہ لگانا منافع کا سودا
      مہیندرا اینڈ مہیندرا کو 2021-22 کی پہلی سہ ماہی میں 11,762.78 کروڑ روپے کی کمائی ہوئی تھی، جو دوسری سہ ماہی میں بڑھ کر 13,305.37 کروڑ روپے پہنچ گئی ہے۔ خالص منافع بھی 855.61 کروڑ سے بڑھ کر 1431.73 کروڑ روپے پہنچ گیا۔

      اشوک لی لینڈ
      کمرشیل وہیکل سیگمنٹ میں مارکیٹ لیڈر اشوک لی لینڈ (Ashok Leyland) ای وی سیکٹر میں بھاری سرمایہ کاری کا منصوبہ بنا رہی ہے۔ کمپنی کمرشیل وہیکل سیگمنٹ میں ای گاڑیوں کے فروغ پر دھیان دے رہی ہے۔ وہ بھاری بھرکم سرمایہ کاری یو کے کی اپنی معاون کمپنی سوئج موبیلیٹی کے ذریعے کرے گی۔ سوئچ موبیلیٹی نیکسٹ جنریشن ای بس بناتی ہے۔ اُس نے نیٹ زیرو کاربن موبیلیٹی کی جانب سے تیزی سے آگے بڑھنے پر کام شروع کردیا ہے۔

      کرسکتے ہیں سرمایہ کاری
      2021-22 کی پہلی سہ ماہی کے مقابلے دوسری سہ ماہی میں اشوک لی لینڈ کی کمائی 2950.99 کروڑ سے برھ کر 4457.85 کروڑ روپے پہنچ گئی۔ حالانکہ، منافع کے مورچے پر گراوٹ آئی ہے لیکن کمپنی کے مستقبل کے منصوبوں کو دیکھتے ہوئے اُس کے شیئروں میں پیسہ لگایا جاسکتا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: