உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Nazi salute: 29 سالہ ڈچ سیاح کو ’نازی سلامی‘ پیش کرنے پر کیا گیا گرفتار، ویڈیو ہوئی وائرل

    چھ ملین یورپی یہودیوں کی نسل کشی کی علامت بن گیا ہے

    چھ ملین یورپی یہودیوں کی نسل کشی کی علامت بن گیا ہے

    اس میں مزید کہا گیا ہے کہ وہ اپنے شوہر کی طرف سے لی گئی تصویر کے لیے پوز دیتے ہوئے گارڈز کے ہاتھوں پکڑی گئی۔ علاقائی پولیس پریس آفیسر بارٹوز ایزدیبسکی نے پی اے پی کو بتایا کہ اس نے اسے ایک برا مذاق قرار دیا۔

    • Share this:
      پولش پولیس (Polish police) نے کہا کہ انہوں نے ایک ڈچ سیاح کو سابق ڈیتھ کیمپ آشوٹز برکیناؤ کے مقام پر نازی سلامی دینے پر حراست میں لے لیا ہے۔ علاقائی پولیس نے ٹویٹ کیا کہ جنوبی شہر Oswiecim کے افسران نے آج نیدرلینڈ سے تعلق رکھنے والی 29 سالہ خاتون کو حراست میں لے لیا ہے۔

      انہوں نے مزید کہا کہ سیاح آربیٹ مچٹ فری (کام آپ کو آزاد کرتا ہے) گیٹ کے سامنے ہٹلر کو سلامی پیش کررہا تھا۔ زیر حراست خاتون پر نازی پروپیگنڈے میں ملوث ہونے کا الزام ہے اور اس نے اعتراف بھی کیا ہے۔ خبر رساں ایجنسی پی اے پی کے مطابق استغاثہ نے اسے سزا کے طور پر جرمانے کے ساتھ جاری کیا، جسے اس نے قبول کر لیا۔

      اس میں مزید کہا گیا ہے کہ وہ اپنے شوہر کی طرف سے لی گئی تصویر کے لیے پوز دیتے ہوئے گارڈز کے ہاتھوں پکڑی گئی۔ علاقائی پولیس پریس آفیسر بارٹوز ایزدیبسکی نے پی اے پی کو بتایا کہ اس نے اسے ایک برا مذاق قرار دیا۔

      واضح رہے کہ نازی جرمنی نے دوسری جنگ عظیم کے دوران پولینڈ پر قبضہ کرنے کے بعد اوسویسیم میں ڈیتھ کیمپ بنایا۔ ہولوکاسٹ کا مقام نازی جرمنی کی جانب سے چھ ملین یورپی یہودیوں کی نسل کشی کی علامت بن گیا ہے، جن میں سے ایک ملین 1940 اور 1945 کے درمیان کیمپ میں 100,000 سے زیادہ غیر یہودیوں کے ساتھ مرے تھے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: