ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لداخ:پینگونگ جھیل سےفوجیوں کی واپسی کاعمل مکمل،آج ہند۔چین کےدرمیان10ویں دورکی بات چیت

نو ماہ کے تعطل کے بعد ، دونوں ممالک کی افواج نے اس بات پر اتفاق کیا کہ دونوں فریق پینگونگ جھیل کے شمالی اور جنوبی ساحلوں سے 'مرحلہ وار ، مربوط اور قابل تصدیق' انداز میں فوجی دستوں کو ہٹا دیں گے۔ فوجیوں کو منتقل کرنے کا عمل 10 فروری کو شروع ہوا۔ ذرائع نے بتایا کہ دونوں فریقین کے مابین طئے پانے والے معاہدے کے مطابق پینگونگ لیک علاقوں میں فوجیوں کی واپسی کا عمل ختم ہوگیاہے۔

  • Share this:
لداخ:پینگونگ جھیل سےفوجیوں کی واپسی کاعمل مکمل،آج ہند۔چین کےدرمیان10ویں دورکی بات چیت
علامتی تصویر

نئی دہلی: ہند اور چین کی فوج کے سینئر کمانڈر وں کے درمیان آج اعلیٰ سطح پر دسویں دور کی بات چیت ہوگی ۔۔ جس میں دونوں فریقین مشرقی لداخ میں پینگونگ جھیل کے شمالی اور جنوبی کنارے سے افواج،ٹینکس اور بنکروں کی واپسی کی تکمیل کے بعد اس عمل کو مزید آگے بڑھانے پر تبادلہ خیال کریں گے۔ سرکاری ذرائع نے جمعہ کو یہ جانکاری دی ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بنیادی کمانڈر سطح کے مذاکرات مشرقی لداخ میں چین میں لائن آف ایکچول کنٹرول کی جانب مولڈو سرحدی پوائنٹ پر شروع ہوں گے۔


نو ماہ کے تعطل کے بعد ، دونوں ممالک کی افواج نے اس بات پر اتفاق کیا کہ دونوں فریق پینگونگ جھیل کے شمالی اور جنوبی ساحلوں سے 'مرحلہ وار ، اشتراک اور قابل تصدیق' انداز میں فوجی دستوں کو ہٹا دیں گے۔ فوجیوں کو منتقل کرنے کا عمل 10 فروری کو شروع ہوا۔ ذرائع نے بتایا کہ دونوں فریقین کے مابین طئے پانے والے معاہدے کے مطابق پینگونگ لیک علاقوں میں فوجیوں کی واپسی کا عمل ختم ہوگیاہے۔


علامتی تصویر ۔
علامتی تصویر ۔


مشرقی لداخ میں گزشتہ دس ماہ کے دوران ہندوستان اور چین میں ایک اہم پیشرفت ہوئی ہے اور  پینگونگ جھیل جھیل کے جنوبی اور شمالی اطراف کے دونوں جانب سے فوجیوں کو ایک معاہدہ کےتحت پیچھے ہٹارہے ہیں ۔ وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے 11فروری کو پارلیمنٹ کی ایوان بالا میں مشرقی لداخ میں فوجی تعطل سے پیدا ہونے والی صورتحال پر یہ بیان دیا ۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ ہندوستان نے چین سے ہر سطح پر یہ واضح کر دیا ہے کہ وہ کسی کو بھی اپنی سرزمین کا ایک انچ بھی نہیں لینے دے گا اور ہماری فوج ملک کی خودمختاری ، اتحاد اور سالمیت کے تحفظ کے لئے پوری تیاری کے ساتھ محاذوں پر کھڑی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بات چیت کے لئے ہماری حکمت عملی اور موقف وزیر اعظم نریندر مودی جی کی ہدایت نامہ پر مبنی ہے کہ ہم کسی کو بھی اپنی ایک انچ زمین نہیں لینے دیں گے۔ ہمارے عزم کا نتیجہ یہ ہے کہ ہم معاہدے کی پوزیشن پر پہنچ چکے ہیں۔ انہوں نے دونوں ممالک کے مابین معاہدے کی تفصیلات دیتے ہوئے کہا’’میں ایوان کو یہ بتاتے ہوئے خوشی محسوس کررہا ہوں کہ پیگونگ جھیل کے شمالی اور جنوبی اطراف میں فوج کی واپسی سے متعلق چین کے ساتھ ہمارے موقف اور مستقل مزاکرات کے نتیجے میں معاہدہ ہو گیا ہے‘‘۔
یو این آئی ان پٹ کے ساتھ نیوز18اردو کی رپورٹ
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Feb 20, 2021 08:11 AM IST