உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Exclusive Interview:مس یونیورس 2021 ہرناز سندھو گولڈن ٹیمپل جانا چاہتی ہیں،والدہ کو دیا جیت کا کریڈیٹ

    21 سالوں بعد ہرناز سندھو نے ہندوستان کو دلایا مس یونیورس کا تاج۔ تصویر: انسٹاگرام  @harnaazsandhu_03۔

    21 سالوں بعد ہرناز سندھو نے ہندوستان کو دلایا مس یونیورس کا تاج۔ تصویر: انسٹاگرام @harnaazsandhu_03۔

    میں سب سے پہلے جاکر اپنی ماں کو گلے لگانا چاہتی ہوں اور میں بھانگڑا کرنا چاہتی ہوں، اور میں سب سے پہلے Golden Temple جانا چاہتی ہوں۔ کیونکہ میں نے منت مانگی تھی کہ

    • Share this:
      Miss Universe 2021 Harnaaz Kaur Sandhu Exclusive Interview: اسرائیل کے ایلات میں منعقدہ تقریب میں ہندوستان کی ہرناز کور سندھو (Harnaaz Kaur Sandhu) نے مس یونیورس (Miss Universe 2021) کا تاز اپنے نام کرلیا ، جس سے پورے ملک میں خوشی کا ماحول ہے۔ ہرناز کی اس جیت کے ساتھ ہی ہندوستان کی جھولی میں 21 سالوں بعد یہ خوشی کا موقع آیا ہے۔ اس سے پہلے سال 2000 میں لارا دتہ نے یہ تاج اپنے نام کیا تھا۔ فائنل راونڈ میں ہرناز نے ساوتھ افریقہ کی لالینا سوئین اور پیراگوئے کی نادیہ فیریا کو ہراکر مس یونیورس 2021 کا تاج اپنے نام کیا۔ اسرائیل سے نیوز18 سے بات چیت میں ہرناز کور نے مس یونیورس بننے پر اپنی خوشی ظاہر کی ہے۔

      سوال: کیا میری بات مس یونیورس ہرناز سندھو سے ہورہی ہے؟
      جواب: سلام نمستے۔ بالکل آپ کی بات ہرناز کور سندھو مس یونیورس 2021 سے ہورہی ہے، جو انڈیا سے ہے اور جس نے ہندوستان کی نمائندگی کی ہے۔ اتنے سالوں کے بعد موقع ملا ہے انڈیا کو مس یونیورس کا کراون پہننے کا، اور آپ اُس سے ہی بات کررہے ہیں۔




      سوال: 21 سالوں بعد آپ نے یہ خطاب جیتا ہے ملک کے لئے، اس پل کو کیسے یاد کرتی ہیں جب انڈیا کا نام لیا گیا؟
      جواب: پچھلے سال ایڈلن نے بہت اچھا ری پرزنٹیشن دیا تھا ہندوستان کو، وہ ٹاپ 5 تک آئی تھیں۔ اور وہ بہت سالوں کے بعد ہوا تھا، اس بار مجھ پر پریشر بہت تھا۔ مجھے سب یہی کہہ رہے تھے کہ مجھے ٹاپ فائیو سے بھی آگے جانا ہے، اور ہندوستان کو اور اچھا ری پریزنٹیشن دینا ہے۔ جب ٹاپ ٹو میں میرے نام کا اعلان ہوا، میں ہاتھ پکڑ کر کھڑی تھی۔ میرے دل میں بس یہی چل رہا تھا کہ میں اتنے قریب آچکی ہوں، اب بس کراون مل جائے۔

      امید ہے کہ ہندوستان کی میں نے بہت اچھے سے نمائندگی کی ہے، کیونکہ میں ہندوستان کو وعدہ کرکے آئی ہوں کہ میں آپ کا فخر بڑھاوں گی، تو میں وہ فخر بننا چاہتی ہوں، وہ تاج پہن کر۔ میں بھگوان کو اُس وقت یاد کررہی تھی، جب انہوں نے انڈیا کا نام لیا تو اس ویڈیو میں صاف نظر آتا ہے کہ میری آنکھوں سے آنسو تھم نہیں رہے تھے ۔میرے دل میں وہی بات چہی تھی کہ 21 سالوں بعد، وہ موقع آخرکار آگیا ہے۔



       




      View this post on Instagram





       

      A post shared by Miss Universe (@missuniverse)






      سوال:
      اس جیت کا کریڈیٹ آپ کس کو دیتی ہیں؟
      جواب: نجی طور پر، میری ماں میرے ساتھ ہمیشہ رہی ہیں، وہ میری سب سے اچھی دوست ہیں۔ میں ان سب لوگوں کو کریڈٹ دینا چاہتی ہوں جنہوں نے مجھے اتنا پیار دیا ہے۔ ان سب لوگوں کو جنہوں نے مجھے آن لائن میسیج کرکے، کمنٹ کرکے، میرے لئے دعائیں کی ہیں اور مجھے ہمیشہ پراعتماد محسوس کرایا ہے۔ یہ تاج اُن سب کے لئے وقف ہے۔

      سوال: آپ کا تعلق پنجاب سے ہے، آپ کے دوست، آپ کی فیملی آپ کو کس طرح مباکباد دے رہے ہیں؟
      جواب: میں بہت زیادہ پرتجسس ہوں گھر جانے کے لئے، میں اپنی والدہ کو تب سے نہیں ملی ہوں جب سے میں جیتی ہوں Ms Diva انڈیا کا خطاب۔ میں سب سے پہلے جاکر اپنی ماں کو گلے لگانا چاہتی ہوں اور میں بھانگڑا کرنا چاہتی ہوں، اور میں سب سے پہلے Golden Temple جانا چاہتی ہوں۔ کیونکہ میں نے منت مانگی تھی کہ میں یہ تاج لے کر آوں گی ، تو میں یہ تاج گولڈن ٹیمپل لے کر جاون گی اور ماتھا ٹیکوں گی۔

      سوال: پنجاب سے آپ کا سفر شروع ہوا تھا، وہ سفر کتنا مشکل تھا، کیا کبھی آپ نے سوچا تھا کہ آپ مس یونیورس بن پائیں گی؟
      جواب: پنجاب کی جو تاریخ ہے وہ بہت ہی مشکل رہی ہے، استادوں کی زمین ہے، وہ جو طاقت ہوتی ہے ناں، کہ آپ کچھ بھی حاصل کرسکتے ہیں کچھ بھی، وہ شروع سے ہی رہی ہے، اور ہندوستانی ہے ہی دل کے اتنے سچے اور پراعتماد کہ کوئی کچھ بھی ہمارا نہیں بگاڑ سکتا۔ وہ طاقت ہمیشہ مجھے میرے ملک سے ملی ہے۔ جب بھی میں نے ملک کا ترنگا دیکھا تو مجھے پتہ تھا کہ میں کرکے دکھاوں گی۔ کیونکہ میرے ساتھ پورا ہندوستان ہے۔ تھینک یو۔



      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: