உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان کی سرزمین کودہشت گردوں کی تربیت کےلیےنہیں کیاجانا چاہیے استعمال، UNSC میں ہندوستان کابیان

    ٹی ایس ترو مورتی نے زور دے کر کہا کہ افغانستان کی صورت حال اب بھی انتہائی نازک ہے۔

    ٹی ایس ترو مورتی نے زور دے کر کہا کہ افغانستان کی صورت حال اب بھی انتہائی نازک ہے۔

    ٹی ایس ترو مورتی نے زور دے کر کہا کہ افغانستان کی صورت حال اب بھی انتہائی نازک ہے۔ اس کے موجودہ پڑوسی اور اس کے لوگوں کے دوست کے طور پر اس کی موجودہ حیثیت ہمارے لیے اب بھی تشویش کا باعث ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل (UNSC)میں افغانستان کے موجودہ حالات پر مباحثے کے دوران ہندوستان کے مستقل نمائندے ٹی ایس ترو مورتی( TS Tirumurti ) کا کہناہے ہندوستان افغانستان کی صورتحال پرنظر رکھے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ افغان سرزمین کسی ملک کو دھمکی دینے یا حملہ کرنے یا دہشت گردوں کو پناہ دینے کے لیے استعمال نہیں ہونی چاہیے۔ اس کے علاوہ ، اسے دہشت گردوں کی تربیت اور منصوبہ بندی اور دہشت گردوں کے فنڈز کواکٹھا کرنے کے لیے استعمال نہیں کیا جانا چاہیے۔

      کابل حملے کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گزشتہ ماہ کابل ایئرپورٹ پر ایک قابل مذمت حملہ کیاگیا تھا۔ دہشت گردی افغانستان کے لیے سنگین خطرہ بنی ہوئی ہے۔ اس لیے یہ ضروری ہے کہ اس حوالے سے کیے گئے وعدوں کا احترام کیا جائے اور ان پر عمل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اس بیان کا بھی نوٹ لیا کہ افغانی بغیر کسی رکاوٹ کے بیرون ملک سفر کر سکیں گے۔ ہمیں امید ہے کہ ان وعدوں پر عمل کیا جائے گا ، بشمول افغانیوں اور افغانستان سے تمام غیر ملکی شہریوں کی محفوظ واپسی کو یقینی بنایاجائے۔


      انہوں نے کہا کہ افغانستان کی صورتحال کے حوالے سے اگست میں سلامتی کونسل کا تین بار اجلاس ہوا۔ خاص طور پر ، اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد (یو این ایس سی آر) 2593 افغانستان کے بارے میں واضح طور پر کئی اہم اور فوری مسائل پر کونسل کی توقعات کا تعین کرتی ہے۔ افغانستان کے پڑوسی کی حیثیت سے ہمیں(ہندوستان) افغانستان سے متعلق کونسل کی صدارت کا شرف حاصل ہوا ہے۔ ہم نے کچھ اجتماعی خدشات کو مدنظر رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سلامتی کونسل دہشت گردی کے لیے افغان سرزمین کے استعمال کی اجازت نہیں دے گی۔


      افغانستان میں صورتحال انتہائی نازک

      ٹی ایس ترو مورتی نے زور دے کر کہا کہ افغانستان کی صورت حال اب بھی انتہائی نازک ہے۔ اس کے موجودہ پڑوسی اور اس کے لوگوں کے دوست کے طور پر اس کی موجودہ حیثیت ہمارے لیے اب بھی تشویش کا باعث ہے۔ افغان عوام کے مستقبل کے ساتھ ساتھ گزشتہ دو دہائیوں میں حاصل کیے گئے فوائد کو برقرار رکھنے اور تعمیر کرنے کے بارے میں غیر یقینی صورتحال برقرار ہے۔ ہم افغان خواتین کی آوازیں سننے کی ضرورت کا اعادہ کرتے ہیں۔ ہم افغان بچوں کی امنگوں کی تکمیل ، اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ اور انسانی امداد فوری طور پر فراہم کرنے پر زور دیتے ہیں اور اقوام متحدہ اور دیگر ایجنسیوں کو اس سلسلے میں بلا روک ٹوک رسائی فراہم کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہیں
      Published by:Mirzaghani Baig
      First published: