ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

India-China Border Tension: چین سے مقابلہ کےلئے ہندوستان نےسرحدپر 50ہزار اضافی فوجی جوانوں کی تعیناتی کی

بلومبرگ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان نے پچھلے چند مہینوں کے دوران یہ تعیناتی کی ہے۔ ان میں فوجیوں کے علاوہ لڑاکا طیاروں کی تعیناتی بھی شامل ہے۔ جانکاری کے مطابق ، اس وقت چینی سرحد پر 2 لاکھ سے زائد فوجیوں کی تعیناتی کی گئی ہے

  • Share this:
India-China Border Tension: چین سے مقابلہ کےلئے ہندوستان نےسرحدپر 50ہزار اضافی فوجی جوانوں کی تعیناتی کی
ایل اے سی پر ہندوستانی فوجیوں کا قافلہ۔(shutterstock)۔

نئی دہلی: ہندوستان اور چین کے مابین تقریبا ً ڈیڑھ سال سے جاری ہندوستان ۔ چین سرحدتنازعہ ابھی تھم نہیں رہاہے۔ اب بلوم برگ (Bloomberg)کی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ہندوستان نے چینی سرحد سے متصل علاقوں میں تقریباً 50ہزار فوجی (50 ہزار فوجی) تعینات کردیئے ہیں۔ اس کو ڈریگن کے خلاف ہندوستان کے سخت موقف کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔


اس معاملے پر قریب سے نگرانی کرنے والے چار افراد کے حوالے سے ، بلومبرگ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان نے پچھلے چند مہینوں کے دوران یہ تعیناتی کی ہے۔ ان میں فوجیوں کے علاوہ لڑاکا طیاروں کی تعیناتی بھی شامل ہے۔ جانکاری کے مطابق ، اس وقت چینی سرحد پر 2 لاکھ سے زائد فوجیوں کی تعیناتی کی گئی ہے جو پچھلے سال کے مقابلے میں 40 فیصد زیادہ ہے۔ تاہم ، رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اس خبر پر وزیر اعظم آفس اور فوج کے ترجمان کی طرف سے کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔


ایل اے سی پر تعینات ہندوستانی فوج ۔(Shutterstock)۔
ایل اے سی پر تعینات ہندوستانی فوج ۔(Shutterstock)۔


ہندوستان کی offensive-defensiveحکمت عملی

ہندوستان کی 'offensive-defensiveحکمت عملی کے بارے میں یہ کہا جارہا ہے کہ اس وقت تک اس علاقے میں ہندوستانی فوج کی موجودگی کا مقصد چین کو روکنا تھا لیکن اب ضرورت پڑنے پرہندوستانی کمانڈروں کے پاس چینی سرزمین پر حملہ اور قبضہ کرنے کا آپشن موجود ہوگا۔ اسے فوجی حکمت عملی کی زبان میں 'offensive-defensive' کہا جاتا ہے۔

چینی فوج کی فائل فوٹو۔(Shutterstock)-
چینی فوج کی فائل فوٹو۔(Shutterstock)-


چین نے کتنے فوجیوں کو تعینات کیا ہے ؟

رپورٹ کے مطابق ، یہ ابھی تک واضح نہیں ہے کہ چین کی طرف سے کتنے فوجی تعینات کیے گئے ہیں ۔ لیکن چین مسلسل سرحد پر جارحانہ رویہ کا مظاہرہ کر رہا ہے۔ پچھلے سال وادی گالان کے واقعے کے بعد سے ، چین کو ہندوستان کی طرف ہر اقدام کا موزوں جواب دیا گیا ہے۔ ہندوستان نے اپنے فوجیوں کی شہادت کے بعد بہت سخت موقف اختیار کیا تھا۔ ہندوستانی وزیر خارجہ ایس۔ جے شنکر نے یہ بھی کہا تھا کہ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات سرحدوں پر بدامنی کے ساتھ معمول کے نہیں رہ سکتے۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Jun 29, 2021 07:25 AM IST