ہوم » نیوز » عالمی منظر

افغان فورسزکی طالبان کے خلاف کارروائی، اہم علاقوں کا قبضہ واپس لے لیا

افغان وزارت دفاع نے دعوی کیا ہے سرکاری فورسز نے مغربی صوبے کے دارالحکومت کا قبضہ دوبارہ حاصل کر لیا ہے جس پر طالبان نے ایک دن قبل قبضہ کرلیا تھا اور سیکڑوں تازہ دم فوجیوں کو علاقے میں تعینات کردیا گیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 09, 2021 11:50 AM IST
  • Share this:
افغان فورسزکی طالبان کے خلاف کارروائی، اہم علاقوں کا قبضہ واپس لے لیا
افغان فورسزکی طالبان کے خلاف کارروائی، اہم علاقوں کا قبضہ واپس لے لیا

کابل: افغان وزارت دفاع نے دعوی کیا ہے سرکاری فورسز نے مغربی صوبے کے دارالحکومت کا قبضہ دوبارہ حاصل کر لیا ہے جس پر طالبان نے ایک دن قبل قبضہ کرلیا تھا اور سیکڑوں تازہ دم فوجیوں کو علاقے میں تعینات کردیا گیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق افغان وزارت دفاع نے اپنے بیان میں مزید کہا کہ وسط ایشیائی ملک ترکمانستان کی سرحد کے قریب واقع صوبہ بادغیس کے صدر مقام قلعہ نون کے کنارے پر لڑائی جاری ہے۔

قبل ازیں طالبان نے بدھ کے روز پولیس ہیڈ کوارٹر سمیت شہر میں اہم سرکاری عمارتوں پر قبضہ کرلیا تھا جہاں 20سال کی جنگ کے خاتمے پر امریکی افواج کے انخلا کے بعد طالبان کی ڈرامائی انداز میں پیش قدمی جاری ہے۔ ڈان کی ایک رپورٹ کے مطابق وزارت دفاع کے ترجمان فواد امان نے بتایا کہ یہ شہر مکمل طور پر ہمارے قبضے میں ہے اور ہم شہر کے مضافات میں طالبان کے خلاف آپریشن کر رہے ہیں۔وزارت دفاع نے کہا کہ قلعہ نواب کے کنارے پر تازہ کارروائیوں میں 69 طالبان جنگجو مارے گئے، یہ پہلا صوبائی دارالحکومت ہے جس میں تازہ مقابلوں کے بعد طالبان داخل ہوئے تھے۔ انہوں نے ٹوئٹر پر بتایا کہ حکومتی دستوں نے طالبان کے اسلحہ اور گولہ بارود کی ایک بڑی مقدار پر بھی قبضہ کر لیا ہے۔صوبہ بادغیس کا باقی حصہ طالبان کے قبضے میں ہے۔

مغربی سیکورٹی حکام نے کہا ہے کہ طالبان نے افغانستان کے 100 سے زیادہ اضلاع پر قبضہ کرلیا ہے جبکہ طالبان کا کہنا ہے کہ انہوں نے ملک کے آدھے حصے پر مشتمل 34 صوبوں کے 200 اضلاع پر قبضہ کرلیا ہے، اہم شہروں اور صوبائی دارالحکومت بدستور حکومت کے قبضے میں ہیں۔طالبان نے ہفتوں سے ان علاقہ پر قبضہ کر رکھا ہے لیکن امریکہ کی جانب سے اہم اڈہ خالی کرنے کے بعد انہوں نے حملوں کو تیز کردیا ہے۔


طالبان شمالی صوبوں میں خاص طور پر ڈرامائی انداز میں پیش قدمی کررہے ہیں جہاں وہ ایک عرصے سے طاقت کے حصول میں ناکام رہے تھے جبکہ حکومت اور شدت پسند گروپ کے مابین امن مذاکرات بھی بے نتیجہ رہے ہیں۔ افغانستان سے امریکی انخلا کے بعد وہاں خانہ جنگی پھیل جانے کا خدشہ پیدا کیا ہے اور پرامن حل کے بغیر افغانستان سے انخلا پر امریکی حکومت اور اس کے اتحادیوں کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 09, 2021 11:50 AM IST