உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    طالبان نے کہا- پنجشیر میں باغیوں کی قیادت کر رہے امراللہ صالح تاجکستان بھاگے

    طالبان نے کہا- پنجشیر میں باغیوں کی قیادت کر رہے امراللہ صالح تاجکستان بھاگے

    طالبان نے کہا- پنجشیر میں باغیوں کی قیادت کر رہے امراللہ صالح تاجکستان بھاگے

    طالبان کے ترجمان کے مطابق، پنجشیر وادی میں باغیوں کی قیادت کر رہے سابق نائب صدر امراللہ صالح ملک چھوڑ کر تاجکستان بھاگ گئے ہیں۔ ان کے علاوہ پنجشیر کے ایک اور لیڈر احمد مسعود نے ٹوئٹ کرکے بتایا ہے کہ وہ محفوظ ہیں۔ امراللہ صالح مسلسل جنگ جاری رکھنے اور طالبان کے آگے سرینڈر نہ کرنے کی بات کرتے رہے ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      کابل: طالبان (Taliban) کے ترجمان کے مطابق، پنجشیر وادی میں مزاحمت کاروں کی قیادت کر رہے سابق نائب صدر امراللہ صالح (Amrullah Saleh) ملک چھوڑ کر بھاگ گئے ہیں۔ یہ اطلاع رائٹرس نے دی ہے۔ طالبان کے ترجمان نے دعویٰ کیا ہے کہ امراللہ صالح تاجکستان بھاگ گئے ہیں۔ حالانکہ اس سے پہلے کچھ میڈیا رپورٹس میں کہا گیا تھا کہ امراللہ صالح خفیہ ٹھکانے میں ہیں اور وہیں سے لڑائی کی قیادت کر رہے ہیں۔

      ان کے علاوہ پنجشیر کے ایک اور لیڈر احمد مسعود نے ٹوئٹ کرکے بتایا ہے کہ وہ محفوظ ہیں۔ امراللہ صالح مسلسل جنگ جاری رکھنے اور طالبان کے آگے سرینڈر نہ کرنے کی بات کرتے رہے ہیں۔ حالانکہ طالبان کی مہم کو آگے بڑھتا دیکھ کر وہ شاید ملک چھوڑ کر نکل گئے ہیں، لیکن عام طور پر سوشل میڈیا پر سرگرم رہنے والے امراللہ صالح نے اپنی لوکیشن اور پنجشیر کے حالات کو لے کر کوئی اطلاع نہیں دی ہے۔

      امراللہ صالح مسلسل جنگ جاری رکھنے اور طالبان کے آگے سرینڈر نہ کرنے کی بات کرتے رہے ہیں۔
      امراللہ صالح مسلسل جنگ جاری رکھنے اور طالبان کے آگے سرینڈر نہ کرنے کی بات کرتے رہے ہیں۔


      اس درمیان طالبان کا کہنا ہے کہ وہ افغانستان میں حالات معمول کے مطابق بنانے میں مصروف ہے۔ طالبان کا کہنا ہے کہ جلد ہی کابل سے دوسرے ممالک کے لئے پروازیں شروع ہوجائیں گی۔ اس سے افغانستان میں پھنسے ان لوگوں کو راحت ملے گی، جو کہیں اور جانا چاہتا ہے۔ اس کے علاوہ افغانستان کا دنیا سے رابطہ پھر بحال ہوسکے گا۔

      وہیں پنجشیر وادی پر قبضہ کرنے کے بعد طالبان نے افغانستان میں اس کے اقتدار کے خلاف مزاحمت کرنے والوں کو سخت وارننگ دی ہے۔ طالبان نے کہا کہ اگر کوئی بھی بغاوت کرتا ہے تو اسے بخشا نہیں جائے گا اور اس سے بدلہ لیا جائے گا۔ اس کے علاوہ طالبان کے ترجمان نے کہا کہ ابھی افغانستان میں ایک عبوری حکومت کی ہی تشکیل کی جائے گی، جس میں بعد میں تبدیلیاں کی جاسکتی ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: