உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    EXPLAINED : امریکہ میں تعلیم حاصل کرنا چاہتے ہیں تو ضرور جان لیں یہ باتیں ، ملے گی کافی مدد

    کووِڈ۔19 کے نئے ضوابط کے پیش نظر طلبہ کو چاہئے کہ وہ امریکہ جانے کے لیے طیارے میں سوار ہونے سے پیشتر اس سلسلے میں تازہ ترین معلومات سے آگاہ رہیں۔ تصویر کریڈٹ : اسپین میگزین ۔

    کووِڈ۔19 کے نئے ضوابط کے پیش نظر طلبہ کو چاہئے کہ وہ امریکہ جانے کے لیے طیارے میں سوار ہونے سے پیشتر اس سلسلے میں تازہ ترین معلومات سے آگاہ رہیں۔ تصویر کریڈٹ : اسپین میگزین ۔

     امریکہ کےاپنے سفر کی منصوبہ بندی کرتے ہوئے اپنی منتخب یونیورسٹی میں ایجوکیشن یو ایس اے مشاورتی مرکز اور بین الاقوامی طالب علم مشیر  سے مدد لیں ۔

    • Share this:
      نتاشا مِلاس

       اعلیٰ تعلیم کی بات کریں تو  امریکہ کی حیثیت ہندوستان سمیت دنیا بھر کے طلبہ کے لیے ایک مطلوب منزل  کی ہے ۔ انٹرنیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ایجوکیشن کی طرف سے شائع ہونے والی اوپن ڈورز رپورٹ کے مطابق 2020 ۔ 2019 کے تعلیمی سال میں قریب قریب 2 لاکھ بھارتی باشندوں نے امریکہ میں تعلیم حاصل کی۔

      بین الاقوامی طلبہ کو درخواست  دینے کے عمل میں مدد کے لیے  امریکی محکمہ خارجہ نے ایجوکیشن یو ایس اے  قائم کیا ہے۔ یہ  بین الاقوامی مشاورتی مراکز کا ایک نیٹ ورک ہے جو امریکہ میں تسلیم شدہ پوسٹ سیکنڈری اداروں میں تعلیم  کے مواقع کے بارے میں درست ، جامع اور تازہ ترین معلومات فراہم کر کے دنیا بھر کے طلبہ میں  امریکی اعلیٰ تعلیم کو فروغ دیتا ہے ۔

      ایجوکیشن یو ایس اے نے  کسی امریکی یونیورسٹی میں تعلیم حاصل کرنے کے لیے طلبہ کی ان کے سفر میں مدد کے لیے آ سان پانچ  مرحلوں پر مشتمل ایک لائحہ عمل تیار کیا ہے۔ اوّل اپنے متبادل کی تلاش کریں، دوئم اپنی تعلیم کے خرچ کا بندوبست کریں ، سوئم اپنی درخواست مکمل کریں، چہارم اپنے طالب علم ویزا کے لیے درخواست دیں اور پنجم اپنی روانگی کی تیاری کریں ۔ اگر آپ نے پہلے چار مراحل کامیابی کے ساتھ مکمل کر لیے ہیں تو آپ اپنے دورہ امریکہ سے چند ماہ کے فاصلے پر ہیں۔

      اس مرحلے پر طلبہ سب سے پہلے جو کام کر سکتے ہیں ان میں سے ایک یہ ہے کہ وہ جس یونیورسٹی یا کالج میں تعلیم حاصل کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں اس کی ویب سائٹ سے اچھی طرح واقف ہولیں۔ یہاں طلبہ کو رہائش ، مقامی موسم ، کیمپس ، نقل و حمل اور بہت سی چیزوں کے بارے میں معلومات ملیں گی۔

