உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بلوچستان میں پاکستان فوج پر بڑا حملہ، دہشت گردوں نے 45 جوانوں کو مارنے کا کیا دعویٰ

    Balochistan province Attack:  حملہ آوروں نے بدھ کی رات گئے نوشکی اور پنجگور کے علاقوں میں دو سکیورٹی پوسٹوں پر حملہ کیا۔ اس حملے میں کم از کم چار حملہ آور مارے گئے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ حملہ بلوچ لبریشن آرمی (بی ایل اے (BLA) ) کی جانب سے پاک فوج کی فرنٹیئر کورپس پر کیا گیا ہے۔

    Balochistan province Attack: حملہ آوروں نے بدھ کی رات گئے نوشکی اور پنجگور کے علاقوں میں دو سکیورٹی پوسٹوں پر حملہ کیا۔ اس حملے میں کم از کم چار حملہ آور مارے گئے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ حملہ بلوچ لبریشن آرمی (بی ایل اے (BLA) ) کی جانب سے پاک فوج کی فرنٹیئر کورپس پر کیا گیا ہے۔

    Balochistan province Attack: حملہ آوروں نے بدھ کی رات گئے نوشکی اور پنجگور کے علاقوں میں دو سکیورٹی پوسٹوں پر حملہ کیا۔ اس حملے میں کم از کم چار حملہ آور مارے گئے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ حملہ بلوچ لبریشن آرمی (بی ایل اے (BLA) ) کی جانب سے پاک فوج کی فرنٹیئر کورپس پر کیا گیا ہے۔

    • Share this:
      اسلام آباد۔ پاکستان (Pakistan) کے جنوب مغربی صوبے بلوچستان (Balochistan province) میں مسلح حملہ آوروں نے ایک بار پھر فوجی چوکیوں پر حملہ کیا ہے۔ حملہ آوروں نے بدھ کی رات گئے نوشکی اور پنجگور کے علاقوں میں دو سکیورٹی پوسٹوں پر حملہ کیا۔ اس حملے میں کم از کم چار حملہ آور مارے گئے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ حملہ بلوچ لبریشن آرمی (بی ایل اے (BLA) ) کی جانب سے پاک فوج کی فرنٹیئر کورپس پر کیا گیا ہے۔ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ ان حملوں میں پاکستان کے 45 فوجی مارے گئے ہیں، حاکانکہ ابھی تک اس بارے میں کوئی سرکاری بیان سامنے نہیں آیا ہے۔

      پاک فوج کے میڈیا ونگ انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر ISPR) نے حملے کے حوالے سے ایک بیان جاری کیا ہے۔ فوج کے بیان کے مطابق پہلا حملہ بلوچستان کے ضلع پنجگور میں ہوا۔ آئی ایس پی آر (ISPR) کا کہنا تھا کہ پہلے حملے کے چند گھنٹے بعد حملہ آوروں نے بلوچستان کے علاقے نوشکی میں سکیورٹی کیمپ میں داخل ہونے کی کوشش کی حالانکہ فوجیوں نے ان کی کوشش ناکام بناتے ہوئے چار حملہ آوروں کو مار گرایا۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کو بھاری نقصان پہنچاتے ہوئے دونوں حملوں کو کامیابی سے ناکام بنا دیا گیا ہے۔

      ضلع جعفرآباد میں ہوا تھا گرینیڈ حملہ
      جنوب مغربی صوبہ بلوچستان کے ضلع جعفرآباد میں دو روز قبل ایک د گرینیڈ حملے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت کم از کم 17 افراد زخمی ہو گئے تھے۔ سینئر پولیس حکام نے بتایا کہ نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے اتوار کی رات جعفرآباد ضلع کے ڈیرہ اللہ یار شہر میں ایک بھرے بازار میں دستی بم پھینکا۔ انہوں نے کہا کہ حملے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت کم از کم 17 افراد زخمی ہوئے۔ ایک پولیس افسر نے اندیشہ ظاہر کیا کہ حملے کا مقصد دو فوجیوں کو نشانہ بنایا جا سکتا ہے، کیونکہ عسکریت پسند اور بلوچ علیحدگی پسند اکثر صوبے میں سکیورٹی فورسز اور ادارے کو نشانہ بناتے ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: