آخر کیوں ہوجاتی ہے محبت ؟ ریسرچ کرنے والوں نے اس کے پیچھے کے راز کا کیا انکشاف

ریسرچرز کہتے ہیں کہ دماغ آپ کے پیار اور سیکس جیسی چیزوں کو قابو میں رکھتا ہے ۔ اس بات کو ثابت کرنے کیلئے انہوں نے ایک چوہیا پر ریسرچ کیا ۔

Mar 04, 2019 07:09 PM IST | Updated on: Mar 04, 2019 07:09 PM IST
آخر کیوں ہوجاتی ہے محبت ؟ ریسرچ کرنے والوں نے اس کے پیچھے کے راز کا کیا انکشاف

آخر کیوں ہوجاتا ہے پیار ؟ ریسرچ کرنے والوں نے اس کے پیچھے کے راز کا کیا انکشاف

پیار کرنا آسان نہیں کافی مشکل ہوتا ہے اور اگر یہ مشکل ہوتا ہے تو دوسری جانب کافی پیارا بھی ہوتا ہے ، اس لئے ہمیشہ مشورہ دیا جاتا ہے کہ پیار دماغ سے نہیں بلکہ دل سے کرو ، لیکن ریسرچ کرنے والوں کا ماننا اس کے بالکل برعکس ہے ۔

ریسرچرز کہتے ہیں کہ دماغ آپ کے پیار اور سیکس جیسی چیزوں کو قابو میں رکھتا ہے ۔ اس بات کو ثابت کرنے کیلئے انہوں نے ایک چوہیا پر ریسرچ کیا ، جس میں انہوں نے دیکھا کہ دماغ سے نکلنے والا کسپیپٹن ( جس کا بالکل بھی کس ہارمون سے تعلق نہیں ہے ) دماغ میں ایک ایسی شدت پیدا کرتا ہے ، جس کی وجہ سے جنس مخالف کی طرف راغب ہوجاتے ہیں ۔

Loading...

وہیں دوسری جانب چوہے میں فرومون ہارمون نکلتا ہے جو کہ کسپیپٹن نیوران کے ساتھ باقی کے نیوران کو سگنل بھیجتا ہے ۔ اس سے گوناڈوٹروفن ہارمون نکلتا ہے جو جنس مخالف کی طرف راغب ہونے والی طاقت کو کنٹرول کرتا ہے ۔

کسسپیپٹن کچھ ایسے سگنل ہمارے سیلس کو دیتا ہے جو نائٹرک آکسائڈ میں بدلتا ہے ۔ یہ ہمارے اندر پیار کی اہم وجہ ہوتی ہے ۔

Loading...