      روانگی سے قبل  قریبی  ایجوکیشن یو ایس اے سینٹر کے اورینٹیشن پروگرام میں شرکت کرنا بہت ضروری ہے ، جہاںمختلف موضوعات پر مشورے فراہم کیے جاتے ہیں ۔مثال کے طور پر ،  کون سی دستاویزات آپ ساتھ لے کر جائیں  گے، کس طرح ایک مختلف ثقافت سے خود کو ہم آہنگ کریں گے ، امریکی اداروں  میں تعلیمی توقعات کیا ہیں اور اپنے سفر کے لیے  سامان کس طرح پیک کرنا ہے۔روانگی سے قبل  ایجوکیشن یو ایس اے کے اورنٹیشن پروگرام میں  طلبہ مشیروں اور سابق طلبہ سے مل سکتے ہیں اور اپنے ہونے والے سفر کی بہتر تیاری کے لیے سوالات پوچھ سکتے ہیں۔ رواں سال ،  پورے بھارت  میں ایجوکیشن یو ایس اے  سینٹرز نے پری پیتھن سیریز کے عنوان سے مجازی  تیاری کے سیشنز کیے تاکہ طلبہ کو روانگی سے قبل کی رسمی کارروائیوں  ،  داخلے کے طریقہ کار ،  وہاں قیام کرنے کے مشوروں اور بین الاقوامی طلبہ کو اپنے تعلیمی تجربے کو زیادہ سے زیادہ بڑھانے کے طریقوں کے بارے میں جاننے میں مدد مل سکے۔ پوری ویبنار سیریز ایجوکیشن یو ایس اے انڈیا فیس بک پیج پر دیکھنے کے لیے دستیاب ہے۔ معلومات کے لیے ایک اور عظیم ذریعہ آپ کی منتخب یونیورسٹی میں بین الاقوامی طالب علم مشیر بھی ہے۔

      ایجوکیشن یو ایس اے نے کسی امریکی یونیورسٹی میں تعلیم حاصل کرنے کے لیے طلبہ کی ان کے سفر میں مدد کے لیے آ سان پانچ مرحلوں پر مشتمل ایک لائحہ عمل تیار کیا ہے۔ تصویر از انسائڈ کری ایٹو ہاؤس/آئی اسٹاک / گیٹی امیجیز / اسپین میگزین
      ایجوکیشن یو ایس اے نے کسی امریکی یونیورسٹی میں تعلیم حاصل کرنے کے لیے طلبہ کی ان کے سفر میں مدد کے لیے آ سان پانچ مرحلوں پر مشتمل ایک لائحہ عمل تیار کیا ہے۔ تصویر از انسائڈ کری ایٹو ہاؤس/آئی اسٹاک / گیٹی امیجیز / اسپین میگزین


      امریکہ جانے والے طلبہ کے پاس پاسپورٹ اور ویزا کے علاوہ اپنے تعلیمی ادارے سے اہلیتی دستاویزات (آئی 20 یا ڈی ایس 2019 ) بھی تیار ہونے چاہئیں۔ مزید برآں ، ہر طالب علم کو امریکہ پہنچنے پر آئی 94 دستاویز بھی حاصل کرنا چاہئے۔ امریکہ پہنچنے کے بعد  طلبہ کو فوری طور پر اپنی یونیورسٹی یا کالج میں بین الاقوامی خدمات کے دفتر میں رپورٹ کرنے کی ضرورت ہے۔

      طلبہ کو سفر کے لیے صحت  ضروریات کے بارے میں بھی سوچنا چاہیے۔ کووِڈ۔19 کے نئے ضوابط کے پیش نظر طلبہ کو چاہئے کہ وہ امریکہ جانے کے لیے طیارے میں سوار ہونے سے پیشتر  اس سلسلے میں تازہ ترین معلومات سے آگاہ رہیں۔ طلبہ کے لیے یہ بھی لازم ہے کہ وہ ٹیکہ کاری کے ذاتی ریکارڈ کے ساتھ اپنے تمام طبی ریکارڈ بھی ساتھ لائیں۔ مزید برآں ، ہر طالب علم کو اپنی تعلیم کے دوران صحت بیمہ  کرانا ضروری ہے۔ لہذا ، طلبہ کو اپنی  روانگی سے قبل اپنے حفظان صحت کے متبادل کے بارے میں بھی پوچھنا چاہئے۔

      ایک بار جب آپ اپنے امیگریشن اور حفظان صحت کے انتظامات  پر دھیان دیں لیں  تو پھر  آپ کو رہائش کے بارے میں سوچنا ہوگا۔ مثالی طریقہ تو یہی ہے کہ  آپ آمد سے پہلے اپنے رہنے کا انتظام کرلیں، خاص طور پر اگر آپ کیمپس میں رہنا چاہتے ہیں۔ اور اگر  کیمپس سے باہر رہنا چاہتے ہیں  تو آپ کے پاس متبادل ہے کہ پہنچنے سے  پہلے بندوبست کر لیں یا پھر پہنچنے کے بعد کریں۔ اپنے ادارے کے دفتر اقامت  سے رابطہ رکھنا ضروری ہے جو آپ کو رہائش یا روم میٹ تلاش کرنے کے بارے میں ضروری معلومات فراہم کرے گا۔

      ایک بار جب آپ  نئی جگہ سے ہم آہنگ ہو جائیں  تو اپنی یونیورسٹی میں اورینٹیشن سیشن کے لیے اندراج کریں۔ ہر یونیورسٹی یا کالج میں نئے طلبہ کے لیے اورنٹیشن  سیشن ہوتے ہیں۔ نئے طلبہ اپنے اداروں میں طلبہ کلب اور تنظیموں کی جانکاری بھی لے سکتے ہیں۔  بہت سی یونیورسٹیوں میں بین الاقوامی طلبہ تنظیمیں یا اس سے بھی زیادہ خاص طور پربھارتی  طلبہ تنظیمیں ہیں۔ یہ بھارت یا دیگر ممالک کے ساتھی طلبہ سے ملاقات کے لیے بہترین جگہیں ہیں۔ امریکی یونیورسٹیاں بھارتی طلبہ تنظیموں کی میزبانی کرتی ہیں  جس میں  آسٹِن  میں واقع  یونیورسٹی آف ٹیکساس میں انڈین اسٹوڈینٹس ایسوسی ایشن ، یونیورسٹی آف ساؤتھ فلوریڈا میں اسٹوڈینٹس  آف انڈیا ایسوسی ایشن یا کولمبیا یونیورسٹی میں ہندو اسٹوڈینٹس آرگنائزیشن شامل ہیں۔  ان میں سے تمام  یونیورسٹیاں امریکی ثقافت سے ہم آہنگ ہوتے ہوئے  طلبہ کو اپنی بھارتی جڑوں سے جڑنے ، معاشرتی  ہونے اور رابطے میں رہنے کے مواقع پیش کرتی ہیں۔

      ایک بار جب آپ نئی جگہ سے ہم آہنگ ہو جائیں تو اپنی یونیورسٹی میں اورینٹیشن سیشن کے لیے اندراج کریں۔ (تصویر: shutterstock)
      ایک بار جب آپ نئی جگہ سے ہم آہنگ ہو جائیں تو اپنی یونیورسٹی میں اورینٹیشن سیشن کے لیے اندراج کریں۔ (تصویر: shutterstock)


      اگلی چیز، جغرافیائی علاقے ،اپنے کالج اور مقامی موسم کے بارے میں سوچنا ہے ۔  اس سے آپ کو سفر کے لیے پیکنگ میں سہولت ہوگی۔ کیلیفورنیا کے سفر کے لیے مڈویسٹ کے مقابلے بہت مختلف پوشاک کی ضرورت ہوگی۔ مقامی نقل و حمل کے بارے میں جانیں ، خاص طور پر اگر آپ کیمپس سے باہر رہنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ زیادہ سے زیادہ ، جتنا ہو سکے تیاری کریں ، ایجوکیشن یو ایس اے اور اپنے ادارے سے دستیاب بے شمار  مدد کے امکانات تلاش کریں اور امریکہ میں ایک پرجوش  تعلیمی مہم جوئی کے لیے تیار ہو جائیں۔

      بشکریہ اسپَین میگزین، امریکی سفارت خانہ، نئی دہلی
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: