ہوم » نیوز » عالمی منظر

چین نے چھوڑے 10 ہندستانی جوان، گلوان وادی میں 3 دن پہلے ہوئی تھی جدوجہد

مشرقی لداخEast Ladakh) میں واقع گلوان وادی (Galwan Valley) میں ہندستانی اور چینی فوجوں (India China Face off) کی پر تشدد جھڑپ میں چینی فوج نے 10 جوانوں کو یرغمال بنا لیا تھا۔

  • Share this:
چین نے چھوڑے 10  ہندستانی جوان، گلوان وادی میں 3 دن پہلے ہوئی تھی جدوجہد
مشرقی لداخEast Ladakh) میں واقع گلوان وادی (Galwan Valley) میں ہندستانی اور چینی فوجوں (India China Face off) کی پر تشدد جھڑپ میں چینی فوج نے 10 جوانوں کو یرغمال بنا لیا تھا۔

مشرقی لداخEast Ladakh)  میں واقع گلوان وادی (Galwan Valley)  میں ہندستانی اور چینی فوجوں  (India China Face off) کی پر تشدد جھڑپ میں چینی فوج نے 10 جوانوں کو یرغمال بنا لیا تھا۔ یہ دعویٰ نیوز ایجنسی پی ٹی آئی  PTI  نے اپنی ایک رپورٹ میں کیا ہے۔ پی ٹی آئی کی رپورٹ کےمطابق چینی فوج نے دو میجر سمیت دس ہندستانی فوجیوں کو یرغمال بنالیا تھا۔ ان فوجیوں کو تین دن کی بات چیت کے بعد رہا کرانے میں کامیابی ملی۔ حالانکہ اس بابت فوج کی  طرف سے آفیشیل بیان میں جاری کیا گیا ہے۔

اس سے پہلے ہندستانی فوج نے جمعرات کو ان میڈیا خبروں کو خارج کیا جن میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ مشرقی لداخ کی گلوان وادی میں تین دن پہلے چینی فوجیوں کے ساتھ ہوئی پر تشدد جھڑپوں کے بعد اس کے کئی فوجی لاپپتہ ہیں۔ فوج نے ایک بیان میں کہا یہ واضح کیا گیا ہے کہ کارروائی میں کوئی ہندستانی فوجی لاپتہ نہیں ہے۔

اس طرح کی خبریں تھیں کہ گلوان وادی میں پر تشدد جھڑپ کے بعد چینی فوج نے ہندستانی فوج کے کچھ فوجیوں کو یرغمال بنا لیا ہے۔ اس جھڑپ میں بیس ہندستانی فوجی جوان شہید ہوگئے تھے۔ چین نے زخمی فوجیوں کی تعداد ابھی تک جاری نہیں کی ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ سریواستو نے بھی ایک میڈیا بریفنگ میں کہا کہ پیر کو ہوئی جھڑپ کے بعد سے کئی ہندستانی فوجی لاپتہ ہیں۔

First published: Jun 19, 2020 12:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading