ہوم » نیوز » Explained

Explained:کورونا سےبچاؤ کےلیے ڈبل ماسک پہننا کیوں ہے ضروری؟تمام سوالات کے جوابات یہاں

ڈبل ماسک پہننے کی ضرورت پر بات کرتے ہوئے ایمس (AIIMS ) کے ڈائریکٹر ڈاکٹر رندیپ گلیریا (Dr Randeep Gulleria ) نے کہا کہ ’اچھا اور معیاری N-95 ماسک پہننا چاہئے، لیکن وہ آسانی سے دستیاب نہیں ہوں گے۔ اگلا بہترین آپشن ڈبل ماسک ہے۔

  • Share this:
Explained:کورونا سےبچاؤ کےلیے ڈبل ماسک پہننا کیوں ہے ضروری؟تمام سوالات کے جوابات یہاں
ڈبل ماسک پہننے کی ضرورت پر بات کرتے ہوئے ایمس (AIIMS ) کے ڈائریکٹر ڈاکٹر رندیپ گلیریا (Dr Randeep Gulleria ) نے کہا کہ ’اچھا اور معیاری N-95 ماسک پہننا چاہئے، لیکن وہ آسانی سے دستیاب نہیں ہوں گے۔ اگلا بہترین آپشن ڈبل ماسک ہے۔

ایک نئی تحقیق سے پتا چلا ہے کہ دو اچھے اور معیاری ماسک پہننے سے سارس- کو-2 (SARS-CoV-2) یعنی کورونا کے نہایت خورد بینی ذرات کو فلٹر کرنے کی تاثیر تقریبا دوگنی ہوجائے گی۔ جس سے یہ ذرات ماسک پہننے والوں کی ناک اور منہ تک نہیں پہنچ سکتے۔ڈبل ماسک پہننے کی ضرورت پر زوردیتے ہوئے ایمس (AIIMS ) کے ڈائریکٹر ڈاکٹر رندیپ گلیریا (Dr Randeep Gulleria ) نے کہا کہ ’اچھا اور معیاری N-95 ماسک پہننا چاہئے، لیکن وہ آسانی سے دستیاب نہیں ہوں گے۔ اگلا بہترین آپشن ڈبل ماسک ہے۔ جس میں اندرونی پرت 3 پلائی سرجیکل (ply surgical mask) ماسک ہے۔ یا پھر کپڑے سے بنا ماسک ہے۔ اگر پہلے دونوں طرح کے ماسک دستیاب نہیں ہیں تو پھر کپڑے سے بنے دو پرتوں والے ماسک کو استعمال کرنا چاہیے۔


گلیریا نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ ’’این -95 ماسک میں فلٹریشن کی 90 فیصد تک افادیت ہے۔ جب کہ جراحی کے ماسک (surgical masks) میں 85 تا 90 کورونا سے محفوظ رکھنے کی صلاحیت ہے۔‘‘۔


انھوں نے کہا کہ ’’سب سے اہم چیز مناسب طریقے سے ماسک پہننا ہیں۔ آپ کو یہ یقینی بنانا ہوگا کہ آپ ماسک کو بہتر طور پر لگائیں۔ ہوا ماسک کے فلٹرنگ میکانزم کے ذریعہ اندر آتی ہے بصورت دیگر آپ انفیکشن سے متاثر ہوسکتے ہیں‘‘۔



ڈبل ماسک کیوں ہے ضروری؟

جما انٹرنل میڈیسن جریدے (journal JAMA Internal Medicine) میں شائع ہونے والی ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ بہتر فلٹریشن کی وجہ ماسک کی تہوں میں اضافہ نہیں ہے، بلکہ ماسک پہننے کے باوجود خالی جگہوں اور کھلے ہوئے حصے کو کو ختم کرنا ہے۔یونیورسٹی آف نارتھ کیرولائنا (University of North Carolina) کی ایسوسی ایٹ پروفیسر ایملی سکبرٹ بینیٹ (Emily Sickbert-Bennett) نے کہا کہ طبی طریقہ کار کے تحت ماسک کو فلٹریشن کی بہت اچھی صلاحیتوں کے لئے ڈیزائن کیا گیا ہے، لیکن وہ ہمارے چہروں پر فٹ ہونے کا طریقہ بہترین نہیں ہے‘‘۔

ڈبل ماسک کس طرح ڈوبل پروٹیکشن فراپم کرتا ہے؟

ماسک سے متعلق حد کی فیٹیڈ فلٹریشن ایفیشنسی (fitted filtration efficiency) کی جانچ کرنے کے لئے ایک ٹیم نے ایک چھوٹا سا نمک ذرہ ایروسولز (small salt particle aerosols) کے ساتھ اسٹین لیس اسٹیل کی نمائش والے چیمبر سے 10 فٹ بھر دیا۔

محققین نے یہ جانچنے کے لئے ماسک کا ایک مجموعہ پہنا اور یہ جانے کی کوشش کی وہ ذرات کو اپنی سانس کی جگہ سے دور رکھنے میں کتنا موثر ہے؟۔ ہر انفرادی ماسک یا پرتوں والا ماسک کا مجموعہ ایکسپوز چیمبر میں نلیاں کے ساتھ جڑی ہوئی دھات کے نمونہ سے لگایا گیا تھا جس میں محقق کے ماسک کے نیچے سانس لینے کی جگہ میں داخل ہونے والے ذرات کی پیمائش کی گئی تھی۔

ایک دوسری ٹیوب کے ذریعہ چیمبر میں ذرات (particles) کی پیمائش کی گئی۔ محققین نے چیمبر کے مقابلے میں ماسک کے نیچے سانس لینے کی جگہ کی پیمائش کرکے ایف ایف ای کا تعین کیا۔


یو این سی اسکول آف میڈیسن (UNC School of Medicine) سے وابستہ محقق فلپ کلپ (Phillip Clapp) نے کہا ’’چیمبر میں محققین نے اپنے پورے دن میں کیے جانے والے مخصوص حرکات کا انکشاف کرنے کے لئے رینج آف موشن سرگرمیوں (range-of-motion activities) کا سلسلہ جاری رکھا تھا۔ جس میں کمر کی حرکت، بات کرنا اور بائیں، دائیں اور اوپر، نیچے دیکھنا شامل ہے۔

مذکورہ تحقیق کے حتمی نتائج کے مطابق ہر فرد کے منفرد چہرے اور ماسک فٹ ہونے کی وجہ سے ماسک کی بنیادی لائن FFE ہر شخص سے مختلف ہوتی ہے۔ محققین کا کہنا ہے کہ عام طور پر فٹ ہونے کے بغیر کسی طریقہ کار کا ماسک کووڈ۔19 کے ذرات کو باہر ہی روکنے میں تقریبا 40 تا 60 فیصد موثر ہے۔ انہوں نے کہا کہ کپڑے کا ماسک 40 فی صد مؤثر ہے۔

چہرے کے ماسک کو دگنا کرنے کے بارے میں ان کی تازہ ترین نتائج سے پتہ چلتا ہے کہ جب سرجیکل ماسک کے اوپر کپڑا کا ماسک لگایا جاتا ہے تو ایف ایف ای میں تقریبا 20 فیصد تک بہتری آسکتی ہے۔

محققین کے مطابق فلٹر کاری کی کارکردگی میں سنگ فٹنگ (snug-fitting)، آستین کی طرح کے ماسک جیسے گائٹر (gaiter) سے اور بھی بہتری آئی ہے۔ کپڑوں کے ماسک خالی جگہوں کو ختم کرکے چہرے کے قریب رکھتے ہوئے ناک اور منہ کو مسلسل ڈھانپ کر فٹ ہونے میں بہتری لاتے ہیں۔


ماسک کہاں پہنتے ہیں:

- جب آپ گھر سے باہر نکلتے ہیں تو ہر وقت ماسک ضروری ہیں۔

  • - ہسپتالوں، بینکوں، بازاروں، پارکوں، دفاتر سمیت عوامی مقامات پر جانے والے افراد کو چہرے کے ماسک پہننا چاہئیں۔

  • - عوامی نقل و حمل کے دوران ماسک لازمی ہیں۔

  • - لوگوں کو ایک نجی گاڑی کے اندر بھی ماسک پہننا چاہئے۔

  • - دوڑتے وقت یا ورزش کرتے وقت ماسک سے پرہیز کرنا چاہئے۔



ماسک پہننے کا صحیح طریقہ:

  • - اپنے ماسک کو صاف ہاتھوں سے چھوئے۔

  • ۔ ماسک لگانے سے پہلے اپنے ہاتھ دھوئے۔

  • - ماسک کو اپنی گردن یا پیمانے پر مت رکھیں۔ اسے اپنی ٹھوڑی کے نیچے محفوظ کریں

  • - اپنی ناک اور منہ پر ماسک پہنیں۔ اسے اپنے چہرے کے اطراف کے مقابلے میں آسانی سے فٹ کرنے کی کوشش کریں۔ اپنی ناک کے درمیان کسی بھی طرح کا خلا باقی نہ رکھیں۔

  • - یہ یقینی بنائیں کہ آپ آسانی سے سانس لیں۔

  • ۔ ماسک کو بار بار ہاتھ نہ لگائیں۔

  • - گھر پہنچنے پر اپنا ماسک نکال دیں۔

  • استعمال کے بعد کپڑا کا ماسک دھویا جانا چاہئے۔

  • - اس بات کو یقینی بنائیں کہ ماسک کو ہٹاتے وقت اسے اپنی آنکھوں، ناک اور منہ سے مس نہ کریں

  • - ماسک نکالنے کے بعد ہاتھوں کو فورا دھو لیں۔


 
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 21, 2021 07:57 AM IST