سعودی عرب: بھوک سے بوکھلائے اس شخص نے دو بیویوں کو کھایا، جانیں کیا ہے اس وائرل خبرکا سچ

سعودی عرب کی خبر سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہی ہے

Jan 26, 2019 06:19 PM IST | Updated on: Jan 26, 2019 11:53 PM IST
سعودی عرب: بھوک سے بوکھلائے اس شخص نے دو بیویوں کو کھایا، جانیں کیا ہے اس وائرل خبرکا سچ

سعودی عرب کی خبر سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہی ہے۔ اس خبرمیں دعوی کیا گیا ہے کہ یہاں ایک شوہر نے اپنی بھوک مٹانے کے لئے دوبیویوں کوکھا لیا۔ خبرکے مطابق  41 سالہ مصطفی علی احمد، چاربیویوں کے ساتھ ایک پروگرام میں شرکت کرنے جا رہے تھے۔ اس دوران ریتیلے طوفان میں انہوں نے رانگ ٹرن (غلط راستہ اختیارکرلیا) لے لیا اور ان کی گاڑی کریش کرگئی۔ موقع پران کی ایک بیوی کی موت ہو گئی۔

خبرمیں دعوی کیا گیا ہے کہ تین دن تک وہ ریتیلے علاقہ میں تپتی دھوپ میں پھنسا رہا۔ وہاں اسے پانی بھی نہیں ملا۔ ایسے میں اس نے اپنی دوبیویوں کومدد مانگنے کے لئے بھیجنے کا فیصلہ کیا۔ وہ اپنی میڈیکل کنڈیشن کے سبب خود نہیں جا سکتا تھا۔

Loading...

دعوی کیا گیا ہے کہ دونوں بیویاں ریتیلےعلاقہ میں مدد کی امید میں خوب ادھرادھردوڑتی رہی۔ تقریبا 10 دن بعد انہیں مدد ملی۔ سعودی عرب کی ایک ویب سائٹ میں دعوی کیا گیا ہے کہ جب بچاو ٹیم وہاں پہنچی تو انہوں نے دیکھا کہ صرف مصطفی زندہ ہے۔ ان کی دوبیویوں کی موت ہو چکی ہے۔ ریتیلےعلاقہ میں پھنسے رہنے کے دوران اس نے اپنی دوبیویوں کو ہی اپنا کھانا بنایا۔ لیکن آپ جانتے ہیں کہ حقیقت کیا ہے؟

دراصل ایک انٹرٹینمنٹ ویب سائٹ کی جانب سے بنائی گئی یہ خبرفرضی ہے۔ خبرکے مطابق موٹاپے میں مبتلا اس شخص کا نام مصطفی علی ہے، لیکن حقیقت یہ ہے کہ اس کا نام خالد محسن ہے۔ اس نے اپنی بیویوں کونہیں کھایا ہے بلکہ وہ موٹاپا سے پریشان تھا ۔ خالد نےاب اپنا وزن بہت کم کرلیا ہے اوروہ ایک عام زندگی گزاررہا ہے۔

Loading...