ہوم » نیوز » Explained

Zomato IPO Listing: فوڈڈیلیوری کمپنی 53فیصدپریمیم کے ساتھ ایک لاکھ کروڑ M-Cap کوکیاعبور

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ہندوستان کی آن لائن فوڈ ڈلیوری مارکٹ کو آگے بڑھانے والے عوامل طرز زندگی اور کھانے کی عادات کو تبدیل کررہے ہیں اور ہندوستان میں بڑھتی ہوئی ڈسپوزایبل آمدنی لوگوں کو رعایتی نرخ پر کھانے کے لئے تیار کھانے کی طرف مجبور کرتی ہے۔

  • Share this:
Zomato IPO Listing: فوڈڈیلیوری کمپنی 53فیصدپریمیم کے ساتھ ایک لاکھ کروڑ M-Cap کوکیاعبور
علامتی تصویر۔Shutterstock

ہندوستان کی معروف فوڈ ڈیلیوری کمپنی زوماٹو Zomato نے23جولائی کو دلال اسٹریٹ پر ایک عمدہ آغازکیاہے۔ جب اسٹاک این ایس ای پر 116 روپے پر کھلا تھا، جس کی اس کی آخری پیش کش قیمت 76 روپے تھی جس کا 51.32 فیصد اضافے سے 115 روپے 52.63 فیصد پریمیم تھا۔


چوائس بروکنگ کے ریسرچ تجزیہ کار راج ناتھ یادو Rajnath Yadav نے کہا کہ اعلی ترقی پانے والی کمپنیاں جو اس وقت خسارے میں ہیں کہ ’’ادارہ جاتی سرمایہ کاروں کا ردعمل سخت رہا ہے۔ اس سے پتہ چلتا ہے کہ تجارت کے لئے دستیاب مجموعی طور پر فلوٹ زیادہ جی ایم پی تک محدود ہوسکتا ہے۔ ہم نے اس آئی پی او کے لئے مطلوبہ طویل سرمایہ کاری کے افق کو مدنظر رکھتے ہوئے احتیاط کے ساتھ ایک درجہ بندی جاری کیا۔


علامتی تصویر۔Shutterstock
علامتی تصویر۔Shutterstock


’’خوردہ سرمایہ کاروں کے لیے جو طویل مدتی تک برقرار رکھنے کی گنجائش رکھتے ہیں، ہم ان کی سرمایہ کاری کو برقرار رکھنے کی سفارش کرتے ہیں۔ جبکہ کم وقت کی رکاوٹوں کے حامل سرمایہ کار اگر فہرست سازی کے فوائد کو دیکھتے ہیں تو وہ فروخت کرسکتے ہیں۔ زوماتو کے لئے ہمارا نقطہ نظر طویل مدت میں مثبت ہے‘‘۔

حصص کی قیمت نے فہرست میں اضافے اور 67 فیصد اضافے کے ساتھ کاروبار میں 127.25 روپے فی شیئر تک اضافہ کردیا۔

تاہم اس نے 76 روپے کی حتمی پیش کش قیمت کے مقابلے 116 روپے پر لسٹ کرنے کے بعد 138 روپے انٹرا ڈے کا تجربہ کیا۔

بروکنگ کے ریسرچ تجزیہ کار سنیہ پوڈڈر نے کہا "بڑے پیمانے پر 9375 کروڑ روپئے میں آئی پی او کی بڑی قیمت اور مالیت کی قیمت کے باوجود زوماتو نے مجموعی طور پر 38x کی منافع بخش خریداری دیکھی۔ مارکیٹ میں اس طرح کی انوکھی اور اپنی نوعیت کی پہلی فہرست سازی کے لئے بہت پسند ہے۔ اگرچہ اس وقت پیش گوئی کرنا بہت مشکل ہے، لیکن یہ طویل مدتی نقطہ نظر سے اچھا شرط ہے‘‘۔

علامتی تصویر۔Shutterstock
علامتی تصویر۔Shutterstock


کمپنی کی مارکیٹ کیپٹلائزیشن 1 لاکھ کروڑ روپے کے ہندسے کو عبور کر چکی ہے، کیونکہ یہ دالال اسٹریٹ پر آئی او سی ، بی پی سی ایل ، شری سیمنٹ سے آگے بڑھتے ہوئے ایک شاندار آغاز کے بعد 1,08,067.35 کروڑ روپے رہی۔

۔ 9,375 کروڑ روپئے کی ابتدائی عوامی پیش کش جو 14 سے 16 جولائی کے دوران خریداری کے لئے کھولی گئی، سرمایہ کاروں کی جانب سے 38.25 گنا سبسکرپشن والے شاندار ردعمل کو دیکھا گیا۔

بڑے پیمانے پر لسٹنگ مالیت کی قدر کے باوجود تجزیہ کاروں کی توقعات کے مطابق تھی۔ فوڈ ڈلیوری سیکشن میں پہلی لسٹنگ ، منڈی کا مثبت جذبات ، سرمایہ کاروں سے صحت مند مطالبہ ، مارکیٹ شیئر حاصل کرنے میں مستقل مزاجی اور پہلی توقع پریمیم کی وجہ سے بہتر مالی کارکردگی کی توقع ہے۔

2010 سے زوماتو اپنے ٹکنالوجی پلیٹ فارم کے ذریعے صارفین ، ریسٹورانٹ کے شراکت داروں اور ترسیل کے شراکت داروں کو جوڑتا ہے، جو ان کی متعدد ضروریات کو پورا کرتا ہے۔ دوسری طرف یہ ریستوراں کے شراکت داروں کو صنعت سے متعلق مخصوص مارکیٹنگ کے ٹولز مہیا کرتا ہے جو انہیں اپنے کاروبار کو بڑھانے کے لیے گاہکوں کو مشغول کرنے اور حاصل کرنے کے قابل بناتا ہے۔ یہ ہائپر خالص ایک اسٹاپ پروکیورمنٹ حل بھی چلاتا ہے، جو ریستوراں کے شراکت داروں کو اعلی معیار کے اجزاء اور باورچی خانے کی مصنوعات مہیا کرتا ہے۔

علامتی تصویر۔Shutterstock
علامتی تصویر۔Shutterstock


اس کے پاس کاروبار سے کاروبار (B2B) کے علاوہ ہائپر پورور کی پیش کش کے علاوہ دو بنیادی بزنس ٹو کسٹمر (B2C) کی پیش کشیں ہیں۔ فوڈ ڈیلیوری اور ڈائن آئوٹ آؤٹ۔ اس کے کاروبار کا ایک اور حصہ زوماٹو پرو Zomato Pro ہے، اس کے صارفین کا وفاداری پروگرام کھانے کی ترسیل اور کھانے پینے کی چیزوں دونوں پر مشتمل ہے۔

زوماتو نے گذشتہ چار سال میں مسلسل مارکیٹ شیئر حاصل کرکے ہندوستان میں اکتوبر 2020 سے مارچ 2021 تک مجموعی آرڈر ویلیو (جی او وی) کے لحاظ سے زمرہ کا لیڈر بن گیا ہے۔ یہ کھانے کی ترسیل اور اس سے متعلقہ کمیشنوں سے حاصل ہونے والی آمدنی کا بیشتر حصہ پیدا کرتا ہے۔ پلیٹ فارم استعمال کرنے کیلئے اس کے ریستوراں کے شراکت دار ہے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ فوڈ ٹیک مارکٹ نے بہت سارے امکانات ظاہر کیے ہیں اور بھاری سرمایہ کاری کو راغب کیا ہے کیونکہ ہندوستان آن لائن فوڈ ڈلیوری مارکٹ ہے۔ لہذا ان کا ماننا ہے کہ ہندوستان آخری چند حلقوں میں ایک انقلابی مرحلے سے گزر رہا ہے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ہندوستان کی آن لائن فوڈ ڈلیوری مارکٹ کو آگے بڑھانے والے عوامل طرز زندگی اور کھانے کی عادات کو تبدیل کررہے ہیں اور ہندوستان میں بڑھتی ہوئی ڈسپوزایبل آمدنی لوگوں کو رعایتی نرخ پر کھانے کے لئے تیار کھانے کی طرف مجبور کرتی ہے۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ گذشتہ کئی سال میں بڑھتی ہوئی ڈیجیٹائزیشن اور کام کے تناسب میں اضافہ ہندوستان میں خواتین آن لائن فوڈ ڈیلیوری کے رجحانات بھی اضافہ ہوا ہے۔

تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ زوماتو اسی رجحانات کو مؤثر طریقے سے استعمال کررہا ہے۔

مارچ 2021 تک زوماتو ہندوستان کے 525 شہروں میں موجود تھا، اب یہ 3,89,932 فعال ریستوراں کی فہرست کے ساتھ ساتھ ہندوستان کے باہر 23 ممالک میں موجود ہے۔

فوڈ کی ترسیل کا بڑا کارنامہ نامیاتی اور غیر نامیاتی نمو کے اقدامات کو فنڈ دینے کے لئے تازہ شمارے سے حاصل ہونے والی خالص آمدنی کو استعمال کرنے جارہا ہے۔

کمپنی کے احکامات مالی سال 188 میں 3.06 کروڑ سے 7.8x بڑھ کر مالی سال 21 میں 23.89 کروڑ ہوگئے اور اس کا جی او وی 7.1x مالی سال 183 میں 1،334 کروڑ روپے سے بڑھ کر مالی سال 2012 میں 9،482.9 کروڑ روپے ہوگیا۔

کووڈ۔ 19 وبا کی وجہ سے مالی سال 21 میں 23.5 فیصد کمی سے 1,993.8 کروڑ روپے (مالی سال 2020 میں 2,604.7 کروڑ روپئے) تک پہنچ گئیں ، تجزیہ کاروں کا توقع ہے کہ مالی سال 22 سے ترقی میں تیزی سے اضافہ ہوگا۔

مالی سال 20 میں یہ خسارہ گھٹ کر (816.4) کروڑ روپئے رہا جو مالی سال 20 میں 2,385.6 کروڑ روپے تھا جبکہ سود ، ٹیکس ، فرسودگی اور اموریٹیشن (ای بی آئی ٹی ڈی اے) کے نقصان سے پہلے سال کے بعد نمایاں کمی واقع ہوئی ہے جس میں (23.4) کروڑ روپے رہ گئی ہے۔ مالی سال 20 میں مالی سال 21 (88.5) کروڑ اور مالی سال 19 میں (170.9) کروڑ روپے تھے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Jul 23, 2021 05:52 PM IST