உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    فشنگ لنکس پر کلک کرنے سے آپ کی پرئیوسی کو ہوسکتا ہے خطرہ! کیا ہے Phishing Links؟ جانیے تفصیلات

    راز داری ضرروی ہے۔

    راز داری ضرروی ہے۔

    فشنگ سوشل انجینئرنگ کی ایک قسم ہے جہاں سائبر ورلڈ میں ایک حملہ آور فریب پر مبنی پیغام بھیجتا ہے جس کا مقصد کسی انسان سے اس کی راز داری کو حاصل کرنا ہے اور وہ اس کو اپنے مقاصد کے لیے استعمال میں لاتا ہے۔

    • Share this:
      فشنگ Phishing کام اور ذاتی ای میل سے لے کر ایس ایم ایس، سوشل میڈیا یہاں تک کہ اشتہارات تک مواصلات کی ہر شکل میں اپنی موجودگی کو یقینی بنا چکا ہے۔ اب ایک نئی تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ ہر دس آدمیوں میں سے ایک شخص اپنے موبائل ڈیوائسز پر رہتے ہوئے فشنگ لنکس پر کلک کرتا ہے۔ جس سے اس کی پرئیوسی کو ہوسکتا ہے۔

      ایک تجزیے کے مطابق ہندوستان سمیت 90 ممالک میں 500,000 محفوظ فونوں کے اندر فشنگ کے رجحانات پائے گئے ہیں۔ اس کا مطلب صرف پیغامات وصول کرنا نہیں ہے، بلکہ ان پر کلک کرنا ہے۔ کلاؤڈ سیکیورٹی فرم وانڈرا (ایک Jamf کمپنی) کی رپورٹ کے اہم نتائج میں فشنگ حملوں کا شکار ہونے والے موبائل صارفین کی تعداد میں (سال بہ سال) 160 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ تقریباً 93 فیصد فشنگ ڈومینز یو آر ایل بار میں ایک پیڈ لاک کے ساتھ ’محفوظ‘ ویب سائٹ پر ہوسٹ کیے جاتے ہیں۔

      علامتی تصویر۔(shutterstock)۔
      علامتی تصویر۔(shutterstock)۔


      رپورٹ کے مطابق آج 93 فیصد کامیاب فشنگ سائٹس اپنی دھوکہ دہی کو چھپانے کے لیے HTTPS تصدیق کا استعمال کر رہی ہیں۔ یہ تعداد 2018 میں 65 فیصد سے ڈرامائی طور پر بڑھی ہے۔

      فشنگ کیا ہے؟

      فشنگ سوشل انجینئرنگ کی ایک قسم ہے جہاں سائبر ورلڈ میں ایک حملہ آور فریب پر مبنی پیغام بھیجتا ہے جس کا مقصد کسی انسان سے اس کی راز داری کو حاصل کرنا ہے اور وہ اس کو اپنے مقاصد کے لیے استعمال میں لاتا ہے۔

      علامتی تصویر۔(shutterstock)۔
      علامتی تصویر۔(shutterstock)۔


      اس کے علاوہ حملہ آور غیر متعلقہ ویب سائٹس کی لنک کو شیر کرکے اس کو کلک کرنے کے لیے بھی کہتا ہے، تاکہ اس کے ہدف کردہ صارف سے متعلق حساس معلومات کو افشا کیا جاسکے۔ اس طریقہ کار کے تحت خود سے اپلوڈ ہونے والے سافٹ ویئرس بھی تعینات کیے جاتے ہیں۔ایک حملہ آور کے لیے ایک مضبوط ڈیوائس آپریٹنگ سسٹم کا استحصال کرنے سے کہیں زیادہ آسان ہے کہ وہ کسی شخص کا استحصال کرے اور فشنگ حملے کے ذریعے ڈیٹا حاصل کرے۔

      رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ درحقیقت صارف کی معلومات کلاؤڈ سے چلنے والے حملہ آور کے لیے کہیں زیادہ قیمتی ہیں، کیونکہ وہ حساس ڈیٹا تک رسائی فراہم کرتے ہیں جو کہ ڈیوائس سے باہر سافٹ ویئر کے طور پر ایک سروس میں محفوظ اور منظم ہوتا ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ وہ نہ صرف زیادہ ذاتی نوعیت کے اور زیادہ قائل ہیں، بلکہ وہ پہلے سے کہیں زیادہ جگہوں پر صارفین تک پہنچ رہے ہیں اور کاروباری اسناد اور ڈیٹا کو ہدف بنانے کے لیے صارفین سے آگے بڑھ رہے ہیں‘‘۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: