ہوم » نیوز » Explained

Explained: پاکستان میں کووڈ۔19 کے کیسوں میں آخر کیوں ہورہا ہے لگاتار اضافہ؟ ہلاکتوں کی تعداد اور ویکسینیشن، جانئے مکمل تفصیلات

کووڈ 19 کے نئے کیسوں میں اضافے کی اطلاع پاکستان کے تمام صوبوں میں پائی جارہی ہے۔ سب سے زیادہ کووڈ ۔19 کیس صوبہ پنجاب میں رپورٹ ہوئے جن میں 3,562 انفیکشن شامل ہیں۔

  • Share this:
Explained: پاکستان میں کووڈ۔19 کے کیسوں میں آخر کیوں ہورہا ہے لگاتار اضافہ؟ ہلاکتوں کی تعداد اور ویکسینیشن، جانئے مکمل تفصیلات
علامتی تصویر

جنوبی ایشیا میں کورونا وائرس (Covid-19) میں اضافے کے دوران پاکستان میں رواں سال نئے کیسوں میں پوری شدت کے ساتھ اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ یہاں ایک دن میں سب سے زیادہ ایک روزہ اضافہ یعنی 6,127 کیسوں کی اطلاع ملی ہے۔پاکستان میں کووڈ۔19 میں سب سے زیادہ اضافہ گزشتہ برس 20 جون کو ریکارڈ کیا گیا تھا جب ملک میں 6,825 انفیکشن اور 153 اموات کی اطلاع ملی تھی۔ اتوار کے روز ملک میں 149 کووڈ سے وابستہ اموات کی اطلاع ملی ہے۔یہ پاکستان میں عالمی وبا کورونا وائرس (کووڈ۔19) کے آغاز کے بعد سے ہلاکتوں کی دوسری سب سے بڑی تعداد ہے۔ جہاں اب تک کی کل ہلاکتوں کی تعداد 16,243 ہوگئی ہے۔


ڈان (Dawn) کی ایک رپورٹ کے مطابق جب ملک میں کورونا وائرس کے خلاف ویکسین کی مہم کا آغاز ہوا تو کل انفیکشن کی تعداد 756,285 سے بھی پار کر گئی ہے اور مثبت شرح کا سلسلہ بدستور 8.5 فیصد تک پہنچ گیا۔



کیا کووڈ۔19 کیسوں میں اضافے کی اطلاع پورے پاکستان میں ہے؟

کووڈ 19 کے نئے کیسوں میں اضافے کی اطلاع پاکستان کے تمام صوبوں میں پائی جارہی ہے۔ سب سے زیادہ کووڈ ۔19 کیس صوبہ پنجاب میں رپورٹ ہوئے جن میں 3,562 انفیکشن شامل ہیں۔ اس طرح یہ پہلی بار ہوا جب وبائی مرض شروع ہونے کے بعد صوبے میں 3000 سے زیادہ انفیکشن کی اطلاع ملی۔خیبر پختونخوا میں اتوار کے روز 958 نئے کورونا وائرس کیس رپورٹ ہوئے جو ہفتے کے روز 1,061 سے کم تھے۔ اتوار کے روز بلوچستان میں 62 مقدمات درج ہوئے اور صوبے میں کیس 20,822 تک پہنچ گئے۔

پاکستان میں ہلاکتوں سنگین مقدمات اور بازیابیوں کے بارے میں کیا خیال ہے؟

پاکستان میں ہلاکتوں کی تعداد 16،000 سے تجاوز کرچکی ہے اور اس وقت یہ تعداد 16,094 ہے۔ ڈان نے رپوٹ کیا کہ اتوار کو لگاتار پانچویں دن بھی ملک میں 100 سے زائد کووڈ اموات کی اطلاع ملی۔پاکستان میں سرگرم کیسز 79,108 ہیں اور حکومت کے کووڈ۔19 پورٹل کے مطابق 4,984 مریضوں کو ملک کے اسپتالوں میں داخل کیا گیا ہے اور ان کی حالت تشویشناک ہے۔ اتوار کے روز ملک میں 4,527 مزید افراد صحت یاب ہوئے ہیں۔ جس کے بعد ان کی کل تعداد 659,483 ہے۔

رائٹرس کے مطابق پاکستان کے شہر کراچی کے ایک نجی اسپتال میں روس کے اسپوتنک وی (Sputnik V) ویکیسن کو کورونا سے متاثرہ مریضوں کو دی گئی ہے۔

پاکستان ویکسی نیشن محاذ پر کہاں کھڑا ہے؟

۔ 220 ملین سے زیادہ کی آبادی والے ملک میں ویکسی نیشن پروگرام کو بڑے چیلنجز کا سامنا کرنا پڑا ہے اور خوراک کی عدم دستیابی کی وجہ سے یہ عمل ابھی اتہائی سست ہے۔ فی الحال 2 فروری سے شروع ہونے والے ملک میں ویکسی نیشن پروگرام میں صرف 1.3 ملین افراد شامل ہیں۔

نئے کیسوں میں اضافے کے دوران پاکستان کی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ وہ 21 اپریل سے 50 تا 59 برس کی عمر کے لوگوں کو شامل کرنے کے لئے اپنے حفاظتی ٹیکوں کے پروگرام میں توسیع کرے گی۔ اب تک حفاظتی ٹیکوں کی مہم 60 برس سے زیادہ عمر کے لوگوں تک ہی محدود تھی۔


ملک میں ویکسی نیشن پروگرام کا زیادہ تر انحصار چین کے کووڈ۔19 ویکسین پر ہے۔ اگرچہ کچھ نجی کمپنیوں نے روس سے محدود تعداد میں اسپوتنک وی کی ویکسینیں درآمد کی ہیں۔پاکستان نے توقع کی تھی کہ کو۔ویکس اقدام کے تحت مارچ میں آسٹر زینیکا ویکسین (AstraZeneca vaccine ) کی تقریبا 17 ملین خوراکیں موصول ہوں گی لیکن وہ ایسا کرنے سے قاصر ہیں۔

اس بارے میں پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی (Shah Mahmood Qureshi) نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’اب 30 جون تک ملک کو 15 ملین آسترا زینیکا کی ویکسین ملیں گی‘‘۔ قریشی نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ’’کو۔ ویکس (COVAX) کے تحت کووڈ ویکسین مئی تک مکمل طور پر دستیاب ہوگی۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 19, 2021 01:29 PM IST