உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان میں ہندو ڈاکٹر کا گولی مار کر قتل

    کراچی۔ پاکستان میں ایک 56 سالہ ہندو ڈاکٹر کو گولی مار کر قتل کردیا گیا ہے۔

    کراچی۔ پاکستان میں ایک 56 سالہ ہندو ڈاکٹر کو گولی مار کر قتل کردیا گیا ہے۔

    کراچی۔ پاکستان میں ایک 56 سالہ ہندو ڈاکٹر کو گولی مار کر قتل کردیا گیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      کراچی۔ پاکستان کے کراچی شہر کی پاک کالونی میں ایک 56 سالہ ہندو ڈاکٹر کو گولی مار کر ہلاک کردیا گیا۔ ایس ایس پی انوسٹی گیشن ویسٹ اختر فاروق کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر پریتم داس، حسرت موہانی کالونی میں اپنے کلینک میں موجود تھے جب ان پر حملہ کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ جس وقت ڈاکٹر پر حملہ کیا گیا، ان کا اٹینڈنٹ اس وقت موبائل کارڈ خریدنے گیا ہوا تھا۔ ڈاکٹر کو سینے میں گولی ماری گئی۔


      ان کا کہنا تھا کہ گولی کی آواز سن کر اسسٹنٹ کلینک پہنچا، جہاں اس نے ڈاکٹر کو خون میں لت پت دیکھا جس کے بعد اس نے اپنے دوست کی مدد سے انہیں رکشہ کے ذریعے عباسی شہید اسپتال منتقل کیا۔ اختر فاروق نے کہا کہ اطلاع ملنے پر ڈاکٹر کے بیٹے مُکیش کماراسپتال پہنچے اور انہوں نے اپنے والد کو آغا خان اسپتال منتقل کیا، جہاں ڈاکٹر پریتم داس دوران علاج زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے۔


      ان کا کہنا تھا کہ ملزم ڈاکٹر کی کوئی بھی قیمتی اشیا نہیں لے گئے، جبکہ واقعے کی تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے۔ پاک کالونی کی پولیس نے قتل کا مقدمہ نا معلوم ملزمان کے خلاف ڈاکٹر کے بیٹے کی مدعیت میں پاکستان پینل کوڈ (پی پی سی) کی دفعات 34 اور 302 کے تحت درج کرلیا ہے۔

      First published: