உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مسلم خواتین پردے کیلئے کونسے لباس کا کرتی ہیں استعمال؟ Hijab، نقاب، برقعہ اور دوپٹہ میں آخرکیا ہے فرق؟

    تصویر ٹوئٹر: @amanialtwam

    تصویر ٹوئٹر: @amanialtwam

    اس بات سے قطع نظر کہ کون صحیح ہے اور کون غلط ہے؟ ایسے میں یہ بات ضروری ہے کہ حجاب، نقاب، برقعہ اور دوپٹہ کے درمیان فرق کو معلوم کیا جائے۔ حالیہ بحث اور اس کے نتیجے میں سوشل میڈیا کے وقتی طوفان کے باوجود لوگ ابھی تک حجاب، نقاب اور برقع میں فرق نہیں جانتے ہیں۔ تو آئیے اس بارے میں جانتے ہیں۔

    • Share this:
      ہندوستان میں حجاب (Hijab) جیسے مذہبی لباس پر بحث تیز ہوتی جا رہی ہے۔ اسکولوں یا کالجوں میں اسلامی ہیڈ اسکارف یا دیگر مذہبی لباس پہننے یا نہ پہننے کے ضمن میں بحث طول پکڑتی جارہی ہے۔ ملک کا بڑا طبقہ حجاب کے حق میں ہے تو وہیں دوسرا طبقہ اس کی مخالفت میں بھی اپنے خیالات کا اظہار کررہا ہے۔ یہ بحث گھروں میں ڈرائننگ رومس سے نکل کر اب سوشل میڈیا کے ہر پلیٹ فارم پر کی جارہی ہے۔

      اس بات سے قطع نظر کہ کون صحیح ہے اور کون غلط ہے؟ ایسے میں یہ بات ضروری ہے کہ حجاب، نقاب، برقعہ اور دوپٹہ کے درمیان فرق کو معلوم کیا جائے۔ حالیہ بحث اور اس کے نتیجے میں سوشل میڈیا کے وقتی طوفان کے باوجود لوگ ابھی تک حجاب، نقاب اور برقع میں فرق نہیں جانتے ہیں۔ تو آئیے اس بارے میں جانتے ہیں

      دنیا بھر میں مسلم خواتین کے درمیان لباس کی مختلف اقسام درج رائج ہیں، جو کہ حسب ذیل ہے:

      حجاب (Hijab):

      حجاب کے ذریعہ سینے اور سر کو ڈھانکا جاتا ہے۔ یہ پردہ کی ایک قسم ہے جسے مسلمان خواتین اپنے قریبی افراد خاندان سے باہر اجنبیوں یا مردوں کی موجودگی میں پہنتی ہیں۔

      نقاب (Niqab):

      بنیادی طور پر نقاب ایک پردہ ہے، جس سے چہرے کو ڈھانپا جاتا ہے، لیکن آنکھ کے حصے کو بے پردہ چھوڑ دیا جاتا ہے۔ عام طور پر یہ ایک ہیڈ سکارف کے ساتھ پہنا جاتا ہے۔ یہ اکثر مسلم خواتین حجاب کے حصے کے طور پر پہنتی ہیں۔

      تصویر: pixabay
      تصویر: pixabay


      دوپٹہ (Dupatta):

      حجاب بعض اوقات دوپٹہ کے انداز میں بھی پہنا جاتا ہے۔ خاص طور پر نوجوان خواتین میں اس کا رائج عام ہے۔ اس میں پوری گردن کو ڈھانپ لیا جاتا ہے۔ دوپٹہ کے انداز کو اس کے چمکدار رنگوں اور خوبصورت کڑھائی سے ممتاز کیا جاتا ہے، جو عام طور پر لباس کے ساتھ ملتا جلتا ہے۔ اس کا استعمال ہندوستان کے ہر شہروں میں عام ہے۔

      تصویر: Medium
      تصویر: Medium


      برقعہ (Burqa):

      عام طور پر اکثر برقع (Burqa) اور نقاب (Niqab) کے درمیان فرق کو محسوس نہیں لیا جاتا اور ان دنوں کو یکساں سمجھا جاتا ہے۔ جب کہ دونوں میں فرق ہے۔ نقاب کو چہرے کو ڈھانپنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے لیکن آنکھوں کو بے پردہ چھوڑ دیتے ہیں، جب کہ برقع پورے جسم کو سر کے اوپر سے لے کر پیر تک ڈھانپنے کے لیے پہنا جاتا ہے۔ جب کہ چہرے کے سامنے ذرہ سی جگہ چھوڑ دی جاتی ہے۔


      چادور (Chador):

      چادور ایک بڑا کپڑا ہوتا ہے، جسے مسلم خواتین بالخصوص ایران میں سر ڈھانپنے، نقاب اور شال کے امتزاج کے طور پر پہنتی ہیں۔ عراق، یمن اور دوسرے ممالک میں بھی چادر کو بیرونی لباس کے طور پر مسلم خواتین عوامی مقامات پر پہنتی ہیں۔

      کرناٹک میں صف آرائی کیوں؟

      کرناٹک میں یہ تنازعہ گزشتہ سال دسمبر میں شروع ہوا تھا۔ جب اڈوپی میں واقع سرکاری ویمنس پری یونیورسٹی کالج میں چھ مسلم لڑکیوں کو مبینہ طور پر حجاب پہن کر کلاس روم میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دی گئی۔ کالج کے پرنسپل رودر گوڑا (Rudra Gowda) نے مبینہ طور پر انہیں کلاس رومز میں حجاب پہننے کی اجازت نہیں دی، انھوں نے کہا کہ انہوں نے کلاس رومز میں یکسانیت کو یقینی بنانے کے لیے ایسا کیا تھا۔ بعد میں اڈوپی اور چکمگلور میں دائیں بازو کے گروپوں نے حجاب پر اعتراض کیا اور احتجاج ریاست بھر میں پھیل گیا۔ جوابی کارروائی میں بہت سے طالب علم زعفرانی اسکارف میں آئے اور دلت طالبات نے حجاب پہننے والی لڑکیوں کی حمایت میں نیلے اسکارف پہن کر احتجاج کیا۔

      کرناٹک میں جاری حجاب معاملہ (Hijab Row) کو لے کر جمعرات کو ہائی کورٹ (Karnataka High Court) کی بڑی بینچ میں سماعت ہوئی ۔ معاملہ کی سماعت کرتے ہوئے ہائی کورٹ نے ہوئے کہا کہ جب تک اس معاملہ میں عدالت کوئی فیصلہ نہیں سناتی ہے ، تب تک طلبہ حجاب پہننے کی ضد نہ کریں ۔ عدالت نے کہا کہ اگلی سماعت تک طلبہ مذہبی ڈریس نہیں پہنیں گے ۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: