உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Muharram: پاکستان میں محرم کے جلوس میں دم گھٹنوں میں 6 افراد جاں بحق، درجنوں بے ہوش

    نیم فوجی رینجرز تعینات ہوتے ہیں۔

    نیم فوجی رینجرز تعینات ہوتے ہیں۔

    پاکستان کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں 9ویں اور 10ویں محرم کو عام تعطیل کے دن جلوس نکالے جاتے ہیں۔ ملک بھر میں 9 محرم اور عاشورہ کے مرکزی جلوسوں میں ہزاروں افراد شریک ہوتے ہیں جن کی سیکیورٹی کے لیے ہزاروں پولیس اہلکار اور نیم فوجی رینجرز تعینات ہوتے ہیں۔

    • Share this:
      پاکستان کے صوبہ سندھ (Sindh) میں پیر کے روز محرم کے جلوس (Muharram procession) کے دوران دم گھٹنے سے کم از کم چھ افراد ہلاک اور درجنوں بے ہوش ہو گئے۔ ایدھی ٹرسٹ (Edhi Trust) کے ایک اہلکار نے بتایا کہ یہ واقعہ روہڑی ٹاؤن میں پیش آیا کیونکہ گرمی، نمی اور جلوس میں اضافہ ہوا اور یہ مرکزی امام بارگاہ کے قریب چلا گیا۔

      اہلکار نے بتایا کہ جلوس میں شامل چھ سوگوار دم گھٹنے کی وجہ سے انتقال کر گئے جبکہ درجنوں بے ہوش یا بیمار بھی ہوئے اور انہیں ہسپتال لے جایا گیا۔ محرم اسلامی کیلنڈر کا پہلا مہینہ ہے۔ محرم کی دسویں تاریخ کو عاشورہ کہا جاتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      UNSC: غزہ پٹی پر لگاتار اسرائیلی حملے، اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نےطلب کیاہنگامی اجلاس

      اس دن کئی مسلمان روزہ رکھتے ہیں، جلوس نکالتے ہیں اور پیغمبر اسلام حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے نواسے حضرت امام حسین ؓ کی یاد میں دعا کرتے ہیں، جو صدیوں پہلے عراق کے کربلا میں شہید ہوئے تھے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      UAE: یو اے ای کی شہزادی نےغزہ پٹی پر اسرائیلی فضائی حملوں کے خلاف اٹھائی آواز!



      پاکستان کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں 9ویں اور 10ویں محرم کو عام تعطیل کے دن جلوس نکالے جاتے ہیں۔ ملک بھر میں 9 محرم اور عاشورہ کے مرکزی جلوسوں میں ہزاروں افراد شریک ہوتے ہیں جن کی سیکیورٹی کے لیے ہزاروں پولیس اہلکار اور نیم فوجی رینجرز تعینات ہوتے ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: