ہوم » نیوز » عالمی منظر

افغانستان میں 967 طالبانی جنگجو مارے گئے، 500 سے زائد زخمی، 20 صوبوں اور 9 شہروں میں لڑائی جاری

افغانستان کے مختلف حصوں میں گزشتہ چار دنوں کے دوران سیکورٹی فورسز کی کارروائیوں میں طالبان کے 967 جنگجو مارے گئے اور 500 سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 19, 2021 02:56 PM IST
  • Share this:
افغانستان میں 967 طالبانی جنگجو مارے گئے، 500 سے زائد زخمی، 20 صوبوں اور 9 شہروں میں لڑائی جاری
افغانستان میں 967 طالبانی جنگجو مارے گئے، 500 سے زائد زخمی

کابل: افغانستان کے مختلف حصوں میں گزشتہ چار دنوں کے دوران سیکورٹی فورسز کی کارروائیوں میں طالبان کے 967 جنگجو مارے گئے اور 500 سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔ افغان سیکورٹی اور ڈیفنس فورسز کے ترجمان جنرل اجمل شنواری نے اتوار کے روز یہ اطلاع دی۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کے 20 صوبوں اور 9 شہروں میں طالبان کے خلاف لڑائی جاری ہے۔ انہوں نے کہا ’’صورتحال میں بہتری کی توقع ہے۔ ایک فوجی جنرل کی حیثیت سے میں یقین دلاتا ہوں کہ تمام افغان علاقوں کا بہادری کے ساتھ دفاع کیا جائے گا‘‘۔

ٹولونیوزکی رپوٹ کے مطابق شمال مشرقی صوبہ تخار کے طالقان شہر کے بیرونی علاقہ میں سیکورٹی فورسز اور طالبان جنگجوؤں کے درمیان جھڑپوں کی اطلاع موصول ہوئی ہے۔ یہاں کے رہنے والے مقامی لوگوں نے موجودہ صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ طالبان نے گزشتہ دو ہفتوں سے شہرکو کنٹرول میں لے رکھا ہے۔ طالقان کے رہائشی عبدالکریم نے بتایا ’’صورتحال دن بدن خراب ہوتی جارہی ہے۔ طالبان کی فائرنگ نے یہاں کے مکانات کو بھی اپنی زد میں لے لیا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’حکومت کو شہر کو اس صورتحال سے باہر نکالنے کی کوشش کرنی چاہئے‘‘۔


افغانستان نے پاکستان سے اپنے سفیروں کو بلایا واپس


وہیں دوسری جانب، افعانستان نے پاکستان میں اپنے سفیر کی بیٹی کے اغوا کے معاملہ میں وہاں سے اپنے سفیر اور دیگر افغان سفارتکاروں کو فوری طورپر واپس بلا لیا ہے۔ افغانستان کے نائب صدر عمراللہ صالح نے کہا کہ صدر اشرف غنی نے پاکستان میں ملک کے سفیر اور دیگر سفارتکاروں کو فوری طورپر واپس بلانے کی ہدایت دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغانی سفیر کی بیٹی کے اغوا اور اس کے بعد انہیں دی گئی اذیت سے ہمارے ملک کے عوام کو ٹھیس پہنچی ہے۔ صدر کے مشیر وحید عمر نے ٹوئٹ میں کہا کہ سفیر کی بیٹی کو اغوا کرنے والے قانون کے دائرے میں لایا جانا چاہئے اور پاکستان میں افغان سفارتکاروں کی حفاظت یقینی بنائی جانی چاہئے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 19, 2021 02:31 PM IST