உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    18سالہ لڑکے نے ہیک کرلیا اوبر کا نیٹ ورک، کمپنی کو بند کرنا پڑا اپناپورا سسٹم

    18سالہ لڑکے نے ہیک کرلیا اوبر کا نیٹ ورک، کمپنی کو بند کرنا پڑا اپناپورا سسٹم

    18سالہ لڑکے نے ہیک کرلیا اوبر کا نیٹ ورک، کمپنی کو بند کرنا پڑا اپناپورا سسٹم

    Uber Hacked: اوبر ترجمان نے کہا، ہیکر نے ایمزون اور گوگل کی جانب سے ہوسٹ کیے گئے کلاوڈ تک پوری پہنچ حاصل کرلی تھی۔ یہاں سے اوبر اپنے ریسورس کوڈ اور کسٹمر ڈیٹا کا ذخیرہ کرتا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • New Delhi | Mumbai | Hyderabad
    • Share this:
      Uber Hacked: کیب بُکنگ پلیٹ فارم اوبر کے کمپیوٹر نیٹ ورک میں بڑی نقب لگائی گئی ہے۔ صرف 18 سال کے ایک ہیکر نے اس کے نیٹ ورک کی سیکورٹی میں انٹری کرتے ہوئے اس کے اندر تک پہنچ بنا لی۔ حالانکہ ابھی یہ پتہ نہیں چل پایا ہے کہ اس سے اوبر کتنا متاثر ہوا لیکن کمپنی کو اپنا اندرونی مواصلات اور انجینئرنگ سسٹم بند کرنا پڑا۔ مانا جارہا ہے کہ اوبر کا یہ سسٹم کافی متاثر ہوا ہے۔

      کمپنی نے کےہا ہے کہ سائبر سیکورٹی سے جڑے اس معاملے کی جانچ کی جارہی ہے۔ اوبر کے ترجمان سیم کری نے بتایا ہے کہ ہیکر نے ایک ملازم کے ورک پ لیس میسجنگ ایپ سلیک کا ایکسس حاصل کرلیا۔ اس کا استعمال کر کے ہیکر نے اوبر ملازمین کو میسیج بھیجا کہ کمپنی ڈیٹا بریچ کا شکار ہوئی ہے۔

      انہوں نے کہا کہ، فی الحال یوزرس کا ڈیٹا لیک ہونے کی جانکاری سامنے نہیں آئی ہے۔ سیم کری نے کہا، کمپنی کی تجربہ گاہ کے ایک انجینئر نے ہیکر کےساتھ بات چیت بھی کی۔ ہیکر نے بتایا کہ وہ 18 سال کا ہے اور کئی سال سے اپنی سائبر سیکورٹی اسکل پر کام کررہا ہے۔ اس نے بتایا کہ اوبر کی سیکورٹی پالیسی کمزور تھی۔ اسی وجہ سے وہ اس میں آسانی سے نقب لگا سکا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      100 روپئے لیٹر فروخت ہو رہا ہے آٹا... عمران خان یہ کیا بول گئے؟ ویڈیو ہوا وائرل

      یہ بھی پڑھیں:
      فیفا ورلڈ کپ قطر 2022 میں نہیں ہوگی ہندوستانی فٹ بال ٹیم، لیکن شائقین پرجوش! آخرکیاہےوجہ؟

      ایمزون، گوگل کلاوڈ تک حاصل کی پہنچ
      اوبر ترجمان نے کہا، ہیکر نے ایمزون اور گوگل کی جانب سے ہوسٹ کیے گئے کلاوڈ تک پوری پہنچ حاصل کرلی تھی۔ یہاں سے اوبر اپنے ریسورس کوڈ اور کسٹمر ڈیٹا کا ذخیرہ کرتا ہے۔ انہوں نے کئی اوبر ملازمین سے بات کی جنہوں نے کہا کہ وہ ہیکر کی پہنچ کو روکنے کے لئے داخلی طور سے سب کچھ بند کرنے کے لئے کام کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس میں سین فرانسسکو کمپنی کا سلیک انٹرنل میسجنگ نیٹ ورک شامل ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: