ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان: دو عیسائی نرسوں نے دیوار سے ہٹائے آیتوں کے اسٹیکر، غصے سے بھڑکے لوگ، بولے۔سزا دو

۔ نرسوں پراسپتال کے وارڈ کی دیوار سےاسلامی آیات کے ساتھ لکھا ہوا اسٹیکر ہٹانے کا الزام ہے۔ اس وارڈ میں نفسیاتی مریضوں کا علاج کیا جاتا ہے۔

  • Share this:
پاکستان: دو عیسائی نرسوں نے دیوار سے ہٹائے آیتوں کے اسٹیکر، غصے سے بھڑکے لوگ، بولے۔سزا دو
۔ نرسوں پراسپتال کے وارڈ کی دیوار سےاسلامی آیات کے ساتھ لکھا ہوا اسٹیکر ہٹانے کا الزام ہے۔ اس وارڈ میں نفسیاتی مریضوں کا علاج کیا جاتا ہے۔

لاہور: پاکستان (Pakistan)کے صوبہ پنجاب کے ایک اسپتال کے عہدیداروں کی شکایت پر دو عیسائی نرسوں (Christian Nurses) کے خلاف توہین رسالت کے الزام میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ پولیس نے یہ اطلاع دی۔ اس دوران لوگوں نے نرسوں کے خلاف احتجاج کیا اور ان کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔ نرسوں پراسپتال کے وارڈ کی دیوار سےاسلامی آیات کے ساتھ لکھا ہوا اسٹیکر ہٹانے کا الزام ہے۔ اس وارڈ میں نفسیاتی مریضوں کا علاج کیا جاتا ہے۔


پولیس کے مطابق ، جمعہ کے روز ڈپٹی میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر محمد علی کی شکایت پر فیصل آباد کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال میں کام کرنے والی نرسوں Nurses مریم لال اور نیوش اروج کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔


علی کا دعوی ہے کہ اس کیس کی تحقیقات کرنے والی اسپتال کمیٹی نے دونوں نرسوں کے خلاف توہین رسالت کے الزامات کو ثابت کیا ہے۔ ادھر اسپتال کے عملے نے نرسوں Nurses کے خلاف احتجاج کیا اور ان کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔ مقامی مسلم مذہبی رہنما بھی اس احتجاج میں شامل ہوئے۔


 


یہ بھی پڑھیں: عجیب و غریب! برازیل میں نرس نے بنایا ایسا دستانہ جو کووڈ پازیٹو مریض کو دلائے گا انسانی احساس
لاشوں کے ساتھ اس اسپتال میں ہوتا ہے بیحد انتہائی گھٹیا کام، درد بھری داستاں سن کر کانپ جائے گی آپ کی روح

کچھ مظاہرین نے ان نرسوں Nurses میں سے ایک  کو اپنے قبضے میں لینے کے لئے اسپتال میں کھڑی پولیس کی گاڑی پر حملہ کیا لیکن پولیس police نے نرس کو بھیڑ سے بچانے کے لئے اسے  گاڑی کے اندر بند کردیا۔
Published by: Sana Naeem
First published: Apr 11, 2021 12:25 PM IST