உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Explained : تجاوزات کرنے والوں نے فوج کی زمین بھی نہیں چھوڑی، ملک کی ان تین ریاستوں میں سب سے زیادہ ہیں تجاوزات

    Explained : تجاوزات کرنے والوں نے فوج کی زمین بھی نہیں چھوڑی، ملک کی ان تین ریاستوں میں سب سے زیادہ ہیں تجاوزات

    Explained : تجاوزات کرنے والوں نے فوج کی زمین بھی نہیں چھوڑی، ملک کی ان تین ریاستوں میں سب سے زیادہ ہیں تجاوزات

    ہم کسی اور کی زمین پر تجاوزات کی خبریں سنتے اور دیکھتے رہتے ہیں۔ عام طور پر تجاوزات کرنے والوں کا بھی یہی تاثر ہوتا ہے کہ ان کی نظریں اپنے سے زیادہ کمزور طبقے کی زمینوں پر ہوتی ہیں ، لیکن آپ کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ ملک میں تجاوزات کرنے والوں کے حوصلے اتنے بلند ہیں کہ انہوں نے فوج کی زمین (Defence Land) کو بھی نہیں چھوڑا ۔ قبضہ بھی 100 یا 200 ایکڑ پر نہیں، بلکہ ملک بھر میں فوج کی 9500 ایکڑ سے زائد اراضی (Encroachment on Defence Land) پر قبضہ کیا گیا ہے ۔

    • Share this:
      امت دیشمکھ

      نئی دہلی: ہم کسی اور کی زمین پر تجاوزات کی خبریں سنتے اور دیکھتے رہتے ہیں۔ عام طور پر تجاوزات کرنے والوں کا بھی یہی تاثر ہوتا ہے کہ ان کی نظریں اپنے سے زیادہ کمزور طبقے کی زمینوں پر ہوتی ہیں ، لیکن آپ کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ ملک میں تجاوزات کرنے والوں کے حوصلے اتنے بلند ہیں کہ انہوں نے فوج کی زمین (Defence Land) کو بھی نہیں چھوڑا ۔ قبضہ بھی 100 یا 200 ایکڑ پر نہیں، بلکہ ملک بھر میں فوج کی 9500 ایکڑ سے زائد اراضی (Encroachment on Defence Land) پر قبضہ کیا گیا ہے ۔ اس کا انکشاف خود حکومت ہند کی وزارت دفاع کے محکمہ دفاع (Defence Department) نے ایک رپورٹ میں کیا ہے ، جس کو حال ہی میں پارلیمنٹ میں ایک سوال کے جواب کے طور پر دیا گیا ۔ رپورٹ میں ملک بھر کی مختلف ریاستوں میں فوج کی اراضی پر ہوئے تجاوزات کی تفصیلات دی گئی ہیں ۔

      ان تین ریاستوں میں ہی پچاس فیصد سے زیادہ تجاوزات

      وزارت دفاع کی رپورٹ میں یوں تو ملک کی 30 ریاستوں میں فوج کی اراضی پر ہوئے تجاوزات کے بارے میں بتایا گیا ہے ، لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ فوج کی موجودہ 9505 ایکڑ اراضی میں سے آدھی سے زیادہ اراضی اتر پردیش، مدھیہ پردیش اور مہاراشٹر میں تجاوزارت کرنے والوں کے قبضے میں ہیں ، جو کہ 4572 ایکڑ ہیں ۔ اتر پردیش میں جہاں فوج کی 1927 ایکڑ اراضی لینڈ مافیا کے قبضے میں ہے تو وہیں مدھیہ پردیش میں یہ 1660 ایکڑ ہے اور مہاراشٹرا میں 985 ایکڑ اراضی پر ابھی بھی قبضہ ہے ۔ اس کے بعد مغربی بنگال وہ ریاست ہے ، جہاں فوج کی 560 ایکڑ اراضی پر غیر قانونی قبضہ کیا گیا ہے ۔

      پانچ سالوں میں صرف اتنی ہی زمین فوج کو مل سکی واپس

      فوج کی زمین پر قبضہ کرنے کے بعد تجاوزات کرنے والے اتنی آسانی سے قبضہ نہیں چھوڑتے ہیں ۔ اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ گزشتہ پانچ سالوں میں صرف ایک ہزار ایکڑ اراضی ہی لینڈ مافیا کے چنگل سے نکل سکی ہے ۔ اس میں بھی دلچسپ بات یہ ہے کہ جن تین ریاستوں میں فوج کی زمین پر سب سے زیادہ تجاوزات ہیں، وہاں پچھلے پانچ سالوں میں سب سے کم زمین ہی قبضے سے واپس لی جاسکی ہیں ۔ ان میں سے اتر پردیش میں 435 ایکڑ اراضی سے غیر قانونی قبضہ کو ہٹایا گیا، جب کہ مدھیہ پردیش میں صرف 43 ایکڑ اور مہاراشٹر میں 36 ایکڑ اراضی کو تجاوزات سے آزاد کیا جا سکا ۔

      فوجی علاقوں سے باہر زمین

      فوج کی زمین پر قبضہ کرنے کی بات پر ذہن میں یہ سوال ضرور اٹھتا ہے کہ آخر کوئی بھی ایسا کیسے کر سکتا ہے ۔ وہاں تو فوج کے جوان سیکورٹی کیلئے رہتے ہوں گے ، مگر ایسا نہیں ہے۔ فوج کی زمین بھی عام اراضی کی طرح خالی رہتی ہیں ۔ یہ زمین عموماً کیمپنگ گراؤنڈ ہوتی ہے، جو فوجی علاقوں کے مضافات میں ہوتی ہے، جس میں نہ تو باڑ لگائی جاتی ہے اور نہ ہی باؤنڈری وال ، اس لئے تجاوزات کرنے والوں کے لئے اس پر قبضہ کرنا آسان ہوتا ہے ۔

      اس طرح ہوتا ہے قبضہ

      ماضی میں فوج کی اراضی پر تجاوزات کے متعدد واقعات منظر عام پر آچکے ہیں جہاں بلڈرز اور مقامی لوگوں کی جانب سے قبضے کی بات کا انکشاف ہوا ہے ۔ کئی معاملات میں فوج کے ملازمین اور افسران کی ملی بھگت سے ایسے قبضے ہونے کے الزامات بھی لگتے رہے ہیں ۔ وہیں کچھ معاملات میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ فوج کی زمین پر قبضہ کرنے کیلئے پہلے فوج کی زمین کے چاروں جانب کی زمین خریدی لی جاتی ہے اور پھر آہستہ آہستہ فوجی کی زمین پر قبضہ کرتے رہتے ہیں ۔

      دیکھئے کس ریاست میں فوج کی کتنی زمین پر قبضے ؟

      اتر پردیش : 1927.0671 ایکڑ

      مدھیہ پردیش :  1660.0222 ایکڑ

      مہاراشٹر : 985.1292 ایکڑ

      مغربی بنگال : 559.555 ایکڑ

      ہریانہ : 504.4691 ایکڑ

      بہار : 477.0717 ایکڑ

      راجستھان : 476.4523 ایکڑ

      آسام  : 460.5397 ایکڑ

      ناگالینڈ : 357.53 ایکڑ

      جموں و کشمیر  : 339.7839 ایکڑ

      جھارکھنڈ : 304.912 ایکڑ

      گجرات : 274.7971 ایکڑ

      پنجاب : 239.4823 ایکڑ

      چھتیس گڑھ : 165.768 ایکڑ

      دہلی : 147.451 ایکڑ

      کرناٹک : 131.7923 ایکڑ

      آندھرا پردیش : 107.4125 ایکڑ

      تمل ناڈو : 92.8186 ایکڑ

      اروناچل پردیش : 87.8141 ایکڑ

      تلنگانہ : 60.4318 ایکڑ

      اتراکھنڈ : 51.7232 ایکڑ

      ہماچل پردیش : 42.7618 ایکڑ

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔

      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: