ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

چین کے ساتھ رشتہ جیسا ہم چاہیں گے ویسا ہوگا: آرمی چیف جنرل ایم ایم نرونے

آرمی چیف جنرل ایم ایم نرونے (Manoj Mukund Naravane) نے بدھ کو د و ٹوک کہا کہ چین (China) کے ساتھ ہندستان کا رشتہ ویسا ہی ہوگا جیسا ہم چاہیں گے۔

  • Share this:
چین کے ساتھ رشتہ جیسا ہم چاہیں گے ویسا ہوگا: آرمی چیف جنرل ایم ایم نرونے
آرمی چیف جنرل ایم ایم نرونے (Manoj Mukund Naravane) نے بدھ کو د و ٹوک کہا کہ چین (China) کے ساتھ ہندستان کا رشتہ ویسا ہی ہوگا جیسا ہم چاہیں گے۔

آرمی چیف جنرل ایم ایم نرونے (Manoj Mukund Naravane) نے بدھ کو د و ٹوک کہا کہ چین  (China) کے ساتھ ہندستان کا رشتہ ویسا ہی ہوگا جیسا ہم چاہیں گے۔  انہوں نے کہا کہ "مجھے لگتا ہے کہ یہ پوری طرح سے حکومت کی سوچ ہے کہ چین کے ساتھ ہمارے تعلقات اسی طرح ترقی کریں گے، جیسا کہ ہم اس کی ترقی کرنا چاہتے ہیں۔" آرمی چیف (Army Chief) نے کہا کہ ایک حکومت  طور پر، ایک قوم  کے طور پر ہم نے یہ ظاہر کیا ہے کہ جو بھی حل ہوئے ہیں اس میں ہمارا قومی مفاد سب سے اہم ہے۔ جنرل نرونے  نے مزید کہا کہ ایک پڑوسی کے طور پر سے ہم سرحد پر امن اور استحکام چاہتے ہیں اور کوئی بھی سرحد پر کسی بھی قسم کا عدم استحکام نہیں چاہتا ہے۔ پی ٹی آئی کے مطابق ، پینگوگ تسو میں چین کے ساتھ کشیدگی کے خاتمے کے معاملے پر  جنرل ایم ایم نرونے  نے کہا کہ یہ بہت اچھا نتیجہ ہے اور دونوں ممالک کے لئے جیت کی صورتحال ہے۔


آپ کو بتادیں کہ فروری کے وسط میں  مشرقی لداخ میں پینگوگ تسو کے قریب ایل اے سی پر ہندوستان اور چین کے مابین تقریبا نو ماہ تک چلی  کشیدگی کم ہونے لگی تھی۔  خبروں کے مطابق چین نے دونوں ممالک کے مابین معاہدے کے صرف دو دن کے اندر 200 سے زائد ٹینکوں کو ہٹا دیا تھا۔ اب دونوں ممالک کی توجہ سرحد کے دیگر علاقوں میں تناؤ کے خاتمے پر ہے۔ چین کے ساتھ تناؤ کے معاملے پر راجیہ سبھا میں  وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا تھا کہ چینی فوج نے فنگر آٹھ سے پیچھے ہٹنے پر اتفاق کیا ہے۔ ہندوستانی اور چینی فوجیوں کی ابتدائی تحلیل صرف پینگوگ جھیل تک ہی محدود ہے اور دونوں فوجوں کو اپنی اصل تعیناتی میں واپس آنے میں دو ہفتے لگ سکتے ہیں۔


وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا تھا کہ ایک بار جب یہ عمل ختم ہوجائے گا تو 48 گھنٹوں کے اندر ایک کور کمانڈر سطح کی میٹنگ ہوگی جس میں دیگر تعطل والے مقامات جیسے ہاٹ اسپرنگ ، گوگرا اور 900 مربع کلومیٹر طویل ڈپسانگ علاقے پر تعطل کی بات کی جائے گی۔



وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے کہا تھا کہ مشرقی لداخ میں لائن آف ایکچوئل کنٹرول کے ساتھ کچھ  دیگر پوائنٹس پر تعیناتی  اور گشت کے سلسلے میں ابھی  بھی کچھ بقایا  مسائل ہیں۔ یہ چینی فریق کے ساتھ مزید گفتگو کا محور ہوں گے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Feb 24, 2021 07:34 PM IST